بھٹکل نوائط کالونی کے عوام کی ہیسکام سے شکایت؛ 15 دنوں کی زائد میٹر ریڈنگ کے ساتھ تھمایاجارہا ہے بِل

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 19th September 2019, 1:53 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل 19/ستمبر (ایس او نیوز) بھٹکل ہیسکام کی جانب سے ہر ماہ 4, 5 اور 6  تاریخ کو گھروں میں دیا جانے والا بِل 18, 19 اور 20 تاریخوں کو دیا جاتا ہے جس کے نتیجے میں  12 سے 15 دنوں کی میٹر  Reading زائد ہوجاتی ہے اور ریڈنگ مطلوبہ یونٹ سے زائد ہونے کی صورت میں ہیسکام کی طرف سے پینالٹی بھی ڈالی  جاتی ہے، اس طرح کی شکایتیں گذشتہ کئی ماہ سے الگ الگ علاقوں کے لوگوں کی طرف سے کی جارہی تھی، آج جمعرات کو  نوائط کالونی    بالخصوص مریم علی مسجد کے اطراف کے مکینوں نے بھی ہیسکام دفتر پہنچ کر اسی طرح کی شکایت کی ہے  اور ہیسکام کے اسسٹنٹ انجینر کو بل دکھا کر بتایا ہے کہ اُنہیں  15 دنوں کی زائد میٹر ریڈنگ کے ساتھ بل تھمایا گیا ہے۔

علاقہ کے ذمہ دار جناب عنایت اللہ شاہ بندری نے بتایا کہ  ہیسکام کے  اہلکار اکثر  لاپرواہی کا مظاہرہ کرتے ہوئے متعینہ تاریخوں کو گھر نہیں پہنچتے، البتہ بِل پر پرانی تاریخ درج رہتی ہے، اور میٹر ریڈنگ کرنے 12 اور 15 دنوں کے بعد پہنچ کر اُس وقت کی میٹر ریڈنگ درج کی جاتی ہے، ایسا کرنے سے  ظاہر ہے کہ 12 سے 15 دنوں میں جتنی  زائد بجلی استعمال ہوئی ہے، اُسی کے مطابق  زائد میٹر ریڈنگ کا   بل ہاتھوں میں تھمایا جاتا ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ بھٹکل کے اکثر لوگ اس طرح کی باتوں پر توجہ نہیں دیتے، مگر  ایسا کرنے کی صورت میں اُن سے زائد بل  لیاجاتا ہے۔ انہوں نے ہیسکام آفسر سے  مطالبہ کیا  کہ جس تاریخ کا بل ہے، اُسی دن کی میٹر کی ریڈنگ کرکے بل دیاجانا چاہئے اور جو بھی ہیسکام اہلکار اس طرح کی لاپرواہی کرتے ہیں اُن کے خلاف کاروائی کی جانی چاہئے۔

ہیسکام کے اسسٹنٹ انجینر مسٹر منجوناتھ  نے اس تعلق سے اُن  کو یقین دلایا  کہ وہ اس طرح کے معاملوں کے  متعلق  کاروائی کریں گے اور آئندہ اس طرح کی شکایت کا موقع نہیں دیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

بھٹکل سرکاری ڈاکٹر پر لڑکے کے ہاتھ کی ہڈی توڑنے کا الزام ؛ والدہ نے سونپی شکایت

ہاتھ میں درد اور سوجن کی شکایت لے کر علاج کے لئے سرکاری اسپتال پہنچنے والے  لڑکے کے ہاتھ کی ہڈی ٹوٹنے کی بات سامنے آنے کے بعد لڑکے کی ماں نے سرکاری ڈاکٹر پر الزام لگایا ہے کہ اُس نے لڑکے کا ہاتھ موڑ کراُس کی  ہڈی توڑی ہے۔ لڑکے کی ماں نے اس واقعے کے بعد بھٹکل سرکاری اسپتال کی ...

مینگلور: بس میں سفر کے دوران خاتون مسافر کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے والا کنڈکٹر گرفتار؛ پتور بس ڈپو سے ہے کنڈکٹر کا تعلق

خاتون مسافر کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں ایک کے ایس آر ٹی سی بس کنڈکٹر کو  گرفتار کرلیا گیا ہے اور عدالت میں پیش کرتے ہوئے اُسے  جوڈیشیل کسٹڈی میں بھیج دیا گیا ہے۔ گرفتار شدہ کنڈکٹر کی شناخت پتور بس ڈپو سے منسلک ایسوبو علی کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بیلتنگڈی: آٹو رکشا کھیت میں گرنے سے 2خواتین کی موت۔ حاملہ عورت معجزاتی طور پر محفوظ

بیلتنگڈی تعلقہ کے انڈابیٹو نامی گاؤں میں ایک آٹو رکشا اُلٹ کر 25 فٹ گہرے کھیت میں جاگرنے سے رکشہ پر سوار دو خواتین جاں بحق ہوگئیں، البتہ رکشہ پر سوار ایک حاملہ خاتون معجزاتی طور پر محفوظ رہ گئی۔ حادثہ پیر کی شام کو پیش آیا۔

  اور اب کرونا وائرس سے ہلاکت 1868 سے پار !!! متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 72 ہزار 436 تک پہنچی

چین میں کرونا وائرس سے مزید 98 افراد کی ہلاکت کے بعد اس وائرس سے مرنے والوں کی مجموعی تعداد 1868 ہو گئی ہے۔چین کے محکمہ نیشنل ہیلتھ کے مطابق منگل تک کرونا وائرس کے مزید 1886 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔ وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 72 ہزار 436 تک پہنچ چکی ہے جن میں بیشتر کا تعلق صوبہ ...

مینگلور: بس میں سفر کے دوران خاتون مسافر کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے والا کنڈکٹر گرفتار؛ پتور بس ڈپو سے ہے کنڈکٹر کا تعلق

خاتون مسافر کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے الزام میں ایک کے ایس آر ٹی سی بس کنڈکٹر کو  گرفتار کرلیا گیا ہے اور عدالت میں پیش کرتے ہوئے اُسے  جوڈیشیل کسٹڈی میں بھیج دیا گیا ہے۔ گرفتار شدہ کنڈکٹر کی شناخت پتور بس ڈپو سے منسلک ایسوبو علی کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

مودی، یوگی، شاہ کے خلاف مبینہ بیان بازی کے الزام میں مولانا توقیر رضا پر مقدمہ

وزیر اعظم نریندر مودی، وزیر داخلہ امیت شاہ اور اترپردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کے خلاف مبینہ قابل اعتراض بیان دینے کے الزام میں اتحاد ملت کونسل (آئی ایم سی) کے سربراہ مولانا توقیر رضا کے خلاف پولیس نے مقدمہ درج کیا ہے۔