محکمہ تعلیم مرکز کی امداد کا انتظار نہ کرے: وزیر اعلیٰ کمار سوامی۔ سرکاری اسکولوں کے طلبہ کو دو جوڑے یونیفارم دینے کی ہدایت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 10:28 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو11؍جون (ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کہا ہے کہ محکمہ پرائمری اینڈ، سکینڈری ایجوکیشن کے کاموں کے لئے مرکزی امداد کا انتظار نہیں کریں گے- محکمہ تعلیم کے افسروں نے گزشتہ سال سرکاری اسکولوں کے طلبہ کو ایک جوڑا یونیفارم دیا تھا-امسال وزیر اعلیٰ نے محکمہ سے کہا ہے کہ دو جوڑے یونیفارم تقسیم کریں اور اس کے لئے مرکزی امداد کا انتظار نہ کریں - محکمہ تعلیم کے افسروں کو انہوں نے ہدایت کی ہے کہ اس سلسلے میں جلد سے جلد مناسب اقدامات کریں - محکمہ تعلیم کے افسر نے بتایا کہ گزشتہ سال سرواشکشا ابھیان (ایس ایس اے)محکمہ کو مرکزی حکومت کی طرف سے جاری کردہ مالی امداد کم پڑ گئی تھی جس کی وجہ سے گزشتہ سال صرف ایک جوڑا یونیفارم دینا پڑا- محکمہ کے افسران فنڈ کی کمی کا بہانہ بتا کر ایک ہی یونیفارم کا جوڑا دے رہے ہیں افسروں کے مطابق اس سلسلے میں ٹنڈر جاری کرنا ہے چونکہ محکمہ کے پاس فنڈ کی کمی ہے اس لئے صرف ایک ہی یونیفارم دیا جارہا ہے- ریاست بھر کے سرکاری اسکولوں میں پڑھ رہے طلبہ کے والدین کی اسوسی ایشن نے محکمہ تعلیم کے پرنسپل سکریٹری سے شکایت کی ہے- ایک سرکاری بیان میں وزیر اعلیٰ نے کہا ہے کہ محکمہ تعلیم کے افسروں کو ہدایت جاری کردی گئی ہے کہ وہ مرکزی امداد کا انتظار نہ کرتے ہوئے دو جوڑے یونیفارم دینے کا انتظام کریں تاہم محکمہ یونیفارم کا دوسرا جوڑا سال کے درمیان میں دے سکتا ہے- کیونکہ یونیفارم کے لئے دوبارہ ٹنڈر جاری کرناہے-

ایک نظر اس پر بھی

ایڈی یورپا کو پارٹی ہائی کمان کی تنبیہ۔ وزارتی قلمدان تقسیم کرو یا پھر اسمبلی تحلیل کرو

عتبر ذرائع سے ملنے والی خبر کے مطابق بی جے پی ہائی کمان نے وزیراعلیٰ کرناٹکا ایڈی یورپا کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارتی قملدانوں سے متعلق الجھن اور وزارت سے محروم اراکین اسمبلی کے خلفشار کو جلد سے جلد دور کرلیں ورنہ پھر اسمبلی کو تحلیل کرتے ہوئے از سرِ نو انتخابات کا سامنا ...

اے پی سی آر نے داخل کی انسداددہشت گردی قانون میں ترمیم کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل

مرکزی حکومت نے انسداد دہشت گردی قانون یو اے پی اے میں جو حالیہ ترمیم کی ہے اور کسی بھی فرد کو محض شبہات کی بنیاد پر دہشت گرد قرار دینے کے لئے تحقیقاتی ایجنسیوں کو جو کھلی چھوٹ دی ہے اسے چیلنج کرتے ہوئے ایسوسی ایشن فار  پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) نے سپریم کورٹ میں اپیل ...

ریاستی حکومت نے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے حوالے کیا

ریاست کی سابقہ کانگریس جے ڈی ایس حکومت کے دور میں کی گئی مبینہ ٹیلی فون ٹیپنگ کی سی بی آئی جانچ کے ا حکامات صادر کرنے کے دودن بعد ہی آج ریاستی حکومت نے کروڑوں روپیوں کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