بھٹکل چنبیلی پھول کی خوشبو کووڈ کرفیو میں تحلیل : کاشت کار پریشان اور حکومت سے معاوضہ کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 12th May 2021, 3:48 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:12؍ مئی (ایس اؤ نیوز) اپنی خوشبو کے لئے دنیا بھر میں مشہور بھٹکل کےچنبیلی  پھول کا پیشہ تعلقہ میں اہم مانا جاتاہے۔ گورٹے سے لے کر بائیلور تک کئی لوگ چنبیلی  کی کاشت میں مصروف ہیں۔ اور ان میں سے اکثر لوگوں کی زندگی اسی پر منحصر ہے۔

جنوری سے جون تک  چنبیلی کے کھلنے کا موسم ہوتاہے  اس دوران   کاشت کار بہتر آمدنی کما لیتے ہیں۔ گذشتہ برس بھی انہی مہینوں میں لاک ڈاؤن سے نقصان اٹھانا پڑا تھاتو اس مرتبہ بھی  کورونا وباء نے   انہیں مشکلات میں پھنسا دیا ہے۔ چنبیلی  کھل کر کچھ خوشبو بکھیرنے  کو تیار تھی تو کووڈ کرفیو کا نفاذ ہو گیا جس سے  کاشت کار پریشانیوں میں مبتلا ہوگئے ہیں۔

بھٹکل تعلقہ میں جتنے  چنبیلی  کے پھول کھلتے ہیں ان سب کا یہاں بیوپار نہیں ہوتا بلکہ پڑوسی ضلع منگلورو میں اس کی کافی مانگ ہے۔ بھٹکل سے روزانہ 7سے 8گٹے (ایک گٹے میں ایک فٹ کے  10پھول مالائیں ہوتی ہیں)چنبیلی پھولوں کو سواریوں کے ذریعے منگلورو پہنچایاجاتاہے۔ پھر مانگ کے مطابق بیرونی ممالک اور ریاست کے دیگر مقاما  ت کو سپلائی کیا جاتاہے۔

لاکھوں روپئے کا نقصان : پھول بیوپاریوں کی مانیں تو اس وقت ایک فٹ  چنبیلی  پھول مالا کی قیمت 50سے 60روپئے ہوتی تھی ۔ منگلورو بھیجنے والے ایجنٹ بہتر قیمت دے کر پھول خریدا کرتے تھے ۔ جنتا کرفیو ہونے کے باوجود پھولوں کی مانگ میں کوئی کمی نہیں ہوئی۔ قیمت کم بھی ملتی ہے تو نقصان نہ ہونے کی امید تھی ۔ لیکن پچھلے ایک ہفتہ سے ایجنٹ حضرات پھول نہیں خرید رہے ہیں کیونکہ ایک تو   پھولوں کو پڑوسی اضلاع لے جانے میں دقت ہے دوسرے شادیاں  نہیں ہورہی ہیں، عوامی پروگرامس منسوخ ہوگئے ہیں یہی وجہ ہے کہ اب  منگلورو مارکیٹ  میں بھی اس کے خریدار نہیں پائے جارہے ہیں۔ جنتا کرفیو، کووڈ کرفیو اور لاک ڈاؤن جیسے  الگ الگ ناموں سے ہماری لاکھوں کی آمدنی  بند ہوگئی ہے ۔ 

فصل نقصان کا معاوضہ ادا کریں:پچھلے دوبرسوں سے  چنبیلی پھول سے وابستہ کاشت کار کافی نقصان برداشت کررہے ہیں۔ کھاد، کیمیکل دوائیں ، مزدور کی تنخواہ سمیت ہزاروں روپئے خرچ ہوتے ہیں۔ ایک ایسے وقت جب فصل نکل آتی تھی کچھ کماسکتے تھے عین  اسی وقت  کاشتکاروں کو  ان مشکل حالات کا سامنا ہے۔ کاشتکاروں نے  حکومت سے مطالبہ کیا ہے  کہ وہ ہمارے مشکل حالات کو سمجھتے  ہوئے  معاوضے کا اعلان کرے ساتھ ساتھ  ہمیں مارکیٹ فراہم کرتے ہوئے اپنی قیمت پر پھول بیچنے کا موقع فراہم کرے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہوناور کے کاسرکوڈ سمندر سے ایک نامعلوم خاتون کی نعش برآمد؛ شناخت کے لئے عوام سے تعاون کی اپیل

تعلقہ کے کاسرکوڈ سمندر سے ایک نامعلوم خاتون کی نعش برآمد ہوئی ہے جس کی عمر  35 سے 45 سال  تک ہوسکتی ہے۔ پولس نے عوام الناس سے اپیل کی  ہے کہ اگر کسی کو اس خاتون کےتعلق سے کوئی جانکاری ہوتو پولس کو خبرکریں۔

منگلورو: بس پر سفر کے دوران خاتون کی بیگ سے 2.5 لاکھ روپے مالیت کے زیورات چرانے والا ملزم گرفتار

شیموگہ سے منگلورو کی طرف بس میں سفر کررہی ایک خاتون کی بیگ سے 53 گرام وزنی 2.5 لاکھ روپے مالیت کے سونے کے زیورات چوری کرنے کے الزام میں پولیس نے ایک شخص کو گرفتار کرلیا ہے جس کی شناخت  پی جنارتنم کرپا راو کی حییثیت سے کی گئی ہے۔