کاروار میں  میڈیکل سائنس اسٹاف کی طرف سے میڈیکل طالبہ حملہ کی مذمت میں احتجاجی ریلی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 7th November 2019, 7:01 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:07؍نومبر(ایس اؤ نیوز)بنگلورو کے منٹو آنکھ اسپتال میں میڈیکل طالبہ پر کرناٹکا رکشھنا ویدیکے کے کارکنوں کی طرف سے حملہ کوشش کے خلاف کاروار میڈیکل سائنس مرکز اساتذہ اسوسی ایشن نے کڑی مذمت کی ہے۔

حملہ کی مذمت میں جمعرات کو شہر میں احتجاجی ریلی منعقد کرتےہوئے ڈپٹی کمشنر کو میمورنڈم دیا۔ دراصل یکم نومبر پر اپنی ڈیوٹی انجام دینےو الی میڈیکل طالبہ کا کرناٹکا رکشھنا ویدیکے کے کارکنان نے گھیراؤ کرتےہوئے دھمکیاں دیں۔ ڈاکٹروں اور پر حملہ اور حملوں کی کوشش والے واقعات میں اضافہ ہورہاہے، جس کے نتیجے میں ڈیوٹی انجام دینے میں خوف محسوس ہوتاہے، خدمات پر مامور ڈاکٹروں کو ذہنی اور جسمانی طورپر ہراساں کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا احتجاجیوں نے مطالبہ کیا۔ اس موقع پر میڈیکل کالج اسٹاف ڈاکٹر وی این وینکٹیش ، ڈاکٹر راکیش  ایچ این ، ڈاکٹر پرمود کمار اور طلبا موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں کوویڈ کے بڑھتے معاملات پر بھٹکل کے عوام میں تشویش؛ پڑوسی علاقہ سے بھٹکل داخل ہونے والوں پر سخت نگرانی رکھنے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ

بھٹکل کورونا فری ہونے کے بعد اب پڑوسی ضلع اُڈپی میں روزانہ پچاس اور سو کورونا معاملات کے ساتھ  پوری ریاست میں اُڈپی میں سب سے  زیادہ کورونا کے معاملات سامنے آنے پر بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عوام اس بات کو لے کر پریشان ہیں کہ اُڈپی سے کوئی بھی شخص آسانی کے ساتھ ...

نیسرگا‘طوفان کے دوران طوفانی ہوا اور بارش سے ہیسکام کو کاروار میں ایک ہی دن 8لاکھ اور بھٹکل میں 1 لاکھ سے زائد کا نقصان

مہاراشٹرامیں تباہی مچانے والا ’نیسرگا‘ طوفان ویسے تو کرناٹکا کے ساحلی علاقے کو چھوتا ہوانکل گیا، مگر جاتے جاتے بھٹکل سمیت  کاروار شہر اوراطراف میں اپنے اثرات ضرور چھوڑ گیا۔

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

کرناٹکا میں آج پھر 257 کی رپورٹ کورونا پوزیٹو؛ اُڈپی میں پھر ایک بار سب سے زیادہ 92 معاملات؛ تقریباً سبھی لوگ مہاراشٹرا سے لوٹے تھے

سرکاری ہیلتھ بلٹین میں پھر ایک بار  کرناٹک میں آج 257 لوگوں میں کورونا  کی تصدیق ہوئی ہے جس میں سب سے زیادہ معاملات پھر ایک بار ساحلی کرناٹک کے ضلع اُڈپی سے سامنے آئے ہیں۔ بلٹین کے مطابق آج  اُڈپی سے 92 معاملات سامنے آئے ہیں اور یہ تمام لوگ مہاراشٹرا سے لوٹ کر اُڈپی پہنچے تھے۔