کنٹنمنٹ زون علاقوں کو چھوڑ کر کرناٹک کے دیگر علاقوں میں کل منگل سے لاک ڈاون میں چھوٹ؛ بس، آٹو اور دکانوں کو کھولنے کی اجازت

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 18th May 2020, 5:40 PM | ریاستی خبریں |

بنگلور 18/مئی (ایس او نیوز) کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈی یورپا نے پیر کو  ریاست بھر میں  کورونا لاک ڈاون میں چھوٹ دینے کا اعلان کیا ہے، لیکن یہ بھی بتایا ہے کہ  جن علاقوں کو کورونا کے  کنٹنمنٹ زون میں رکھا گیا ہے وہاں کسی طرح کی کوئی چھوٹ نہیں ہوگی اور وہاں لاک ڈاون میں سختی کے ساتھ عمل کیا جائے گا۔

چونکہ بھٹکل   کنٹنمنٹ زون میں ہے، اس لحاظ سے بھٹکل میں لاک ڈاون پر سختی قائم رہے گی اور بھٹکل میں کسی طرح کی کوئی چھوٹ نہیں ہوگی۔

وزیراعلیٰ یڈی یورپا کے مطابق کل منگل سے   ریاست کے دیگر علاقوں میں   بس سروس، آٹو، ٹیکسی سروس اپنی خدمات پر واپس بحال ہوں گی۔ یڈی یورپا نے بتایا کہ  MTC, KSRTC, NEKRTC اور  NWKRTC بس سروس بھی کل منگل سے بحال کی جارہی ہے، مگر یہ بس سروس کنٹنمنٹ زون  پر نہیں دوڑیں گی، انہوں نے یہ بھی بتایا کہ ہر بس پر 30 سے زائد مسافر سوار  نہیں ہوسکیں گے اور کسی بھی بس کا کرایہ معمول کے چارجس سے زیادہ نہیں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ تیس مسافروں کے ساتھ بس سروس شروع کرنے پر جو بھی نقصان ہوگا اُسے ریاستی حکومت برداشت کرے گی۔ مزید بتایا کہ آٹو رکشہ   اور ٹیکسی پر ایک ڈرائیور اور دو مسافروں کو بیٹھنے کی اجازت ہوگی، جبکہ میکسی کیب میں ایک ڈرائیوراور تین مسافروں کو سوار ہونے کی اجازت ہوگی۔

صبح 7 سے 9 بجے تک اور شام کو 5سے شام 7 تک تمام پارک کھلے رہیں گے۔ اسی طرح  دکانیں اور سلون بھی کل سے کھلیں گی مگر شاپنگ مالس اور سینما تھیٹر ہنوز بند ہی رہیں گے۔

یڈی یورپا نے اس بات کابھی اعلان کیا ہے کہ  اتوار کو لاک ڈاون میں  کسی بھی طرح کی کوئی راحت  نہیں رہے گی اور ہر اتوار کو لاک ڈاون رہے گا، اتوار کو عوامی چہل پہل پر بھی مکمل طور پر پابندی  رہے گی۔ اسی طرح ہرروز شام سات بجے سے صبح سات بجے تک پہلے جیسا لاک ڈاون جاری رہے گا۔ جس کے چلتے پبلک ٹرانسپورٹ سروس بھی بند رہے گی۔

وزیراعلیٰ نے بتایا کہ ریاست میں کل سے ٹرین سروس بھی بحال کی جارہی ہے مگر یہ ٹرین  31مئی تک صرف ریاست کے اندر ہی  چلے گی، ریاست کے باہر ٹرینوں کو جانے یا دیگر ریاست سے کرناٹک کے اندر ٹرین کو داخل ہونے کی اجازت نہیں ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ تمام شہریوں کے لئے ضروری ہوگا کہ وہ ماسک پہن کر گھروں سے باہر نکلے ، بغیر ماسک باہر نکلنے پر جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

اپنے خطاب میں بھٹکل کا حوالہ دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ  سرکار کنٹینمنٹ زون پر اپنی پوری توجہ مرکوز کررہی ہےاور کورونا وباء کو قابو میں کرنے ہرممکن اقدامات کررہی ہے، البتہ حالات کے پیش نظر کنٹیمنٹ زون والے علاقوں میں بھی آہستہ آہستہ راحت دی  جائے گی۔ انہوں نے بھٹکل کی مثال پیش کرتے ہوئے کہا کہ پورے ضلع اُترکنڑا میں بھٹکل کنٹیمنٹ زون میں ہے جہاں سخت نگرانی رکھی جارہی ہے، جبکہ ضلع کے دیگر تعلقہ جات کنٹمنٹ زون  سے باہر ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کوویڈ۔ 19 : کمس اسپتال ہبلی میں ریاست کا پہلا پلازمہ تھیراپی تجربہ کامیاب ؛ بنگلور میں تجربہ ناکام ہونے کے بعد ہبلی ڈاکٹروں کو ملی زبردست کامیابی

ورونا وائرس وبا کی وجہ سے اس وقت پوری دنیا جوجھ رہی ہے۔ اس کے معاملات میں دن بہ دن اضافہ ہی ہوتا جا رہا ہے۔ ہر کوئی چاہتے  یا  نا چاہتے ہوئے بھی اس خطرے کے ساتھ زندگی بسر کرنے پر مجبور ہے۔ کیونکہ پوری دنیا بھر کے ممالک بھی اس کا ٹیکہ دریافت کرنے سے اب تک قاصر رہے ہیں۔

کرناٹک میں کورونا کے 24 گھنٹوں میں 267 نئے معاملات ، داونگیرے میں مریض کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 53

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران منگل کی شام 5 بجے تک ریاست میں 267 نئے کو رونا مریض پائے جانے سے ریاست میں کووڈ۔19 سے متاثر مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2494 تک پہنچ گئی اور داونگیرے میں مزید ایک مریض کے ریاست میں فوت ہونے سے ریاست میں اس وبائ سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53 ہوگئی۔

اُڈپی ضلع میں کورونا کے بڑھتے ہوئے معاملات سے نمٹنے کے لئے کنداپور اور بیندور میں کووِڈ اسپتالوں کا قیام۔ ڈپٹی کمشنر جگدیش کا اعلان

ضلع اُڈپی کے ڈپٹی کمشنر جی جگدیش نے بتایا کہ ضلع میں کووِڈ 19سے متاثرین کی تعداد میں روزبرو ز اضافہ کو دیکھتے ہوئے کنداپور اور بیندو ر میں 400 بستروں کی سہولت کے ساتھ کووِ ڈ اسپتال قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