بی جے پی اپنے ناکام وزرائے اعلیٰ کو بدلنے میں مصروف: پی چدمبرم

Source: S.O. News Service | Published on 13th September 2021, 11:32 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،13؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نے پانچ سال سے گجرات کے وزیر اعلیٰ کے طور پر خدمات انجام دینے والے وجے روپانی کو اچانک ہٹانے پر بھارتیہ جنتا پارٹی پر طنز کیا ہے۔ بی جے پی صرف اپنے ناکام وزرائے اعلی کو تبدیل کرنے میں مصروف ہے اور بی جے پی کی حکومت والی ریاستوں میں ایسے وزرائے اعلیٰ کی فہرست طویل ہے۔

چدمبرم نے گجرات کے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے وجے روپانی کو ہٹانے اور ان کی جگہ پر پہلی بار ایم ایل اے بنے بھوپندر پٹیل کو وزیراعلی بنائے جانے پر ٹوئٹ کیا ’’بی جے پی اپنے ناکام وزرائے اعلیٰ کو ہٹانے میں مصروف ہے۔ بی جے پی کو کب احساس ہوا کہ وزیر اعلیٰ ٹھیک سے کام نہیں کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کام اچھا نہ کرنے کے سبب بی جے پی کئی ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کو تبدیل کر چکی ہے اور کئی دوسری ریاستیں ہیں جہاں ناکام وزیر اعلیٰ ہیں اور انہیں تبدیل کرنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا ’’متعلقہ ریاست کے لوگ جانتے تھے کہ بی ایس یدی یورپا، دو راوت اور روپانی کئی مہینوں سے خراب کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے تھے۔ متعدد دیگر ریاستوں میں وزیر اعلیٰ ہیں جنہیں تبدیل کیا جانا چاہیے۔ فہرست طویل ہے جس میں ہریانہ، گوا، تریپورہ وغیرہ شامل ہیں۔

اتوار کو گجرات میں وجے روپانی نے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا اور ان کی جگہ بھوپیندر پٹیل کو وزیر اعلیٰ بنایا گیا۔ مارچ میں چار سال سے زیادہ عرصے تک اتراکھنڈ کے وزیر اعلیٰ رہے ترویندر سنگھ راوت کو ہٹاکر تیرتھ راوت کو وزیر اعلیٰ بنایا گیا، لیکن صرف تین ماہ کے اندر، ان کی جگہ پشکر سنگھ دھامی نے لے لی۔

کانگریس نے وزیراعلی کی تبدیلی پر اپنے آفیشل ٹوئٹر ہینڈل پر یہ بھی کہا ’’وزیر اعظم مودی اور بی جے پی کے خلاف جو بڑے پیمانے پر عوامی غصہ ہے، اسے وزرائے اعلیٰ کے چہرے بدلنے سے پرسکون نہیں کیا جا سکتا۔ ہر کوئی گرتی ہوئی جی ڈی پی، بے روزگاری، مہنگائی، صحت کے بنیادی ڈھانچے کی خراب حالت سے آگاہ ہے۔ اپنی ناکامی چھپانے کی بی جے پی کی یہ ترکیب کامیاب نہیں ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

سول سروسز امتحان میں 27 مسلم امیدوار کامیاب، صدف چودھری کو ملک بھر میں 23 واں مقام حاصل

  ملک کے سب سے اہم قرار دیئے جانے والے یو پی ایس سی کے سول سروسز امتحان کے نتائج جاری کر دیئے گئے ہیں۔ اس مرتبہ مسلم طبقہ سے تعلق رکھنے والے کل 27 امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے، جن میں سے 7 خواتین شامل ہیں۔

سول سروسز امتحان 2020 کے حتمی نتائج کا اعلان، بہار کے شبھم کمار کو اول مقام حاصل

  یونین پبلک سروس کمیشن (یو پی ایس سی) کی جانب سے جنوری 2021 میں منعقدہ سول سروسز امتحان 2020 کے تحریری حصے اور اگست-ستمبر 2021 میں منعقد پرسنالٹی ٹیسٹ (شخصیت) کے لیے انٹرویو کے نتائج کی بنیاد پر انڈین سول سروسز، انڈین فارن سروسز، انڈین پولیس سروسز اور سینٹرل سروسز میں تقرری کے لیے ...

راکیش ٹکیت کاامریکی صدرجوبائیڈن کو ٹیوٹ 11مہینے میں 700کسانوں کی موت، مانگی مدد

وزیر اعظم نریندر مودی اپنے امریکی دورے پر ہیں، جہاں انہوں نے امریکی نائب صدر کملا ہیرس سے ملاقات کی- اب پی ایم مودی صدر جو بائیڈن کے ساتھ اپنی پہلی ملاقات کرنے والے ہیں، جس میں کئی امور پر بات چیت ہونی ہے- لیکن اس دوران کسان رہنما اور بی کے یو کے ترجمان راکیش ٹکیت نے امریکی صدر جو ...

پسماند ہ طبقہ سے اتنی نفرت کیوں؟ ذات پرمبنی مردم شماری سے مرکزکے انکارپرلالویادوکاحملہ

بہارمیں ذات کی مردم شماری کے معاملے پر سیاست جاری ہے۔ آر جے ڈی کے سربراہ لالو پرساد یادو نے مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا ہے کہ اس نے سپریم کورٹ میں حلف نامہ داخل کر کے 2021 میں ذات پرمبنی مردم شماری سے انکار کیا۔