بھٹکل: منڈلی میں کتے کے حملے میں عورت کی موت کے بعد کتوں کی دھڑ پکڑ شروع؛ گلمی میں چھوڑے جانے کے شک میں عوام نے کیا احتجاج

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th June 2019, 9:58 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 8/جون (ایس او نیوز) تعلقہ کے منڈلی میں پنچایت کی طرف سے آوارہ کتوں کو  پکڑ کر گلمی جانوروں کے اسپتال لے جانے کے دوران عوام نے  یہ سمجھ کر کتوں سے بھرے  رکشہ کو روک کر احتجاج کیا کہ  اِن کتوں کو گلمی میں لاکر چھوڑا جارہاہے۔ مگر بعد میں بھٹکل سرکل پولس انسپکٹر نے موقع پر پہنچ کر عوام کو سمجھابجھا کر رکشہ کو  ساگر روڈ جنگل روانہ کرنے میں کامیاب ہوگئے۔

گلمی میں آٹو سے بھرے گڈس رکشہ کی ایک وڈیو اور فوٹوزوہاٹس ایپ پر وائرل ہوگئی  جس میں لکھا گیا تھا کہ بھٹکل میں ایک عجیب و غریب واقعہ پیش آیاہے اور  ایک  گڈس رکشہ میں کتے بھرے ہوئے پائے گئے ہیں  رکشہ کو لے جانے کےدوران عوام نے  رکشہ کو پکڑلیا ہے اور پولس چھان  کررہی ہے۔

وہاٹس ایپ پر وڈیوز اور فوٹوز دیکھتے ہی ساحل آن لائن نے بھٹکل کے اعلیٰ پولس آفسر سے رابطہ کیا جنہوں نے وضاحت کی کہ  عوام کو غلط فہمی ہوگئی تھی جس کی وجہ سے کتوں سے بھرے رکشہ کو روکا گیا تھا۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز  کتے کے حملے میں ایک عمر رسیدہ خاتون کی موت واقع ہوگئی تھی جبکہ دیگر تین لوگ شدید زخمی ہوگئے  تھے،  واقعے کے بعد علاقہ  میں سخت خوف وہراس پایا جارہا تھا اور عوام آوارہ کتوں سے بے حد پریشان تھے۔  پولس نے بتایا کہ آج منڈلی پنچایت کی طرف سے آوارہ کتوں کو پکڑنے کی مہم شروع کی گئی اور قریب پندرہ کتوں کو پکڑ کر ایک گڈس رکشہ پر بھر کر انجکشن لگوانے  پہلے گلمی میں واقع ویٹرنیٹی اسپتال لے جایا گیا،   اس موقع پر گلمی کے عوام  یہ سمجھ کر رکشہ کو روک کر احتجاج کرنے لگے  کہ  کتوں کو یہاں لاکر چھوڑا جارہا ہے۔ عوام کا کہنا تھا کہ ان کتوں کو اگر یہاں لاکر چھوڑیں گے تو یہاں کے عوام کے لئے مسئلہ کھڑا ہوجائے گا۔ 

واقعے کی اطلا ع ملتے ہی بھٹکل سرکل پولس انسپکٹر گنیش  موقع پر پہنچے اور عوام کو سمجھایا کہ  کتوں کو یہاں صرف انجکشن لگوانے کے لئے لایا گیا ہے اور اُنہیں ساگر روڈ جنگل میں لے  جاکر چھوڑا جائے گا۔ عوام نے اس موقع پر ساگر روڈ پر چھوڑنے کی  بھی مخالفت کی کہ  ساگر روڈ پر جہاں کچرہ پھینکا جاتا ہے وہاں چھوڑنے کی صورت میں کتے واپس گلمی آجائیں گے ۔ کافی بات چیت کے بعد انسپکٹرنے  بتایا کہ کتوں کو ساگر روڈ میں کافی دور لےجاکر جنگل میں چھوڑا جائے گا۔  بعد میں کتوں سے بھرے  گڈس رکشہ کو ساگر روڈ جنگل لے جایا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

علاج کے لئے منگلور جانے والے توجہ دیں: منگلورو اور اڈپی کے اسپتالوں میں کل 17جون کو او پی ڈی خدمات رہیں گی بند

 بھٹکل اور اطراف سے کافی لوگ  علاج معالجہ کے لئے پڑوسی ضلع اُڈپی اور مینگلور کے اسپتالوں کا رُخ کرتے ہیں،  ان کے لئے  بری  خبر یہ ہے کہ کل  ڈاکٹروں کے احتجاج کے پیش نظر  مینگلور اور اُڈپی کے اسپتالوں میں باہری  مریضوں  کا علاج  نہیں ہوگا۔

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی مدد کے لئے اے پی سی آر کی خدمات دستیاب

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی رہنمائی اور اُن کی  مدد کے لئے  اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس  (اے پی سی آر)  کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہے۔جن  لوگوں نے  اپنی چھوٹی چھوٹی سرمایہ  کاری  اس کمپنی میں کی تھی اور اب وہ کنگال ہوچکے ہیں، اے پی ...

نچلی عدالت نے چار ملزمین کو عمر قید اور ایک ملزم کو باعزت بری کیا، جمعیۃ علماء نچلی عدالت کے فیصلہ کو ہائی کورٹ میں چیلنج کرے گی:گلزاراعظمی

14 سالوں کے طویل انتظار کے بعدآج الہ آباد کی خصوصی عدالت نے رام جنم بھومی (ایودھیا دہشت گردانہ حملہ) معاملے میں اپنا فیصلہ سنایا اور پانچ میں سے ایک جانب جہاں چار ملزمین کو عمر قید کی سزا دی وہیں ناکافی ثبوت وشواہد کی بنیاد پر ایک ملزم کو باعزت بری کردیا۔

علاج کے لئے منگلور جانے والے توجہ دیں: منگلورو اور اڈپی کے اسپتالوں میں کل 17جون کو او پی ڈی خدمات رہیں گی بند

 بھٹکل اور اطراف سے کافی لوگ  علاج معالجہ کے لئے پڑوسی ضلع اُڈپی اور مینگلور کے اسپتالوں کا رُخ کرتے ہیں،  ان کے لئے  بری  خبر یہ ہے کہ کل  ڈاکٹروں کے احتجاج کے پیش نظر  مینگلور اور اُڈپی کے اسپتالوں میں باہری  مریضوں  کا علاج  نہیں ہوگا۔

آئی ایم اے معاملہ میں نرم رویہ اختیار کرنے کاسوال پیدا نہیں ہوتا: ضمیر احمد خان

آئی مانیٹری اڈوائزری (آئی ایم اے) نامی پونزی کمپنی کے دھوکہ دہی معاملہ میں نرم رویہ اختیار کئے جانے کا سوال پیدا نہیں ہوتا۔ خصوصی تحقیقاتی ٹیم (ایس آئی ٹی) کی جانب سے تحقیقات جاری ہیں۔اس پس منظر میں بی جے پی کی جانب سے عائد کئے جارہے الزامات بکواس ہیں۔