بی جے پی آئین کا غلط استعمال کر رہی ہے، کرناٹک ضمنی انتخابات میں عوام سکھائے گی سبق: ملکا ارجن کھرگے

Source: S.O. News Service | Published on 1st December 2019, 11:46 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو،یکم دسمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) کانگریس کے سینئر لیڈر ملکا ارجن کھرگے نے بھارتیہ جنتا پارٹی پر آئین کا غلط استعمال کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ آئندہ ضمنی انتخابات میں کرناٹک کی عوام انہیں سبق سکھا دے گی۔کرناٹک کی 15 اسمبلی سیٹوں پر 5 دسمبر کو ضمنی انتخاب ہونے والا ہے۔بنگلور میں اتوار کو کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی (کے پی سی سی) کی آفس میں کھڑگے نے کہاکہ بی جے پی آئین کا غلط استعمال کر رہی ہے،عوام سب کچھ دیکھ رہی ہے کہ کس طرح سے مرکز اور ریاست میں اقتدار کا غلط استعمال کیا جا رہا ہے، بی جے پی کو سبق سکھانا ضروری ہے اور اس کے لئے ہمیں تمام 15 سیٹوں کو جیتنا ہوگا۔انہوں نے کہاکہ بی جے پی ووٹرس میں پیسے بٹوا رہی ہے، جو جمہوریت کے لئے خطرناک ہے،فی الحال بی جے پی ووٹرس پر دباؤ بھی بنا رہی ہے،اگر وہ ان طریقوں سے کامیاب نہیں ہوئے تو پھر الیکشن لڑنے کے لئے مذہبی مسائل اٹھائیں گے۔ انہوں نے جے ڈی ایس کے ساتھ اتحاد کے بارے میں پوچھے جانے پر کہا کہ کانگریس اس کے خلاف نہیں ہے۔ضمنی انتخابات کے نتائج کے بعد اس بارے میں فیصلہ کیا جائے گا۔کھڑگے نے کہاکہ بی جے پی کی مقامی قیادت نے وعدہ کیا تھا کہ اگر وہ اقتدار میں آئے تو مرکز سے فنڈ لائیں گے لیکن وہ اتنے خوفناک سیلاب کے باوجود کچھ نہیں لے کر آئے۔پی ایم مودی نے نہ تو کرناٹک کے بارے میں کچھ بولا اور نہ ہی یہاں پر آئے،میرے خیال سے پی ایم کرناٹک سے نفرت کرتے ہیں۔انہوں نے کرناٹک کی کبھی مدد بھی نہیں کی،اب اس کی وجہ یدی یورپا ہیں یا کچھ اور، اس کا ہمیں پتہ نہیں۔کرناٹک میں ہو پانچ دسمبر کو ہو رہے ضمنی انتخاب کے نتائج نو دسمبر کو آئیں گے، جن 15 علاقوں میں اسمبلی ضمنی انتخابات ہونے والے ہیں، ان میں 12 پر کانگریس اور تین پر جے ڈی ایس قابض تھے، نااہل ٹھہرائے گئے ممبران اسمبلی کی بغاوت کی وجہ سے کمارسوامی کی قیادت میں دونوں جماعتوں کی مخلوط حکومت گر گئی تھی۔کمارسوامی کی حکومت کے گرنے کے بعد اقتدار میں آئی بی جے پی کو اپنی اکثریت برقرار رکھنے کے لئے ضمنی انتخابات میں 15 میں سے کم از کم 6 سیٹیں جیتنے کی ضرورت ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

  مسلم متحدہ محاذ، جماعت اسلامی ہند اور کئی تنظیموں کے ایک نمائندہ وفدکا سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا سے ملاقات اور شہریت ترمیمی بل   کی مخالفت اور دستور کے تحفظ میں تعاون کرنے کی اپیل

مسلم متحدہ محاذ، جما عت اسلامی ہند، سدبھاؤ نا منچ بورڈ آف اسلامک ایجوکیشن کرناٹک، ایف ڈی سی اے، ایس آئی او، اے پی سی آر  اور مومنٹ فار جسٹس جیسے ہم خیال تنظیموں کی قیادت میں مسلم نمائندوں کا ایک وفد 7 / دسمبر 2019  ء  بروز سنیچر، سابق وزیر اعظم شری ایچ ڈی دیوے گوڈا سے ملاقات کرتے ...

ہوناورمیں پریش میستا کی مشتبہ موت کوگزرگئے2سال۔ سی بی آئی کی تحقیقات کے باوجود نہیں کھل رہا ہے راز۔ اشتعال انگیزی کرنے والے ہیگڈے اور کرندلاجے کے منھ پر کیوں پڑا ہے تالا؟

اب سے دو سال قبل 6دسمبر کو ہوناور میں دو فریقوں کے درمیان معمولی بات پر شرو ع ہونے والا جھگڑا باقاعدہ فرقہ وارانہ فساد کا روپ اختیار کرگیا تھا جس کے بعد پریش میستا نامی ایک نوجوان کی لاش شنی مندر کے قریب واقع تالاب سے برآمد ہوئی تھی۔     اس مشکوک موت کو فرقہ وارانہ رنگ دے کر پورے ...

کاروار:ہائی وے توسیع کے لئے سرکاری زمین تحویل میں لینے پرمعاوضہ کی ادا ئیگی۔ ملک میں قانون وضع کرنے کے لئے ضلع شمالی کینرا بنا ماڈل

نیشنل ہائی وے66 توسیعی منصوبے کے لئے سرکاری زمینات کو تحویل میں لینے کے بعد خیر سگالی کے طورمعاوضہ ادا کرنے کی پہل ضلع شمالی کینرا میں ہوئی جس کی بنیاد پر نیشنل ہائی وے ایکٹ 1956میں ترمیم کرتے ہوئے ملک بھر میں تحویل اراضی پرمعاوضہ ادائیگی کا نیا قانون2017میں وضع کیا گیا ہے۔

بابری مسجد معاملے پر سپریم کورٹ کے فیصلہ سے ناخوش پاپولر فرنٹ کی طرف سے بھی نظر ثانی کی عرضی داخل

بابری مسجد حق ملکیت معاملے میں سپریم کورٹ کی آئینی بنچ کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے، پاپولر فرنٹ آف انڈیا نارتھ زون کے سکریٹری انیس انصاری نے بھی 9/ڈسمبر بروز پیر کو سپریم کورٹ میں نظر ثانی کی عرضی داخل کی ہے۔ پی ایف آئی کی جانب سے جاری کردی پریس ریلیز میں بتایا گیا ہے کہ رویو ...