بھٹکل آئی اے ایس فاؤنڈیشن کے زیراہتمام مسابقاتی امتحانات کے لئے بچوں میں بیداری پیدا کرنے منفرد پروگرام : رٹّا مارنے کے بجائے سمجھ کر پڑھیں گے تو کامیابی یقینی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 22nd August 2019, 9:06 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:22؍اگست   (ایس اؤ نیوز) یونین پبلک سروس کمیشن (یوپی ایس سی ) کی جانب سے منعقد ہونےو الے مسابقاتی امتحانات آئی اے ایس، آئی پی ایس وغیرہ کے متعلق طلبا  میں بیداری کرنے اور اُنہیں ان امتحانات میں شریک ہونے  کی ترغیب دینے کےمقصد سے   بھٹکل آئی اے ایس فاونڈیشن کی جانب سے رابطہ ہال میں ایک  تربیتی پروگرام منعقد کیا گیا جس میں مینگلور سے یو پی ایس سی  کے طلبا کو  ٹریننگ دینے والے ماہر   مسٹر دیپک ایل نے طلبا کو مفید مشوروں سے نوازا۔

بدھ کی شام منعقدہ پروگرام میں آٹھویں سے لے کرڈگری تک کے طلبا کو مخاطب کرتے ہوئے مسٹر دیپک نے  بتایا کہ یو پی ایس سی کے امتحان میں طلبا آسانی کے ساتھ کامیاب ہوسکتے ہیں اور یہ کوئی مشکل امتحان نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو طلبا  یہ امتحان دینا چاہتے ہیں ، اُن کے لئے ضروری ہے کہ وہ  اسکولوں میں جو  بھی پڑھائی کرتے ہیں، اُسے صرف سمجھ کر پڑھنا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ صرف رٹّا مار نے اور  زبانی یاد کرنے سے کام نہیں بنے گا، برابر سمجھ کر پڑھائی کریں گے تو یہی عمل  یو پی ایس  سی کے امتحان میں کامیابی دلائی گی۔  انہوں نے کہا کہ لوگوں کے ذہنوں میں اس امتحان کو لے کر بہت ہی  خوف کا ماحول ہے جب کہ یہ امتحانات کو ئی کٹھن مرحلہ نہیں ہیں ، صرف  اچھے  ڈھنگ کے  مطالعہ کے ساتھ امتحان د ینے کی ضرورت ہے۔

 آئی اے ایس کی تربیت دینے والے ماہر تجربہ کار دیپک نے طلبا سے کہاکہ اگر آپ کو  ایسے مسابقاتی امتحانات میں کامیاب ہونا ہے تو پھر اس کی تیاری کے لئے ضروری ہے کہ ہشتم جماعت (8th Std)سے ہی مطالعہ کی شروعات کرنی ہوگی ۔ کیونکہ ان امتحانات کا نصاب 8ویں سے پی یوسی دوم تک کے نصاب پر مشتمل ہوتاہے۔ اور جو طلبا ان امتحانات میں شریک ہونے کا شوق رکھتےہیں انہیں اپنا نصاب صرف زبانی طور پر یاد  نہیں کرنا چاہئے بلکہ ہر مضمون کو سمجھ کر پڑھنا چاہئے تبھی یہ امتحانات آسان ہونگے۔ اور ہر کوئی ان امتحانات میں کامیاب ہوسکے گا۔

