نئی قومی تعلیمی پالیسی کے متعلق بی جے پی کا رویہ بے نقاب:کیمپس فرنٹ آف انڈیا

Source: S.O. News Service | Published on 8th October 2021, 4:55 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،8؍اکتوبر(ایس او نیوز) نئی قومی تعلیمی پالیسی کے متعلق ملک بھر میں مخالفت جاری ہے ۔مختلف سماجی تنظیموں کا کہنا ہے یہ پالیسی نہ صرف غیر دستوری، غیر جمہوری بلکہ طلباء کے مستقبل کے لئے خطرناک ہے۔

اس سلسلے میں راشٹریہ مسلم مورچہ کرناٹک کے صدر مفتی عذیر کا کہنا ہے کہ نئی قومی تعلیمی پالیسی لوگوں کو غلام بنانے کا ایک منظم منصوبہ ہے۔

حال ہی میں نئی قومی تعلیمی پالیسی کے خلاف احتجاج کرنے والے طلباء پر پولیس نے لاٹھیاں برسائی تھیں جس کے بعد اس معاملہ کو کرناٹک اسمبلی میں اپوزیشن جماعت کانگریس نے اس نئی پالیسی پر بحث کا مطالبہ کیا۔ جسے حکمراں جماعت بی جے پی نے مسترد کردیا۔ جب کہ وزیر اعلی بومائی اور وزیر برائے ہائیر ایجوکیشن ڈاکٹر اشوتھ نارائن نے کہا تھا کہ وہ اس پر بحث کرنے تیار ہیں۔

اس سلسلے میں کیمپس فرنٹ کے طلباء تنظیم کے رہنما کا کہنا ہے کہ بی جے پی حکومت کے پاس نئی قومی تعلیمی پالیسی کے متعلق بحث کرنے کے لئے کوئی جواب ہی نہیں ہے اور بی جے پی منافقانہ رویہ اختیار کئے ہوئے ہے.

کیمپس فرنٹ کے اسٹوڈنٹ لیڈر آفریدی کہتے ہیں کہ پولیس کی لاٹھیوں سے ڈرے نہیں بلکہ وہ اس نئی قومی تعلیمی پالیسی کے خلاف اپنی جدوجہد جاری رکھینگے.

ایک نظر اس پر بھی

گدگ ضلع کے نرگند میں قتل کئے گئے مسلم نوجوان کے قاتلوں کو فوری گرفتار کیا جائے: سی ایم ابراہیم

کرناٹک کے سابق وزیر ورکن کونسل سی ایم ابراہیم نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ گدگ ضلع کے نرگند میں شرپسندوں کے ہاتھوں ہلاک مسلم نوجوان کے ورثاء کو 10لاکھ روپئے کا معاوضہ ادا کیا جائے۔ شرپسندوں کو فوری گرفتار کرے اور انہیں اس معاملہ کی جانچ پڑتال کرے۔

کرناٹک میں مسلم نوجوان کے بہیمانہ قتل کی اخلاقی ذمہ داری قبو ل کرتے ہوئے وزیر داخلہ کو استعفی دینا چاہئے: ایس ڈی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا   کے ریاستی صدر عبدالمجید میسور نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں  نرگند  میں سنگھ پریوار کے دہشت گردوں کے ہاتھوں ایک مسلم نوجوان سمیر کے قتل کو بزدلانہ کارروائی قرار دیتے ہوئے اس کی سخت مذمت کی ہے اور اس قتل میں ملوث ملزمان کی فوری گرفتاری کا ...