بھٹکل : بڑے جانوروں کی قربانی پر سرکاری پابندی کے پس منظر میں بکروں کا کاروبار زوروں پر

Source: S.O. News Service | Published on 19th July 2021, 12:17 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل 19/ جولائی (ایس او نیوز)  بقر عید کی آمد کے ساتھ بھٹکل میں بڑے پیمانے پر بڑے جانوروں کی قربانی ہمیشہ ایک معمول رہا ہے ۔ مگر امسال ریاستی حکومت کی پابندیوں کی وجہ سے بڑے جانور لانے اور فروخت کرنے میں جو رکاوٹیں پیدا ہورہی ہیں اس پس منظر میں بکرے کی منڈی بہت زیادہ اچھال پر آگئی ہے۔
    
بھٹکل شہر میں بکروں کے کاروبار کے ماضی میں برسہا برس تک 'سوداگر' فیمیلی کا نام چل رہا تھا ۔ مگر پچھلے چند برسوں سے اس میدان میں 'موٹیا گوٹ فام' نے اپنا جھنڈا لہرایا اور بہترین قسم کے بکروں کی فروخت میں آگے نکل گیا ۔ اب عید قرباں کے موقع پر فروخت کرنے کے لئے راجستھان، مدھیہ پردیش ، مہاراشٹرا وغیرہ سے مختلف اقسام کے بکروں  کی کھیپ بہت بڑی تعداد میں بھٹکل شہر پہنچ چکی ہے ۔ بکروں کے کاروبار میں اس مرتبہ 'موٹیا' کےعلاوہ 'پٹیل'، 'انعام، 'سلطان' ، 'فرینڈز' گوٹ فارم جیسے کچھ نئے نام بھی ابھر کر سامنے آئے ہیں اور انہوں  نے ٹی ایف سی  کے قریب میدان میں اور دوسرے مقامات پر بڑی تعداد میں بکرے فروخت کرنے کا انتظام کیا ہے۔
    
بڑے جانوروں کی قربانی میں دشواری کو دیکھتے ہوئے بھٹکل کے علاوہ مرڈیشور، منکی، شیرور وغیرہ سے لوگ بکروں کی خریدی کے لئے بھٹکل کی طرف رخ  کر رہے ہیں۔ اس مرتبہ فی کیلو 450 روپے تا 475 روپے قیمت چل رہی ہے اور اس اعتبار سے کم اور بھاری قیمتوں والے بکرے مارکیٹ میں دستیاب ہیں مگر متوسط طبقے کی نظر 15 تا 20 ہزار روپے والے بکروں پر ٹکتی نظر آرہی ہے۔

موٹیا گوٹ فام کے ارسلان کے مطابق اس مرتبہ انہوں نے عید کے موقع پر کم از کم 5000 بکرے فروخت ہونے کا ٹارگیٹ رکھا ہے، اگر ڈیمانڈ بڑھ گئی تو پھر مزید بکرے منگوائے جائیں گے ۔ ارسلان کا یہ بھی کہنا ہے کہ جن کے گھروں کے احاطے میں قربانی کے لئے سہولت نہیں ہے ان کے لئے ہم نے اپنے فارم پر ہی قربانی کرنے کا انتظام کیا ہے۔ 
    
بھٹکل میں اس وقت بہت بڑی تعداد میں بکروں کی منڈی سامنے آنے کے بعد یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ ان بکروں کی دیکھ بھال کرنے، چاراپانی دینے اور ضرورت ہونے پر ڈاکٹر سے دوائی وغیرہ حاصل کرنے کے لئے باگلکوٹ، کوپل وغیرہ سے کچھ چرواہوں کو بھی بلوایا گیا ہے، کیونکہ وہ اس کام میں پیشہ ورانہ مہارت رکھتے ہیں۔ بقر عید کا موسم ختم ہونے تک یہ لوگ یہاں قیام کریں گے۔ کوپّل سے تعلق رکھنے والے اوچیرپّا نامی ایک چرواہے نے بتایا کہ ہم لوگ بھٹکل میں آکر دس تا پندرہ دن قیام کرتے ہیں ۔ بکروں کی دیکھ بھال کرکے اچھی خاصی کمائی کرتے ہیں ۔ پھر عید قرباں ختم ہونے کے بعد ہم اپنے گاوں واپس چلے جاتے ہیں۔

یاد رہے کہ بھٹکل  سمیت  ملک کے بیشتر علاقوں میں بدھ 21 جولائی کو عیدالاضحیٰ منائی جارہی ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: وزیر اعلیٰ بومئی کو دھمکی دینے کا شاخسانہ - ہندو مہا سبھا لیڈر دھرمیندرا گرفتار

آل انڈیا ہندو مہا سبھا کے لیڈر دھرمیندرا  کی جانب سے  کل منگلورو کے ایک ہوٹل میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران گاندھی جی کی طرح وزیر اعلیٰ بسوا راج بومئی کو بھی قتل کرنے کی دھمکی دینے کے بعد آج پولیس نے دھرمیندرا  کو گرفتار کر لیا  ہے۔