دبئی کے ادارہ مواصلات کے ماہر انجینر اور ساحل آن لائن کے ڈائرکٹر  مسٹر کے ایم سمیر نے طلبا  کی نفسیات کے مطابق خطاب کرتےہوئے طلبا سے سوالیہ انداز میں پوچھا کہ اگر آپ اپنی بائک کے ذریعے کہیں جارہے ہیں راستے میں کوئی پولس افسریا آرٹی اؤ افسر نظرآئے تو آپ کیا کریں گے ؟ جب طلبا نے جواب دیا کہ اُنہیں ڈر محسوس ہوگا اور وہ اپنا راستہ بدل دیں گے تو سمیر صاحب نے پوچھا کہ اگر وہی آفیسرآپ کو سلام کرے ، سیلوٹ مارے تو کیسا  محسوس کریں گے تو بچوں نے بتایا کہ اُنہیں فخر محسوس ہوگا، اُسی بات کو آگے بڑھاتے ہوئے جناب سمیر صاحب نے کہا کہ اگر آپ کو اُس مقام پر پہنچنا  ہے تو پھر  آئی اے ایس ، آئی پی ایس آفسر بننا ہوگا۔انہوں نے کہاکہ بھٹکل کے لوگ بے حد ذہین ہوتے ہیں اور ہر میدان میں  ہمارے لوگ کامیاب ہوئے ہیں،البتہ ہمارے لوگوں نے مسابقاتی امتحانات میں کبھی حصہ نہیں لیا ہے،  اگر ہمارے نوجوان بھی اس طرف توجہ دیں  ہم ایسے مسابقاتی امتحانات میں آسانی کے ساتھ  کامیاب ہوسکتےہیں۔ انہوں نے طلبا کو ہدایت دیتے ہوئے کہاکہ طلبا غیر ضروری بہانے بازی سے اسکول و کالجوں سے چھٹی نہ کریں، اپنی خواہشات کو لگام دیں ،ادھر ادھر گھومنے سے پرہیز کریں صرف اپنے مقصد پر فوکس کریں۔ طلبا اگر اعلیٰ منازل و مقام کو حاصل کرنا  اپنا مقصد بنائیں تو پھر کامیابی یقینی ہے۔مسٹر سمیر نے کہا کہ  طلبا اگر کسی بھی اعلیٰ منزل کو پانے کا  تہیہ کرلیں اور اُس پر جی توڑ محنت کریں تو یقینا ً اُنہیں منزل مل کر رہے گی۔ انہوں نے کہا کہ  ملک کے حکومتی اداروں میں مسلمانوں کی آبادی کے مطابق ہماری نمائندگی کی شرح بے حد  کم ہے۔ اگر ہم بھی ملک کی ترقی اور اپنے سماج کے لئے کچھ کرنا چاہتے ہیں تو یو پی ایس سی کا امتحان دے کر بہت ساری  خدمات انجام دے سکتے ہیں۔

بھٹکل آئی اے ایس فاؤنڈیشن کے بانی جیلانی محتشم نے افتتاحی کلمات پیش کرتے ہوئے بتایا کہ ہمارے طلبا کافی باصلاحیت اور قابلیت کے حامل ہیں، انہیں بس رہنمائی کی ضرورت ہے، انہوں نے  ایسے پروگراموں کے ذریعے طلبا کو یو پی ایس سی  کی طرف  راغب کرنے اور آگے بڑھانے کے لئے ہرممکن تعاون فراہم کرنے کا یقین دلایا ۔ انہوں نے بھٹکل کی مختلف جماعتوں کی جانب سے  یو پی ایس سی امتحانات میں شامل ہونے والوں کے لئے کئی ایک اسکالر شپ اسکیم  سے بھی فائدہ اُٹھانے  کی طرف توجہ دلائی اور کہا کہ اس تعلق سے رابطہ آفس یا ساحل آن لائن دفتر پہنچ کر معلومات حاصل کی جاسکتی ہے۔ ڈائس پر ساحل آن لائن کے مینجنگ ایڈیٹر عنایت اللہ گوائی بھی موجود تھے۔ فاونڈیشن کے سرگرم رکن مصعب عابیدہ نے نظامت کے فرائض انجام دئے، علی مفاذ کھروری نے  شکریہ ادا کیا، فاونڈیشن کے رکن نواز خان، مراد اُدیاور و دیگر ذمہ داران بھی موجود تھے۔ پروگرام میں شہر کے مختلف اسکولوں وکالجوں کےسو سے زائد طلبا  شریک ہوئے۔

مینگلور سے تشریف فرما  یو پی ایس سی کے طلبا کو تربیت دینے والے ماہر کوچ مسٹر دیپک ایل کا بھٹکل کے طلبا کو دیا گیا خطاب:

