بھٹکل تنظیم اور بھٹکل میونسپل صدر نے لیا کووِڈ ٹیکہ؛ بھٹکل میں کورونا ٹیکہ لگانے کے معاملے میں مسلمان پیچھے، آگے بڑھ کر ٹیکہ لینے کی ضرورت

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th April 2021, 2:10 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 20اپریل (ایس او نیوز)آج منگل کو  بھٹکل کے قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح وتنظیم کےصدر جناب ایس ایم پرویز اور بھٹکل میونسپالٹی کے صدر جناب قاسمجی پرویز نے  سرکاری اسپتال پہنچ کر کووڈ ٹیکہ لگوایا  اور مسلمانوں پر زور دیا کہ کوویڈ سےمحفوظ رہنے کے لئے  تمام لوگوں کو کووڈ ٹیکہ لگوانا ضروری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ    ملک میں ایک طرف کورونا  کے معاملات میں اچانک اضافہ ہورہا ہے وہیں   ممبئی سمیت بڑے بڑے شہروں میں کورونا  ٹیکہ کی  سخت قلت پائی جارہی ہے۔ شہروں میں  لوگ  کورونا سے محفوظ رہنے کےلئے ٹیکہ لگانے اسپتالوں کا رُخ کررہے ہیں لیکن اسپتالوں میں ٹیکہ نہیں مل رہا ہے،  وہیں دوسری طرف بھٹکل کا حال بالکل مختلف ہے، یہاں سرکاری اسپتال  میں ٹیکہ کاری مہم جاری ہے دور دراز کے  دیہاتوں سے لوگ کثیر تعداد میں اسپتال پہنچ کر ٹیکہ لگوارہے ہیں، لیکن   ٹیکہ لگوانے والوں میں   مسلمان  کافی پیچھے نظر  آرہے ہیں۔

ایس ایم پرویز نے بتایا کہ  سوشیل میڈیا پر کورونا ٹیکہ کو لے کر بے بنیاد اور جھوٹی باتیں پھیلائی جارہی ہیں،  ایس ایم پرویز نے بتایا کہ میں نے اپنے ڈاکٹر سے پہلے صلاح و مشورہ کیا اور ڈاکٹر کی ہدایت پر میں نے آج کورونا کا ٹیکہ لیا ہے،  انہوں نے بتایا کہ  بھٹکل کے تمام لوگوں بالخصوص تمام مسلمانوں کو یہ ٹیکہ لگوانا چاہئے تاکہ بھٹکل کووڈ فری شہر بن سکے۔انہوں نے بتایا کہ بھٹکل میں کوویڈ ویکسین لینے سے کسی کو بھی کوئی منفی اثرات پیدا ہونے کی کوئی رپورٹ نہیں ہے۔مسلمانوں کے دلوں میں کوویڈ ٹیکہ کو لے کر  جو خدشات پائے جارہے ہیں، ہمیں اُن سے باہر نکلنا چاہئے، انہوں نے عوام الناس سے اپیل کی کہ وہ سرکاری اسپتال کی اس سہولت کافائدہ اُٹھائیں۔

جناب قاسمجی پرویز نے بتایا کہ  دنیا میں پھیلی کوویڈ وبا سے محفوظ رہنے کے لئے دنیابھر میں لوگ کووِڈ ویکسین کا ڈوز  لے رہے ہیں، سائنسدانوں نے پوری محنت اور جانفشانی سے کام کرتے ہوئے ویکسین تیار کیا ہے، ایسے میں ہمیں سوشیل میڈیا پر پھیلی باتوں کو نظر انداز کرنا چاہئے اور اپنی صحت کا خیال رکھتے ہوئے کورونا کا ٹیکہ لگوالینا چاہئے۔ انہوں نے عوام الناس سے اپیل کی کہ وہ جلد ازجلد  خود بھی کورونا ٹیکہ لیں ، اپنے گھروالوں کو بھی ٹیکہ لگوائیں۔

