بی جے پی سیاست کے لیے فوجیوں کا استعمال کرتی ہے اور انہیں بھول جاتی ہے: کانگریس کے ترجمان جے ویر شیر گل

Source: S.O. News Service | Published on 15th February 2020, 12:42 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،15/فروری (ایس او نیوز/ایجنسی)  کانگریس کا کہنا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) الیکشن کے وقت فوجیوں کی شجاعت، شہادت اور بہادری کا استعمال کرتی ہے اور پھر انہیں بھول جاتی ہے، لہذا پلوامہ کے شہداء کے لواحقین ایک سال بعد بھی در در کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں۔

کانگریس کے ترجمان جے ویر شیر گل نے جمعہ کو یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں صحافیوں سے کہا کہ بی جے پی فوج اور ان کی بہادری اور قربانی کا سیاسی مفاد کے لیے استعمال کرنا جانتی ہے۔ انتخابات کے وقت اور اس کے بعد فوجیوں کے تئیں اس کا رویہ بدل جاتا ہے۔ انتخابات کے وقت بی جے پی کہتی ہے’ہم ہیں ساتھ ساتھ‘ اور انتخابات ختم ہونے کے بعد کہتی ہے’ہم آپ كے کون؟‘

شیرگل نے کہا کہ کس طرح سے بی جے پی فوجیوں کی شہادت کو بھلا دیتی ہے، اس کی مثال پلوامہ میں شہید ہونے والے فوجی کی بیوہ سنجو دیوی ہیں جو حکومت سے پوچھ رہی ہیں کہ اس نے ایک سال پہلے متاثرہ خاندان کو 25 لاکھ روپے اور نوکری دینے کا وعدہ کیا تھا لیکن اب تک یہ وعدہ پورا نہیں کیا۔

اسی طرح کا دوسری مثال کوشل کمار راوت کی بیوی ہیں، جن کا کہنا ہے کہ شہادت کے بعد جب ان کے شوہر کی چتا جل رہی تھی تو تصویر کشی کے لیے بی جے پی کے کئی اہم رہنما پہنچ گئے تھے اور کئی وعدے کیےتھے لیکن اب ایک سال ہو گیا ہے ، اب تک انہیں نہ تو 25 لاکھ روپے ملے اور نہ ہی نوکری ملی ہے۔

ترجمان نے الزام لگایا ہے کہ بی جے پی شہیدوں کے اہل خانہ کی پکار نہیں سن رہی ہے۔ فوجیوں کے تئیں بی جے پی کا اصول ہے کہ فوجیوں کا استعمال کرو اور اس کے بعد انہیں ان کے حال پر چھوڑ دو۔ ان کا کہنا تھا کہ قومی سلامتی کے نام پر بی جے پی صرف استعمال کرنا جانتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پلوامہ حملے کے سلسلے میں بی جے پی حکومت سے سوال پوچھے جا رہے ہیں لیکن وہ خاموش ہے۔ بی جے پی کو بتانا چاہئے کہ اس معاملے میں ہوئی انٹیلی جنس چوک، معلومات کو وزارت داخلہ کی طرف سے نظر انداز کرنے اور آئی ای ڈی کا ہندوستان کی سرزمین پر پہنچنے کا ذمہ دار کون ہے اور پولیس افسر دیویندرسنگھ کی اس میں کیا کردار رہا ہے۔ حکومت کو یہ بھی بتانا چاہئے اس واقعے کی تحقیقات ہو رہی ہے یا نہیں؟ اور اگر ہو رہی ہے تو اس کی رپورٹ کب تک آئے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی تشددپربولے اسد الدین اویسی ، امن بحال کرنے میں پولیس ناکام ، فوج کو تعینات کریں وزیر اعظم

حیدرآباد سے رکن پارلیمنٹ اور آل انڈیا مجلس اتحادالمسلمین ( اے آئی ایم آئی ایم ) کے سربراہ اسد الدین اویسی نے الزام لگایا ہے کہ ملک کی راجدھانی دہلی میں تشدد کے بعد بگڑے حالات کو قابو کرنے میں دہلی پولیس ناکام رہی ہے۔

عصمت دری کے مجرم کلدیپ سنگھ سینگر کی اسمبلی رکنیت منسوخ

اترپردیش کے زیر بحث اناؤ عصمت دری معاملہ میں سزا یافتہ بی جے پی کے رکن اسمبلی کلدیپ سینگر کی اسمبلی رکنیت کو ختم کر دیا گیا ہے۔ کلدیپ سنگھ سینگر ضلع اناؤ کے بانگر مئو اسمبلی سیٹ سے رکن اسمبلی تھا اور اسے عصمت دری کے معاملے میں عمر قید کی سزا سنائی جا چکی ہے۔ اس سلسلے میں پرنسپل ...

دہلی میں پرتشدد مظاہرے 5 میٹرو اسٹیشن بند

شہریت ترمیمی قانون(سی اےاے)کے خلاف اور حمایت میں سڑک پر نکلے لوگوں کے درمیان تصادم کی وجہ سے دہلی میں حالات کشیدہ ہوتے جا رہے ہیں۔ خصوصی طور پر شمال مشرقی دہلی میں تشدد کے کئی واقعات سامنے آ چکے ہیں۔

شمال مشرقی دہلی میں ہوئے تشدد پر سپریم کورٹ میں عرضی داخل

شہریت ترمیمی قانون کو لے کر دہلی کے کئی علاقوں میں ہوئے تشدد کا معاملہ سپریم کورٹ پہنچ گیا ہے۔ عدالت عظمیٰ نے شمال مشرقی دہلی میں ہوئے تشدد پر فوری سماعت کی عرضی کو قبول کر لیا ہے اور اس کے لیے بدھ کا دن مقرر کیا ہے۔

نربھیا کے قصورواروں کو الگ الگ پھانسی دینے والی عرضی پر سماعت 5 مارچ تک ملتوی

سپریم کورٹ نے ملک کو دہلا دینے والے نربھیا اجتماعی آبرو ریزی اور قتل معالے کے قصورواروں کو الگ الگ پھانسی دینے سے متعلق مرکز اور دہلی حکومت کی خصوصی اجازت عرضی پر سماعت پانچ مارچ تک کےلئے منگل کو ٹال دی۔