بھٹکل اوراطراف کے  طلبہ وطالبات کے لئے15ڈسمبر کو ہوگا سائنسی وتحقیقی مقابلہ جات کاانعقاد : تعلیمی ادارے توجہ دیں

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 18th July 2019, 6:27 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل :18؍جولائی  (ایس اؤ نیوز) شہر بھٹکل کا معروف تعلیمی و فلاحی ادارہ تربیت اخوان(شمس اسکول)کے زیر اہتمام  اے جے اکیڈمی فار ریسرچ اینڈ ڈیلوپمنٹ کے اشتراک سے15ڈسمبر 2019 بروز اتوار کو سانتسی و تحقیقی مقابلہ جات کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں  بھٹکل‘ مرڈیشور‘ شیرور اور منکی کے سرکاری و  غیر سرکاری‘امدادی (ایڈیڈ) اور غیر امدادی (ان ایڈڈ )اسکو لوں کے طلبا و طالبات حصہ لیں گے۔

پروگرام کے کو۔آرڈی ینٹر محمد رضا مانوی نے بتایا کہ اس ضمن میں اکیڈمی کے ڈائرکڑ محمد عبد اللہ جاوید ، ادارہ کے صدرمحمد اسماعیل محتشم اور نائب صدر نذیر قاضی صاحب کی زیر نگرانی اساتذہ اور انتظامیہ کی مشترکہ نشست میں سائنسی تحقیق کی اہمیت وضرورت‘اساتذہ اور انتظامیہ کا رول جیسے امور پر سیر حاصل گفتگو ہوئی اورسائنس فیر کے اہتمام کا فیصلہ لیا گیا۔

مسٹر مانوی نے بتایا کہ اس مقابلہ میں چہارم تادہم کے طلبہ وطالبات مختلف سائنسی زمروں جیسے حیاتیاتی سائنس‘ طبعیاتی سائنس‘ ماحولیاتی سائنس اور سماجی سائنس میں اپنی تحقیق پیش کرسکتے ہیں۔فیر میں داخلہ مفت رہے گا۔ہر زمرے میں بہترین تحقیق پیش کرنے والے طلبہ کوسائنسدان کے اعزاز سے نوازا جائیگا جبکہ تمام شریک ہونے والے طلبہ‘ مددگار اساتذہ اور حصہ لینے والے اسکولوں کو سرٹیفکیٹس دیئے جائیں گے۔اس مقابلہ میں شریک ہونے والے طلبہ کے بہترین تحقیقی پراجیکٹس کو قومی سطح پر منعقد ہونے والے سائنس فیر (National Science Fair)میں پیش کرنے کا موقع فراہم کیا جائے گا۔مزید تفصیلات کیلئے کوآرڈینٹرمحمد رضا مانوی سے9886455416 پر رابطہ کیا جاسکتا ہے۔

 محمد عبداللہ جاوید نے بتایا کہ تمام ترقی یافتہ ممالک کے نظام تعلیم میں تحقیق و جستجو پرائمری درجات ہی سے نصاب تعلیم میں شامل کی جاتی ہے یہی وجہ ہے کہ وہ سائنسی ترقی میں نہ صرف آگے ہیں بلکہ عوامی سطح پر اس کا مظاہرہ کیا جاسکتا ہے۔سائنس فیر کے ذریعہ درحقیقت اسی اہم امر کی جانب تعلیم وتعلم سے متعلق لوگوں کی توجہ مرکوز کرنا اور عام بیداری پیدا کرنا ہے۔تاکہ مستقبل قریب میں ہمارے نصاب تعلیم میں بھی تحقیق کو شامل کرنا ممکن ہوسکے۔اور طلبہ سائنسی ترقی کیلئے کارہائے نمایاں انجام دینے کے قابل بن سکیں۔ منتظم ادارے نے یہ بھی طے کیا ہے کہ ان کی تمام خدمات غیرجانبدارانہ اور غیر تجارتی ہوں گی کیونکہ یہی وہ مروجہ غلط روایات ہیں جو موجودہ نظام تعلیم میں بدقسمتی سے در آئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں کورونا سے لڑنے تنظیم کےذمہ داران بھی نہایت متحرک؛ پوری ٹیم میدان میں کام کررہی ہے؛ چوطرفہ ہورہی ہے ستائش

اس وقت نہ صرف شہر بھٹکل بلکہ پوری دنیا کورونا وائرس کی وباء سے  حیران وپریشان ہے ایک طرح سے اس وباء سے  پوری دنیا کا نظام درہم برہم ہوگیا ہے جبکہ لاک ڈاؤن کے اعلان کے بعد جس طرح سے ملک بھر میں غریب عوام اور یومیہ مزدور طبقہ کو دقتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس سے ہرکوئی واقف ہیں ...

