محکمہ تعلیم مرکز کی امداد کا انتظار نہ کرے: وزیر اعلیٰ کمار سوامی۔ سرکاری اسکولوں کے طلبہ کو دو جوڑے یونیفارم دینے کی ہدایت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 10:28 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو11؍جون (ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کہا ہے کہ محکمہ پرائمری اینڈ، سکینڈری ایجوکیشن کے کاموں کے لئے مرکزی امداد کا انتظار نہیں کریں گے- محکمہ تعلیم کے افسروں نے گزشتہ سال سرکاری اسکولوں کے طلبہ کو ایک جوڑا یونیفارم دیا تھا-امسال وزیر اعلیٰ نے محکمہ سے کہا ہے کہ دو جوڑے یونیفارم تقسیم کریں اور اس کے لئے مرکزی امداد کا انتظار نہ کریں - محکمہ تعلیم کے افسروں کو انہوں نے ہدایت کی ہے کہ اس سلسلے میں جلد سے جلد مناسب اقدامات کریں - محکمہ تعلیم کے افسر نے بتایا کہ گزشتہ سال سرواشکشا ابھیان (ایس ایس اے)محکمہ کو مرکزی حکومت کی طرف سے جاری کردہ مالی امداد کم پڑ گئی تھی جس کی وجہ سے گزشتہ سال صرف ایک جوڑا یونیفارم دینا پڑا- محکمہ کے افسران فنڈ کی کمی کا بہانہ بتا کر ایک ہی یونیفارم کا جوڑا دے رہے ہیں افسروں کے مطابق اس سلسلے میں ٹنڈر جاری کرنا ہے چونکہ محکمہ کے پاس فنڈ کی کمی ہے اس لئے صرف ایک ہی یونیفارم دیا جارہا ہے- ریاست بھر کے سرکاری اسکولوں میں پڑھ رہے طلبہ کے والدین کی اسوسی ایشن نے محکمہ تعلیم کے پرنسپل سکریٹری سے شکایت کی ہے- ایک سرکاری بیان میں وزیر اعلیٰ نے کہا ہے کہ محکمہ تعلیم کے افسروں کو ہدایت جاری کردی گئی ہے کہ وہ مرکزی امداد کا انتظار نہ کرتے ہوئے دو جوڑے یونیفارم دینے کا انتظام کریں تاہم محکمہ یونیفارم کا دوسرا جوڑا سال کے درمیان میں دے سکتا ہے- کیونکہ یونیفارم کے لئے دوبارہ ٹنڈر جاری کرناہے-

ایک نظر اس پر بھی

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی مدد کے لئے اے پی سی آر کی خدمات دستیاب

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی رہنمائی اور اُن کی  مدد کے لئے  اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس  (اے پی سی آر)  کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہے۔جن  لوگوں نے  اپنی چھوٹی چھوٹی سرمایہ  کاری  اس کمپنی میں کی تھی اور اب وہ کنگال ہوچکے ہیں، اے پی ...

جندال اسٹیل کمپنی معاملہ سے متعلق حکومت نے سب کمیٹی تشکیل دی، کے پی سی سی سے استعفیٰ دینے کی خبرو ں میں کوئی سچائی نہیں: دنیش گنڈو راؤ

پردیش کانگریس کمیٹی(کے پی سی سی) صدر دنیش گنڈو راؤ نے کہا کہ جندال کمپنی کے لئے زمین فروخت کرنے کے معاملہ میں ریاستی حکومت نے سب کمیٹی تشکیل دی ہے۔

آئی ایم اے معاملہ میں نرم رویہ اختیار کرنے کاسوال پیدا نہیں ہوتا: ضمیر احمد خان

آئی مانیٹری اڈوائزری (آئی ایم اے) نامی پونزی کمپنی کے دھوکہ دہی معاملہ میں نرم رویہ اختیار کئے جانے کا سوال پیدا نہیں ہوتا۔ خصوصی تحقیقاتی ٹیم (ایس آئی ٹی) کی جانب سے تحقیقات جاری ہیں۔اس پس منظر میں بی جے پی کی جانب سے عائد کئے جارہے الزامات بکواس ہیں۔