بھٹکل تعلقہ سرکاری اسپتال کی ہیلتھ آفسر ڈاکٹر سویتا کامتھ نے بتایا کہ بھٹکل میں ہر روز قریب سو لوگوں کو کووِڈ کا ٹیکہ دیا جارہا ہے ۔ لوگ دور دراز علاقوں سے آکر ٹیکہ لگوارہے ہیں، البتہ  بھٹکل ٹاون کے لوگ بے حد کم آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اب تک 7200 سے زائد لوگوں کو بھٹکل میں ٹیکہ لگوایا جاچکا ہے، ابھی تک کسی طرح کی کوئی شکایت موصول نہیں ہوئی ہے۔ڈاکٹر سویتا کامتھ نے عوام الناس سے درخواست کی کہ یہاں یہ ٹیکہ بالکل مفت لگوایا جارہا ہے، اس سے بھرپور فائدہ اُٹھائیں  اور ٹیکہ لگوانے کے لئے اپنے گھروالوں کو بھی ساتھ لے کر آئیں۔ انہوں نے بتایا کہ فی الحال 45 سال یا اس سے زائد عمر والوں کو یہ ٹیکہ لگوائے جانے کی مہم جاری ہے، یکم مئی سے 18 سال یا اس سے زائد عمر والوں کو بھی ٹیکہ لگوانے کی مہم شروع ہوجائے گی۔

چونکہ  45 سال یا اس سے زائد عمر والوں کو ٹیکہ لگوایا جارہا ہے، اس لئے اسپتال میں ٹیکہ لگوانے والوں کی  قطار زیادہ لمبی نہیں ہے، لیکن یکم مئی سے 18 سال  کی عمر والوں کو بھی ٹیکہ لگوانے کی مہم شروع ہو جائے گی تو اُس وقت اسپتال میں پاوں رکھنے کی جگہ ملنا مشکل نظر  آرہا ہے، ان باتوں کا خیال رکھتے ہوئے 45 سال سے زائد عمر والے   عوام الناس کو چاہئے کہ وہ یکم مئی سے پہلے پہلے ٹیکہ لگوائیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں کورونا معاملات میں ہورہا ہے اضافہ؛ آج بھی 64 کی رپورٹ آئی پوزیٹیو؛ بھٹکل میں سات علاقوں کوقرار دیا گیا کنٹیمنٹ زون

جس طرح ریاست کرناٹک میں اب ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے معاملات میں روز بروز اضافہ دیکھا جارہا ہے اور ضلع اُترکنڑا پوری ریاست میں کورونا پوزیٹیو معاملات میں  تیسرے نمبر پر پہنچ گیا ہے، اُسی طرح بھٹکل میں بھی کورونا کے معاملات میں  تشویش کی حد تک اضافہ دیکھا جارہاہے۔

بھٹکل: شمالی کینرا میں کووڈ وباء کا بدلتا منظر نامہ : سب سے آخری پوزیشن والا ضلع پہنچ گیا سب سے آگے ؛ کون ہے ذمہ دار ؟

کورونا کی دوسری لہر جب ساری ریاست کو اپنی لپیٹ میں لے رہی تھی تو ضلع شمالی کینرا پوزیٹیو معاملات میں گزشتہ لہر کے دوران سب سے آخری پوزیشن پر تھا۔ لیکن پچھلے دو تین دنوں سے بڑھتے ہوئے پوزیٹیو اورایکٹیو معاملات کی وجہ سے اب یہ ضلع ریاست میں سب سے  اوپری درجہ میں پہنچ گیا ہے۔ بس ...