بھٹکل وینکٹاپور ندی میں گرکر مزدور ہلاک

تعلقہ کے شرالی نیشنل ہائی وے  کنارے واقع وینکٹاپور ندی میں گرکر ایک مزدور کی موت واقع ہوگئی جس کی شناخت وینکٹاپور کے رہنے والے  وینکٹ رمن ناگپا گونڈا (51) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بھٹکل : بی جے پی حکومت نے ہندووں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی ہے :  منکال وئیدیا

میسورو میں مندر کو مہندم کرنے پر پوری ریاست میں ہندوتوا وادیوں نے  خاص طور پر ایک ہنگامہ کھڑا کررکھا ہے اور بی جے پی حکومت پر تنقید، دھمکی اور احتجاجات کا سلسلہ چل پڑا ہے ۔ اسی پس منظر میں بھٹکل کے سابق ایم ایل اے منکال وئیدیا نے بھی تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی حکومت نے ...

مینگلور: ہندو مہاسبھا لیڈر کی اخباری کانفرنس میں وزیر اعلیٰ بومئی کو جان سے مارنے کی دھمکی، بی جے پی پر اقلیتوں کی خوشامد کرنے کا الزام

میسور وضلع کے ننجن گڑھ میں ضلعی انتظامیہ کی طرف سے چند مندروں کے انہدام کے معاملہ میں ریاستی حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے شدت پسند ہندوتنظیم ہندو مہاسبھا کے ریاستی جنرل سکریٹری دھرمیندرا نے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کو جان سے ماردینے کی دھمکی دی ہے۔

بھٹکل سمندر کنارے سے ایک خاتون سمیت دو کی نعشیں برآمد؛ خودکشی کا شبہ

  بھٹکل تعلقہ کے ہاڈین  سمندر کنارےواقع چٹان پر سے دو لوگوں کی نعشیں برآمد ہوئی ہیں جس کے تعلق سے پولس کو شبہ ہے کہ ان دونوں نے خودکشی کی ہوگی۔ مہلوک میں  ایک خاتون ہے۔  نعشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھٹکل سرکاری اسپتال منتقل کیا گیا ہے۔

بھٹکل میں کووڈ کی تیسری لہر کی دہشت اور ویکسین کی قلت ۔ ویکسین سینٹرس کا چکر لگا کر عوام لوٹ رہے ہیں خالی ہاتھ

کووڈ کی دوسری لہر کچھ تھم تو گئی ہے مگر عوام کے اندر تیسری لہر کا خوف اور ویکسین نہ ملنے کی وجہ سے دہشت کا ماحول بنتا جارہا ہے۔ جبکہ حکومت کی  طرف سے  18سال سے زائد عمر کے تمام افراد کا ویکسینیشن کرنے کا بھروسہ دلایا گیا تھا ۔      لیکن فرسٹ ڈوز کی بات تو دور، فی الحال پہلا ڈوز لے ...

کوویڈ کا پیغام انسانیت کے نام۔۔۔۔ (از:۔مدثراحمد، ایڈیٹر آج کا انقلاب، شموگہ)

کوروناوائرس کی وجہ سے جہاںوباء دنیابھرمیں تیزی سے پھیلتی گئی اور چندہی مہینوں میں کروڑوں لوگ اس وباء سے متاثرہوئے،لاکھوں لوگ ہلاک ہوئے،وہیں اس وباء نےپوری انسانیت کو کئی پیغامات دئیے ہیں جو قابل فکر اور قابل عمل باتیں ہیں۔

بنگلورو: ’میڈیکل ٹیررزم ‘ کا ٹائٹل دینے والی بی جے پی اب خاموش کیوں ہے ؟:کانگریس کا سوال

بیڈ بلاکنگ دھندے کو ’’میڈیکل ٹیررزم ‘‘ کا نیا ٹائٹل دینے والی بی جےپی اب خاموش  کیوں ہے، اس سلسلے میں کوئی زبان  کیوں نہیں کھول رہا ہے، یہ سوال   ریاستی کانگریس نے بی جے پی سے کرتے ہوئے  جواب مانگا ہے۔

فائیوجی کا ریڈئیشن نقصان دہ نہیں ، بلکہ ٹیکنالوجی کا بےجا استعمال نقصان دہ: فائیوجی کے ماہر انجنئیر محمد سلیم نے فراہم کیں معلومات

فائیو جی ٹکنالوجی ان دنوں عوام کے درمیان بحث کا موضوع ہے۔ کورونا وبا کو ایک سازش قرار دیتے ہوئے لوگوں نے اس کے تار 5جی ٹکنالوجی سے جوڑنے کی بھی کوشش کی ہے۔یہ سارا معاملہ کیا ہے اسے سمجھنے کے لیے نائب امیر جماعت اسلامی ہند پروفیسر محمد سلیم انجینئر سے  مشرف علی کی بات چیت کا ...