بھٹکل : بارش کی تباہی کا سروے کرنے کے لئے 11 ٹیمیں تشکیل

Source: S.O. News Service | Published on 6th August 2022, 8:23 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل،6؍اگست (ایس او نیوز) ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجو موگویرا نے بتایا کہ بھٹکل تعلقہ میں زبردست برسات کی وجہ سے ہوئی تباہ کاریوں کا جائزہ لینے کے لئے انتظامیہ کی طرف سے 11 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں  جو متاثرین کے گھر گھر جا کر نقصانات کا جائزہ لے رہی ہیں۔ 
    
بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ممتا دیوی کے دفتر میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سروے ٹیم برسات اور سیلاب سے گھروں کو پہنچنے والے نقصان کے علاوہ گھروں کے اندر پانی گھسنے سے غذائی اجناس ، کپڑوں اور دیگر ساز وسامان، مویشی ، فصل ، دکانوں کے مال و اسباب وغیرہ کو پہنچے نقصان کا جائزہ لینے کا کام کر رہی ہے ۔ گھروں میں پانی گھسنے کی بات ثابت کرنے کے لئے کسی قسم کے دستاویزی ثبوت پیش کرنا ضروری نہیں ہے ۔ ایک علاقے میں پانی گھسنے کا مطلب یہ ہے کہ وہاں پر موجود تمام گھروں میں پانی گھس چکا ہے۔ 
    
انہوں نے کہا کہ گھروں میں پانی گھسنے سے ہونے والے نقصان کے لئے فی الوقت 10ہزار روپے معاوضہ دینے کی گنجائش ہے ۔ اس کے علاوہ گھروں ساز و سامان اور مشینوں  کے نقصان کا معاوضہ دینے کے لئے وزیر اعلیٰ کی جانب سے خصوصی حکم آنا ضروری ہے۔ 
    
ماہی گیر کشتیوں ، جال وغیرہ کا مکمل نقصان ہونے پر فی الحال 9600 روپے اور جزوی نقصان ہونے پر 4600 روپے معاوضہ دینے کی گنجائش ہے ۔ ماہی گیر جال کا نقصان ہونے پر 2600 روپے معاوضہ دینے کی اجازت ہے ۔ محکمہ ماہی گیری کی جانب سے بہت زیادہ ادا کرنے کی گنجائش موجود ہے ۔ وزیر اعلیٰ کی جانب سے بھاری معاوضہ دینے کا اعلان ہونے کے بعد ادائیگی شروع ہوجائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں زوردار بارش سے ہوئے نقصانات پر ایم ایل اے نے کہا؛ 4483 بارش سے متاثرہ مکانات میں سے اب تک 3890 گھروالوں میں معاوضہ تقسیم

   2 اگست کو بھٹکل میں  ہوئی زوردار بارش کے نتیجے  میں جو  نقصانات  ہوئے تھے، اس پر بھٹکل  ایم ایل اے  سنیل نائک نے کہا کہ مشکل کی  اس گھڑی میں پہلے دن سے ہی  وہ عوام کے ساتھ کھڑے ہیں ۔ بارش سے جملہ  4483    مکانات میں پانی گھس جانے سے گھروں کے اندر موجود کافی چیزوں کو نقصان پہنچا ...

بھٹکل تعلقہ میں برسات کی تباہ کاریاں - اہم دستاویزات سیلاب کی نذر ہونے سے متاثرین کو ہوسکتی ہیں دشواریاں

بھٹکل تعلقہ کے مختلف علاقوں میں پچھلے دنوں شدید بارش کے بعد جو سیلابی کیفیت پیدا ہوئی تھی اس دوران جن گھروں میں پانی گھس آیا تھا ان میں سے کئی لوگوں کا کہنا ہے کہ ان کے ساز و سامان کے علاوہ کئی اہم دستاویزات بھی  پانی میں بھیگ کر خراب ہوگئے ہیں جس کی وجہ سے انہیں بڑی دشواریوں کا ...

بھٹکل : مٹھلّی گرام میں لال پتھروں کی کھدائی والے علاقے میں بسنے والوں پر منڈلا رہا ہے خطرہ

گزشتہ دنوں ہوئی بھاری برسات کے بعد مٹھلّی گرام پنچایت علاقے میں پہاڑی کھسکنے سے چار افراد کی موت واقع ہونے کا جو واقعہ پیش آیا تھا اس کے بعد وہاں پر بسنے والے لوگ خوف اور خدشات میں گھر گئے ہیں ۔ 

بھٹکل میں زوردار بارش کا سلسلہ جاری؛ منڈلّی اسکول کی دیوار بیٹھ گئی - اسکول میں چھٹی رہنے سے ٹل گئی ٹریجڈی؛ اپسر گونڈا میں پہاڑی میں شگاف

سنیچر کے دن پوری رات برسنے والی بھاری بارش کی وجہ سے     منڈلّی میں واقع سرکاری اسکول نمبر 1 کی دیوار گر گئی اور چھت کا ایک حصہ  بھی منہدم ہوگیا ۔   واردات اتوار کو پیش آئی۔ یہ تو اچھا ہوا کہ اتوار ہونے کی بنا پر اسکول میں چھٹی تھی، اس لئے  ایک بڑا حادثہ ٹل گیا۔

بھٹکل تینگنگونڈی کے ماہی گیروں کو ایک ایک لاکھ روپیہ معاوضہ فراہم کرنے کا مطالبہ لے کر ویلفئیر پارٹی نے تحصیلدار کو دیا میمورنڈم

گذشتہ ہفتہ بھٹکل میں ہوئی  زبردست بارش میں جہاں کئی  مکانوں ، دکانوں  اور کھیتوں وغیرہ کو نقصان پہنچا وہیں ماہی گیروں کی کشتیاں اور مچھلیوں کا شکار کرنے والی بوٹوں کو بھی نقصان پہنچا ہے، کئی ماہی گیروں کی کشتیاں سمندر میں بہہ کر لاپتہ بھی ہوئی ہیں  تو بعض  کی کشتیاں سمندر میں ...