کورونا کرفیو کی وجہ سے لاری ڈرائیوروں کو سفرکے دوران کھانے پینے اور لاری کی مرمت کا مسئلہ درپیش:ڈرائیور، کلینر اور گیاریج والوں کی زندگی پنکچر

کورونا وائرس پر لگام لگانے کے لئے حکومتوں کی طرف سے  نافذ کئے گئے سخت کرفیو کی وجہ سے ہوٹل ، ڈھابے ،گیاریج ، پنکچر کی دکانیں وغیرہ بند ہیں ، جس کے نتیجے میں  ضروری اشیاء سپلائی کرنےوالی لاریوں کے ڈرائیوروں کو سفر کے دوران میں کئی مشکلات درپیش ہیں۔

کرناٹکا میں کورونا کے بڑھتے معاملات کے چلتے سرکاری اسپتالوں میں ڈیالسس کی خدمات بند : حکومت کی خاموشی پر فاؤنڈیشن کا اقدام

پیشگی احتیاطی تدابیر اورمنظم و منضبط نظام کے بغیر  کورونا وائرس پر  کنٹرول کرنے میں ناکامی  اور کووڈ ٹیکہ  کی سپلائی بند ہوجانے سے ایک طرف عوام پہلے سے پریشان ہیں، ایسے میں    حکومت کی ایک  اورنظرا ندازی  نے ریاست کرناٹک کے ہزاروں ڈیالسس کے مریضوں کو مشکلات میں ڈال دیا ہے۔

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کا اثر؛ طوفانی ہواوں کے ساتھ جاری ہے بارش؛ کئی مکانوں کی چھتیں اُڑ گئیں، بھٹکل میں ایک کی موت

'ٹاوکٹے' طوفان جس کے تعلق سے محکمہ موسمیات نے پیشگی  اطلاع دی تھی کہ    یہ طوفان  سنیچر کو کرناٹکا اور مہاراشٹرا کے ساحلوں سے ٹکرارہا ہے،   اس اعلان کے عین مطابق  آج سنیچر صبح سے  بھٹکل سمیت اُترکنڑا اور پڑوسی اضلاع اُڈپی اور دکشن کنڑا میں طوفانی ہواوں کےساتھ بارش جاری ہے جس ...

ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کی دستک ۔ محکمہ موسمیات نے جاری کیا 16 مئی تک ریڈ الرٹ

ساحلی کرناٹکا کی طرف  بڑھتے  'ٹاوکٹے' طوفان کے پیش نظرمحکمہ موسمیات نے 16مئی تک ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے مچھیروں اور عوام الناس کو دریا، سمندراورنشیبی و ساحلی علاقوں سے دور رہنے کی ہدایت دی ہے۔

ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کی دستک ۔ محکمہ موسمیات نے جاری کیا 16 مئی تک ریڈ الرٹ

ساحلی کرناٹکا کی طرف  بڑھتے  'ٹاوکٹے' طوفان کے پیش نظرمحکمہ موسمیات نے 16مئی تک ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے مچھیروں اور عوام الناس کو دریا، سمندراورنشیبی و ساحلی علاقوں سے دور رہنے کی ہدایت دی ہے۔

بھٹکل میں بڑھ رہے ہیں کورونا پوزیٹیو معاملات؛ آج ایک ہی دن 81 کی رپورٹ آئی پوزیٹو

بھٹکل سمیت ضلع اُترکنڑا میں  کورونا پوزیٹیو کے معاملات میں دن بدن اضافہ دیکھا جارہا ہے، جس سے ذمہ داران میں تشویش پائی جارہی ہے۔ آج بدھ کو ایک ہی دن بھٹکل میں کورونا پوزیٹیو کے 81 معاملات سامنے آئے ہیں  جس کے ساتھ ہی  کورونا کی دوسری لہر میں بھٹکل میں پوزیٹیو معاملات کی تعداد ...

کورونا کا خاتمہ جولائی تک نہیں ہوگا: ایکسپرٹ

جس طرح کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی درج ہو رہی ہے اس سے یہ امید بنی ہے کہ ہندوستان میں کورونا کی دوسری لہر کا خاتمہ جلد ہو جائے گا لیکن وبائی بیماریوں کے ماہر شاہد جمیل کا کہنا ہے کہ بھلے ہی ابھی کچھ ریاستوں میں کورونا کے کیس کم ہوتے نظر آ رہے ہوں لیکن دوسری لہر کا ...