مرکزی اور ریاستی بی جے پی حکومتیں کورونا وائرس سے نپٹنے میں ناکام ؛ رام مندر سپریم کورٹ کے فیصلہ سے بن رہا ہے ، مودی اپنے سر سہرانہ بنادھیں : کانگریس

Source: S.O. News Service | Published on 31st May 2020, 12:35 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو،31؍ مئی (ایس او نیوز) کرناٹک میں کانگریس نے کہا ہے کہ اس ملک کو ترقی کی راہ پر لانے کے لئے پچھلے 50 سال کے دوران جو محنت ہوئی تھی مودی نے اپنے 6 سالہ دور اقتدار میں اس ساری محنت پر پانی پھیر دیا ہے اور ملک کو انہوں نے اسی مقام پر پہنچا دیا ہے جب ملک کی حیثیت صفر تھی ۔کے پی سی سی صدر ڈی کے شیو کمار اور ریاستی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر سدارامیا نے کے پی سی سی دفتر میں ایک مشترکہ اخباری کانفرنس کے دوران یہ بات کہی۔

ان دونوں نے کہا کہ کورونا وائرس اور اس سے جو معاشی بحران ملک میں پیدا ہوا ہے اس سے نپٹنے میں مرکزی اور ریاستی دونوں حکومتیں بری طرح ناکام رہی ہیں۔ عوام کے نام وزیر اعلیٰ مودی کے پیغام میں مودی کی طرف سے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے متعلق فیصلے کو اپنی حکومت کی کامیابی قرار دیئے جانے پر اعتراض کرتے ہوئے کہاکہ یہ مندر سپر یم کورٹ کے فیصلے کے سبب بن رہا ہے، اس میں مودی حکومت کا کوئی رول نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو ان جذباتی مسائل پر بولنے کے بجائے یہ بتانا چاہئے کہ ملک میں گزشتہ 6 سال کے دوران بے روز گاری میں اضافہ کیوں ہوا ہے۔ ملک معاشی بحران کا شکار کس لئے ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کی بدنظمی کی وجہ سے ملک کا جی ڈی پی گزشتہ 11 سال کے مقابلے سب سے کم سطح پر آچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بنگلہ دیش اور سری لنکا جیسے ممالک کا جی ڈی پی ہندوستانی سے کافی بہتر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے عوام کے نام تحریری پیغام دینے کی بجائے مودی کو اتنی جرأت جٹانی چاہئے کہ وہ غیر جانبدار میڈیا کے ساتھ بات کرسکیں۔

انہوں نے کہا کہ صرف جذباتی موضوعات اچھال کر عوام میں نفرت کو ہوا دینے کی کوشش کرنے والوں کی قیادت زیادہ دنوں تک نہیں چلے گی۔ ملک کی معاشی حالت تباہی کے دہانے پر ہے۔ نوجوان اپنے مستقبل کو بچانے کی فکر میں سڑکوں پر آچکے ہیں۔کاشت کار طبقہ مرکزی حکومت سے ناخوش ہے ۔ سرمایہ کاروں کو خوش کرنے کے لئے کسانوں کے لئے نقصاندہ اے پی ایم سی ترمیم قانون لایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اس طرح کا قانون بنانے کا اختیار نہیں ، اس کے باوجود ان ریاستی حکومتوں کو مجبورکیا گیا ہے جو بی جے پی سے وابستہ ہیں۔

اس موقع پر کے پی سی سی صدر ڈی کے شیوکمار نے کہا کہ ملک کی آزاد ی سے لے کر اب تک اس قدر عوام دشمن حکومت کا مشاہدہ نہیں کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کے تعاون سے مودی ملک کے وزیر اعظم بنے اور اب انہی نوجوانوں کو روزگار کے مواقع مہیا کروانے کی بجائے ان کو سڑکوں پر چھوڑ دیا ۔ بین الاقوامی بازاروں میں تیل کی قیمت گھٹ رہی ہے لیکن ہندوستنا میں پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت مسلسل بڑھ رہی ہے۔ دیگر ممالک میں کورونا وائرس سے عوام کو راحت پہنچانے کے لئے ٹیکس میں چھوٹ دی جارہی ہے لیکن ہندوستان میں عوام کو کس طرح لوٹا جائے اس کی منصوبہ بندی ہورہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ قومی سطح پر جی ڈی پی گھٹ کر محض 0.1 فیصد رہ گیا ہے۔ کورونا وائرس سے نپٹنے یا اسے روکنے کے معاملہ میں مرکزی اور ریاستی حکومت پوری طرح ناکام ہوچکی ہے۔ کورونا وائرس لاک ڈاؤن کے سبب سب سے زیادہ شعبہ تعلیم متاثر ہوا، لیکن اس شعبہ سے وابستہ طلبائ کے مستقبل کی حفاظت کس طرح ہو اس کے بارے میں حکومت کے پاس کوئی حکمت عملی موجود نہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک کے بلاری ضلع میں کورونا سے مرنے والوں کی غیر مہذب تدفین کا واقعہ انسانیت سوز: ایس ڈی پی آئی

 سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی)کرناٹک شاخہ نے بلاری ضلع میں کورونا سے مرنے والوں کی انتہائی غیر مہذب تدفین کے واقعہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے انسانیت سوز قرار دیا ہے۔

کشمیر کے خونیں تشدد میں ہر چیز پروپیگنڈے کا آلہ بن جاتی ہے: عمر عبد اللہ

نیشنل کانفرنس کے نائب صدر و سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے سوپور میں فائرنگ کے واقعے میں جاں بحق ہونے والے شہری کی لاش پر بیٹھے اس کے نواسے کی تصاویر کی تشہیر کے ردعمل میں کہا ہے کہ کشمیر کے خونین تشدد میں ہر چیز کو پروپیگنڈے کا ہتھیار بنایا جاتا ہے۔

ابھیشیک منو سنگھوی نے ٹک۔ ٹاک کا کیس لڑنے سے انکار کردیا

ملک کے سینئر وکیل میں شمار ہونے والے سابق اٹارنی جنرل مکل روہتگی کے چینی ایپ ٹک۔ٹاک کا مقدمہ لڑنے سے بدھ کو انکار کرنے کے چند گھنٹوں بعد ہی کانگریس کے لیڈر اورسینئر وکیل ابھیشیک منو سنگھوی بھی اسی راہ پر چلتے ہوئے مقدمہ لڑنے سے انکار کردیا۔

کانگریس کی باغی ایم ایل اے ادیتی سنگھ کی رکنیت سے متعلق اسمبلی اسپیکر نے اپنا فیصلہ محفوظ رکھا

اتر پردیش کی قانون ساز اسمبلی کے اسپیکر دل نارائن دکشٹ نے رائے بریلی صدر سے کانگریس کی باغی ایم ایل اے ادیتی سنگھ کی اسمبلی کی رکنیت منسوخ کرنے کی درخواست پر اپنا فیصلہ محفوظ رکھاہے۔