ہوناور تعلقہ کے گونڈبال علاقے میں سیلاب سے باغات اور مکانات زیر آب۔ رکن اسمبلی سنیل نائک، اسسٹنٹ کمشنر اور تحصیلدارنے کیا علاقے کا دورہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th August 2019, 3:04 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ہوناور 8/اگست (ایس او نیوز) سداپور تعلقہ میں کل ہوئی تیز بارش کے بعد ندیوں میں سیلاب آگیا جس کی وجہ سے ہوناور کا گوڈبال علاقہ بری طرح متاثر ہوا ہے۔ 

موصولہ رپورٹ کے مطابق گونڈبال میں ندی کے دونوں کناروں پر گھروں میں آدھی رات کو پانی گھس آیا۔ مکانات کے علاوہ کھیت اور باغات بھی پانی میں ڈوب گئے ۔حالانکہ ہوناور میں صرف 152ملی میٹر بارش ہوئی لیکن سداپور تعلقہ اور گھاٹ کے علاقے میں برسنے والی بارش کی وجہ سے ہوناور تعلقہ میں سیلاب آگیا۔رات کے اندھیرے میں اچانک گھروں میں پانی گھسنے کی وجہ سے لوگوں میں دہشت پھیل گئی۔

 گونڈبال اور اس کے اطراف والے علاقوں میں سیلاب کی خبر ملنے پربھٹکل ایم ایل اے سنیل نائک، اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا، ڈپٹی تحصیلدار ستیش گوڈا وغیر ہ نے متاثرہ علاقے کا دورہ کرتے ہوئے عوام کو راحت پہنچانے کے انتظامات شروع کیے۔زیر آب آنے والے علاقوں کے 53خاندان کے افراد کے لئے 5 اسکولوں میں راحت کیمپ(گنجی کیندرا) میں منتقل کیا گیا ہے۔تیز برسات اور طوفانی ہواؤں کی وجہ سے درختوں کے علاوہ بجلی کے کھمبے بھی زمین سے اکھڑ گئے جس کے نتیجے میں علاقے میں بجلی منقطع ہوگئی ہے۔

ایم ایل اے سنیل نائک نے بتایا کہ اسمبلی حلقے میں مسلسل بارش سے ہونے والی ممکنہ دشواریوں پر نظر رکھنے کے لئے نوڈل آفیسروں کو تعینات کیا گیا ہے۔اور کسی بھی علاقے میں سیلابی صورتحال پید ا ہوتے ہی امداد اور راحت کاری کے اقدامات کرنے کے لئے سرکاری افسروں کو واضح ہدایات دی گئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی قسم کی مشکل پیش آنے کی صورت میں عوام کو چاہیے کہ متعلقہ افسران سے رابطہ کریں یا پھر براہ راست ان کے اپنے دفتر سے رابطہ کرتے ہوئے تفصیلات بتائیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں ایک شخص نے کی خودکشی

یہاں آزادنگر فورتھ کراس میں ایک 22 سالہ نوجوان نے گھر کے ایک کمرے میں ہی  چھت سے لٹک کر خودکشی کرلی جس کی شناخت محمد مستقیم شیخ کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بھٹکل کے کورونا سے متاثرہ مزید چار لوگ صحت یاب ہوکر کاروار اسپتال سے ڈسچارج؛ پہنچے بھٹکل

مینگلور اسپتال لنک کے جن 29 لوگوں کو کاروار کمس اسپتال میں ایڈمٹ کیا گیا تھا، اُس میں سے 20 لوگوں کو سنیچر کے دن اسپتال سے ڈسچارج کیا گیا تھا ، اُن ہی میں سے مزید چار لوگوں کو آج کمس  سے ڈسچارج کیا گیا ہے۔ چاروں بذریعہ ایمبولنس آج منگل کو بھٹکل سرکاری اسپتال پہنچے جہاں سے ضروری ...

بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور سابق ایم ایل اے کے تعاون سے کیا گیا مہاجر مزدوروں کی روانگی کا انتظام

اوڈیشہ اور جھار کھنڈ کے سیکڑوں مزدور جو ماہی گیری اور دیگر سرگرمیوں میں خدمات انجام دے رہے تھے اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے پریشان تھے ان کو اپنے گھروں کے لئے روانہ کرنے کا انتظام بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور سابق ایم ایل اے منکال وئیدیا کی جانب سے کیا گیا۔

پولیس افسران اور اہلکاروں میں کووِڈ 19پوزیٹیو نکلنے کے بعداڈپی کے تمام پولیس اسٹیشنوں کو کیا جا رہا ہے سینیٹائز

اڈپی ضلع کے بعض پولیس اسٹیشنوں سے وابستہ پولیس افسران اور اہلکاروں کو کورونا مرض لاحق ہونے کے بعد محکمہ پولیس کی طرف سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ ضلع کے تمام پولیس اسٹیشنوں کو مرحلہ وار سینیٹائز کیا جائے۔

کاروار سمیت ریاست کے سمندر میں 14جون تک ماہی گیری کا موقع

کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن کی وجہ سے ماہی گیری کو ہوئے نقصان کو دیکھتے ہوئے مرکزی حکومت نے 14جون تک گہرے سمندر میں مشینی ماہی گیر ی پر پابندی عائد کرتے ہوئے روایتی ماہی گیر ی کو جاری رکھنے کی منظوری دی ہے۔ ترمیم شدہ حکم نامے کے مطابق 31جولائی تک ...

بھٹکل کے کورونا سے متاثرہ مزید چار لوگ صحت یاب ہوکر کاروار اسپتال سے ڈسچارج؛ پہنچے بھٹکل

مینگلور اسپتال لنک کے جن 29 لوگوں کو کاروار کمس اسپتال میں ایڈمٹ کیا گیا تھا، اُس میں سے 20 لوگوں کو سنیچر کے دن اسپتال سے ڈسچارج کیا گیا تھا ، اُن ہی میں سے مزید چار لوگوں کو آج کمس  سے ڈسچارج کیا گیا ہے۔ چاروں بذریعہ ایمبولنس آج منگل کو بھٹکل سرکاری اسپتال پہنچے جہاں سے ضروری ...

بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور سابق ایم ایل اے کے تعاون سے کیا گیا مہاجر مزدوروں کی روانگی کا انتظام

اوڈیشہ اور جھار کھنڈ کے سیکڑوں مزدور جو ماہی گیری اور دیگر سرگرمیوں میں خدمات انجام دے رہے تھے اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے پریشان تھے ان کو اپنے گھروں کے لئے روانہ کرنے کا انتظام بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور سابق ایم ایل اے منکال وئیدیا کی جانب سے کیا گیا۔

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا میں زبردست گرمی ؛ 26مئی سے اگلے تین دنوں تک کرناٹکا میں زبردست بارش کے امکانات

بحرہ عرب اور خلیج بنگال میں طوفانی ہواؤں سے پیدا ہونے والے دباؤ کے نتیجے میں ریاست کے جنوبی اندرونی علاقوں اور ساحلی پٹی پر 26مئی سے اگلے تین دنوں تک زبردست بارش ہونے کا محکمہ موسمیات نے امکان جتایا ہے۔