بھٹکل میں شدت کی گرمی کے بعدوقت سے پہلے ہی برسی بارش؛ساحلی علاقوں میں بجلیوں اور بادلوں کی گڑگڑاہٹ کے ساتھ لوگوں کی ہوئی صبح

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹک میں گذشتہ کچھ دنوں سے شدت کی گرمی سے عوام پریشان تھے، درجہ حرارت بڑھتے ہوئے بھٹکل میں پیر کو 37 ڈگری سیلسیس تک پہنچ گیا تھا، مگر منگل صبح قریب 5 بجے  اچانک آسمان میں بجلیوں کی زبردست چمک اور  بادلوں کی گڑگڑاہٹ کے ساتھ بارش شروع ہوگئی اور دیکھتے ہی ...

بھٹکل سے مزید تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ؛ آج موصول ہونے والی تمام رپورٹس بھی نیگیٹیو؛ کیا کسی کی رپورٹ پوزیٹیوآنے کا خدشہ ہے ؟

کورونا وائرس کو لے کر شہر سمیت پورے ملک میں لاک ڈاون جاری ہے اور ہر روز مشکوک لوگوں کے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ کئے جارہے ہیں۔اب تک بھٹکل سے جن لوگوں کے تھوک کے نمونے  جانچ کے لئے روانہ کئے جارہے تھے،  راحت کی خبریں موصول ہورہی تھیں یہاں تک کہ مینگلور اور کاروار میں ...

بھٹکل میں کورونا وائرس کو لے کر کیاسوشیل میڈیا میں کسی طرح کی سازش رچی جارہی ہے ؟ مسلمانوں سے دور رہنے اورکسی بھی طرح کا لین دین نہ رکھنے کے مسیجس وائرل

ایسا لگتا ہے کہ کورونا وائرس کی وباء فسطائی اور فرقہ وارانہ ذہنیت والے غیر مسلموں کے لئے مسلمانوں کے خلاف اپنی بھڑاس نکالنے کا نیا ہتھیار بن گئی ہے۔ ایک طرف کورونا وائرس کے نام پر مسلمانوں سے دوری رکھنے کی تلقین کی جارہی ہے  اور مسلمانوں سے کسی بھی طرح کی خریداری کرنے کی ...

کورونا کے نام پر مسلمانوں پر حملہ؛ باگلکوٹ میں تین مسلم لوگوں کو ایک گاوں میں داخل ہونے سے روکنے کی واردات

باگلکوٹ کے مدھول پولیس اسٹیشن کے حدود میں آنے والے ایک گاؤں میں چند شرپسندوں نے مسلمانوں کو اپنے گاؤں میں داخل ہونے سے عملاً روکتے ہوئے ان پر حملہ کرنے کی واردات پیش آئی ہے  جس کی ویڈیو کلپ بھی سوشیل میڈیا پر  وائرل ہوگئی ہے۔

بھٹکل میں شدت کی گرمی کے بعدوقت سے پہلے ہی برسی بارش؛ساحلی علاقوں میں بجلیوں اور بادلوں کی گڑگڑاہٹ کے ساتھ لوگوں کی ہوئی صبح

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹک میں گذشتہ کچھ دنوں سے شدت کی گرمی سے عوام پریشان تھے، درجہ حرارت بڑھتے ہوئے بھٹکل میں پیر کو 37 ڈگری سیلسیس تک پہنچ گیا تھا، مگر منگل صبح قریب 5 بجے  اچانک آسمان میں بجلیوں کی زبردست چمک اور  بادلوں کی گڑگڑاہٹ کے ساتھ بارش شروع ہوگئی اور دیکھتے ہی ...

مینگلور کے قریب بنٹوال میں دیپ جلاؤ مہم کے دوران اقلیتوں کے گھروں پر پتھراؤ۔ پولیس میں درج کی گئی شکایت

کورونا وائرس کے خلاف متحدہ طور پر جدوجہد کی علامت کے طور پر وزیر اعظم نریندرا مودی نے دیپ جلانے کی جو آواز دی تھی، اس کے دوران بنٹوال میں اقلیتوں کے گھروں پتھراؤ کرنے اور پٹاخے پھینکنے کی واردات پیش آئی ہے۔