دبئی کے ماہر انجینر جناب سمیرکے ایم   کا بھٹکل کے طلبا کو  دیا گیا خطاب:

 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل تعلقہ بیلکے ہائی اسکول میں ایندھن کے صحیح استعمال پر آئیل کمپنی بیلگام کے ریجنل مینجر کا خطاب

جہاں بھی ایندھن کا استعمال کریں ہم ضرورت کے تحت کریں آج کل ایندھن کازیادہ تر غلط استعمال ہورہاہے جس کے نتیجے  میں آئندہ حالات  بگڑ سکتےہی۔ آئی اؤ سی ایل  بیلگام کے چیف ریجنل مینجر وی رمیش بابو نے ان خیالات کا اظہار کیا۔

کاروار: ای۔جائیداد کے متعلق الجھن اور پیچیدگی پیدا نہ کریں : وڈیوکانفرنس کے ذریعے ڈی سی کی ضلع و تعلقہ جات افسران کو ہدایت

اترکنڑا ضلع کے شہری علاقوں میں 95فی صد ای ۔ جائیداد کا سافٹ وئیر تیار ہے۔ مقامی افسران کسی بھی پیچیدگی کو جگہ نہ دیتے ہوئے سرگرم ہونے کی ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے ہدایات جاری کی ہیں۔

ضلع پنچایت سی ای او کے حکم پر بھٹکل تحصیلدار نے ہٹائیں مرڈیشور میں غیرقانونی دکانیں

ترکنڑا ضلع پنچایت چیف ایکزی کوٹیو آفسر(سی ای او)  محمد روشن کے حکم پر عمل درآمد کرتے ہوئے بھٹکل تحصیلدارکی قیادت میں ریوینیو ڈپارٹمنٹ کے افسران نے جمعرات کو دکانداروں کی مخالفت کے باوجود مرڈیشور کے سڑک کنارے بنی ہوئی غیر قانونی دکانوں کو ہٹانے کی کارروائی انجام دی۔

بھٹکل کاراسٹریٹ پر رات کے اندھیرے میں کچرا پھینکنے والوں کا بالاخر پتہ چل گیا، سی سی ٹی وی میں قید ہوگیا منظر

یہاں کار اسٹریٹ جیسی مصروف سڑک پر رات کے اندھیرے میں کچرے کا ڈھیر لگانے والوں سے عوام اور دکاندار بہت ہی زیادہ پریشان تھے اور کچرہ پھینکنے والوں کا پتہ لگانے کی کوششوں میں مصروف تھے، مگر بدھ کی شام کو بالاخر ایک رکشہ سے کچرہ پھینکنے کا منظر قریب میں واقع سی سی  ٹی وی کیمرے میں ...

بھٹکل نوائط کالونی کے عوام کی ہیسکام سے شکایت؛ 15 دنوں کی زائد میٹر ریڈنگ کے ساتھ تھمایاجارہا ہے بِل

بھٹکل ہیسکام کی جانب سے ہر ماہ 4, 5 اور 6  تاریخ کو گھروں میں دیا جانے والا بِل 18, 19 اور 20 تاریخوں کو دیا جاتا ہے جس کے نتیجے میں  12 سے 15 دنوں کی میٹر  Reading زائد ہوجاتی ہے اور ریڈنگ مطلوبہ یونٹ سے زائد ہونے کی صورت میں ہیسکام کی طرف سے پینالٹی بھی ڈالی  جاتی ہے، اس طرح کی شکایتیں ...

اترکنڑا ضلع میں موسلادھار بارش اور سیلاب سے سڑکیں خستہ : مسافر، عوام اورڈرائیور پریشان

اترکنڑا ضلع میں موسلادھار بارش اور سیلاب و طغیانی کی وجہ سے سب سے زیادہ سڑکوں کو نقصان پہنچا ہے ۔ عام زندگی معمول پر لوٹ کر ایک ماہ ہونےکو ہے لیکن راستوں کی حالت اب بھی خستہ حال ہے جس سے مسافروں کو کافی پریشانی ہونے کی اطلاعات موصول ہورہی ہیں۔