بنگال میں ہنگامہ، مشرقی مدناپور میں بی جے پی کارکنان اور پولیس میں تصادم

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th July 2019, 11:37 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کولکاتہ، 8 جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) مغربی بنگال میں ایک بار پھر پولیس اور بھارتیہ جنتا پارٹی کے حامیوں میں تصادم کی خبر ہے۔مشرقی مدناپور کے پاٹش پور میں بی جے پی کارکنوں کو مبینہ طور پر ترنمول کانگریس کے کارکنوں کی طرف سے روکنے پر یہ ہنگامہ ہوا۔بی جے پی کارکنان آئندہ9 اگست کو ’سنڈیکیٹ راج‘ کے خلاف ہونے والے مظاہرے کی تشہیر کر رہے تھے۔الزام ہے کہ ٹی ایم سی کارکنوں نے بی جے پی کی تشہیری گاڑی کو روک دیا۔اس کے بعد بی جے پی کارکن، ٹی ایم سی دفتر کے باہر مظاہرہ کرنے لگے اور جام لگا دیا، موقع پر پہنچی پولیس نے جب جام ہٹوانے کی کوشش کی تو بی جے پی حامی بھڑک گئے،اس کے بعد جھڑپ ہوئی،دو پولیس اہلکار اور 6 بی جے پی کارکنان زخمی بتائے جا رہے ہیں۔ہنگامہ تب اور بڑھ گیا جب پولیس انتظامیہ نے احتجاج کرتے بی جے پی کارکنوں کو روکنے کی کوشش کی۔بی جے پی کارکنان ترنمول کانگریس پارٹی کے دفتر کے سامنے مظاہرہ کر رہے تھے۔انہوں نے راستے کو بھی جام کر دیا تھا،بعد میں پولیس نے راستہ کھلوایا، اتنے میں بی جے پی کارکن ان سے جھڑپ گئے۔پولیس کی چار گاڑیوں میں توڑ پھوڑ ہوئی۔حاصل معلومات کے مطابق اس جھڑپ میں دو پولیس اہلکار اور6 بی جے پی کارکنان زخمی ہیں۔مغربی مدناپور ضلع میں گزشتہ پیر کی صبح ترنمول کانگریس کے ایک لیڈر کے گھر کے قریب ان کی لاش ملی تھی۔پولیس نے یہ معلومات دیتے ہوئے کہا کہ نارائن گڑھ میں بلاک کے ترنمول لیڈر گنیش بھیا کی لاش سڑک کنارے جھاڑیوں سے برآمد کی گئی،ان کے جسم پر چوٹ کے نشان تھے۔ترنمول کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ قتل کے پیچھے ’بی جے پی کی حمایت یافتہ غیر سماجی عناصر کا‘ ہاتھ ہے۔ضلع کے ایک ترنمول لیڈر نے کہاکہ بی جے پی بنگال میں تشدد اور خون کی سیاست قائم کرنا چاہتی ہے،وہ علاقوں پر کنٹرول حاصل کرنے کے لئے قتل، لوٹ، بربریت اور آتش زنی کا سہارا لے رہے ہیں۔ترنمول کانگریس اب بھی ہر ممکن طریقے سے جمہوریت کی حفاظت کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ یہ واقعہ ہگلی ضلع کے واڈر ریلوے اسٹیشن میں ایک ترنمول لیڈر کو دن دہاڑے گولی مار کر قتل کرنے کے دو دن بعد ہواتھا۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں و کشمیر کے سابق سی ایم فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت حراست میں لیا گیا

جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کی حراست لیا گیا ہے۔ان کے حراست کو لے کر سپریم کورٹ میں داخل عرضی پر سماعت کے دوران عدالت نے مرکزی حکومت کو ایک ہفتے کا نوٹس دے کر جواب دینے کے لئے کہا گیا ہے۔

بابری مسجد ٹائٹل سوٹ؛ مسلم فریقوں کے وکیل ڈاکٹر راجیو دھون نے کیا بحث کاآغاز؛ کہا، چار سو سال پہلے بابر نے بنوائی تھی مسجد؛ تب سے ہورہی ہے لگاتار نماز

 آج چیف جسٹس کے کورٹ میں سب سے پہلے آر ایس ایس کے لیڈر گووند آچاریہ کی وہ درخواست پیش ہوئی جس میں انہوں نے عدالت سے کہا کہ اس مقدمہ کی شنوائی کو ٹیلی کاسٹ کیا جائے تاکہ عوام اسے براہ راست دیکھ سکیں۔ اس پر چیف جسٹس نے کورٹ کی رجسٹری سے کہا کہ وہ بتائیں کہ اس سسٹم کو جاری کرنے کے لئے ...

ملکی معیشت  کے برے اثرات سے ہر شعبہ کنگال؛ بھٹکل میں بھی سونا اور رئیل اسٹیٹ زوال پذیر؛ کیا کہتے ہیں جانکار ؟

ملک میں نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ملکی معیشت پر سنگین اثرات مرتب ہونےکے متعلق ماہرین نے بہت پہلے سے چوکنا کردیا  تھا۔ اب اس کے نتائج بھی  ظاہر ہونے لگے ہیں۔ رواں سال کے دوچار مہینوں سے جو خبریں آرہی ہیں، اُس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ہمارے  ملک میں روزگاروں کا بےروز ...

 ای۔ ٹکٹ میں جعلسازی کے ذریعے منگلورو ایئر پورٹ پر غیر مجاز شخص کا داخلہ۔ ملزم گرفتار

بینہ طور پر ای۔ ٹکٹ میں جعلسازی کرتے ہوئے اپنا نام داخل کرکے منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے اندر ایک غیر مجاز شخص کے داخل ہونے کا معاملہ سامنے آیا ہے جس کے بعد سنٹرل انڈسٹریل سیکیوریٹی فورس کے افسران نے مذکورہ شخص کو حراست لے کر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