بھٹکل : ریاستی گورنر تھاورچند گہلوت کا مرڈیشور مندر دورہ؛

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 3rd December 2021, 9:05 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:3؍ ڈسمبر(ایس اؤ نیوز) ریاست کےگورنر تھاورچند گہلوت جمعہ صبح اپنی فیملی کے ساتھ مرڈیشور مندرپہنچ کر پوجا پاٹ کی اور اپنی مذہبی رسومات کو ادا کیا۔

کولور سے نکل کر صبح 30-11بجے مرڈیشور پہنچنے پر مندر انتظامیہ کےمینجر منجوناتھ شٹی نے آراین شٹی ٹرسٹ کی جانب سے گورنر کا استقبال کیا۔ اس کے بعد گورنر نے اپنے خاندان کے ساتھ مندر پہنچ کر  پوجا پاٹ کی۔ اس موقع پر مندر انتظامیہ کی طرف سے گورنر کی تہنیت کی گئی ۔ مندر درشن کے بعد گورنر نے وزٹنگ بک میں اپنا پیغام قلم بند کیا۔ اس کے بعد مندر کے صحن میں لفٹ کے ذریعے 21ویں منزل پر پہنچ کر بحر عرب کا نظارہ کیا۔ مرڈیشور میں تھوڑی دیر قیام کے بعد گورنر گوکرن کے لئے روانہ ہوئے۔ جہاں انہوں نےریاست کی مشہور مندر میں پوجا کرنےکے بعد کاروار کےلئے نکل گئے۔

ریاستی گورنر کی آمد کو دیکھتے ہوئے مرڈیشور مندر میں بھگتوں پرپابندی عائد کی گئی تھی ، سڑکوں پر بھی آمد ورفت کو روکا گیا تھا۔ ہر طرف پولس سکیورٹی لگائی گئی تھی۔ صبح سویرے ہی بھٹکل سرحد سےلےکر مرڈیشور تک قومی شاہراہ پر پولس گشت کرتی نظر آئی۔ حفاظتی انتظامات کے تحت ڈپٹی کمشنر ملئی مہیلن اور  ایس پی ڈاکٹر سمن پنیکر کاروار سے خصوصی طور پر بھٹکل پہنچ گئے تھے۔ ضلع پنچایت چیف ایکزی کوٹیو افسر پریانگا بھی اس موقع پر بھٹکل میں نوجود تھی، جنہوں نے گورنر کا بھٹکل سرحد پر استقبال کیا۔ اس موقع پر کئی سرکاری افسران موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: دانتوں میں درد اور سردرد جیسی عام بیماریوں پر اسپتال نہ جائیں ،شدید بیمار پڑنے یا ایمرجنسی کی صورت میں ہی اسپتال کا رخ کریں: کاروار اور ہوناور میں پانچ دنوں تک اسکول بند

شدید بیمار پڑنے اور ایمرجنسی ہونے پر ہی سرکاری، پرائیویٹ  اسپتال یا سوپر اسپیشالٹی اسپتال کا رُخ کریں اور معمولی بیمار مثلاً دانتوں کا درد، سر میں درد وغیرہ پر  اسپتالوں کا رُخ نہ کیا جائے، ایسی عام بیماریوں کے لئے مقامی ڈاکٹروں کے ذریعے علاج کراسکتے ہیں۔ اس طرح  کا حکم حکومت ...

جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے ہونہار فرزند کابڑا کارنامہ ۔ انٹرنیشنل سطح پر روشن کیا بھٹکل کانام

کہتے ہیں کہ درخت اپنے پھل سے پہچانا جاتا ہے اور تعلیمی ادارے اپنے فارغین کی لیاقت اور صلاحیت سے پہچانے جاتے ہیں، ہندوستان میں بڑے تعلیمی اداروں کا نام کچھ شخصیات نے ہی روشن کیا ہے ،  الحمد للہ بھٹکل کے دینی و عصری تعلیم گاہوں کے طلبہ و طالبات بھی بڑی حد تک اپنی مادر علمی کی نیک  ...