منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

Source: S.O. News Service | Published on 19th February 2020, 12:12 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

منگلورو19/فروری (ایس او نیوز) منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

خیال رہے کہ تشدد برپا کرنے کے الزام میں جن لوگوں کو پولیس نے گرفتار کیا تھاان میں سے 21ملزمین کی عدالت نے ضمانت کی عرضی پر 17 فروری کوبحث کرتے ہوئے ملزمین کے وکیلوں نے یہ دلیل عدالت کے سامنے رکھی تھی کہ ”پولیس نے جھوٹے الزامات لگاکر ان لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ ہمارے مؤکلوں کے تشدد میں شامل ہونے کا کوئی ثبوت پولیس نے پیش نہیں کیا ہے۔جبکہ پولیس نے فائرنگ کرتے ہوئے عوام پر ظلم ڈھایا ہے، اور اس کے خلاف کوئی ایف آئی آ ر داخل نہیں کی گئی ہے۔“اس نکتے کو عدالتی بینچ نے سنجیدگی سے لیتے ہوئے حکومت سے پوچھا تھا کہ ایف آئی آر داخل کیے جانے کے بارے میں اس کے پاس کیا تفصیلات ہیں۔

 کل جب اس معاملے کی سماعت ہورہی تھی تو سرکاری وکیل نے کہا کہ اس معاملے سے متعلق تمام تفصیلات ڈیویزن بینچ کے سامنے 24فروری کو پیش کیے جاسکیں گے اس لئے تب تک کے لئے مہلت دی جائے۔ لیکن کورٹ کے جسٹس جان مائیکل ڈی کونہانے للیتا کماری معاملے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا قابل دست اندازی(cognizible) جرم میں ایف آئی آر درج کیا جانا ضروری ہے۔اس لئے فائرنگ میں ہلاک ہونے والے افراد کے وارثین یارشتے داروں کی طرف سے جو شکایت درج کروائی گئی ہے اس پر پولیس کو ایف آئی آر درج کرنا چاہیے۔

عدالت نے ملزمین کی ضمانت کی عرضی پر سماعت کے دوران یہ تبصرہ بھی کیا کہ پولیس نے جو تصاویر اور ویڈیو فوٹیج بطور ثبوت پیش کیے ہیں ان میں سے کہیں بھی ملزمین کے حاضر ہونے کا ثبوت نہیں ملتا ہے۔ اس کے علاوہ ان تصاویر اور فوٹیج میں مظاہرین کے پاس کوئی ہلاکت خیز ہتھیار ہونے کی بات بھی ثابت نہیں ہورہی ہے سوائے ایک شخص کے جس کے ہاتھ میں بوتل دکھائی دے رہی ہے۔ اس کے علاوہ کسی بھی تصویر میں پولیس عملہ یا پولیس اسٹیشن دکھائی نہیں دے رہا ہے جبکہ درخواست گزاروں (ملزمین) کی طرف سے پیش کردہ تصویروں میں خود پولیس کی طرف سے عوام پر پتھراؤ کرنے کی شہادت مل رہی ہے۔

عدالت نے ملزمین کودیگر شرائط کے ساتھ ایک لاکھ روپے فی کس اور اتنی ہی شخصی ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا۔ ضمانت منظور کرتے ہوئے عدالت نے واضح تبصرہ کیا کہ ”جو ریکارڈ یہاں موجود ہے اس سے صاف ہوجاتا ہے کہ جان بوجھ کر جھوٹے ثبوت پیش کرکے درخواست گزاروں کی شخصی آزادی چھیننے کی کوشش کی گئی ہے۔درخواست گزاروں کا کوئی سابقہ مجرمانہ ریکارڈ بھی نہیں ہے،اور پیش آمدہ جرم کے ساتھ ان لوگوں کابراہ راست کوئی تعلق بھی نظر نہیں آرہا ہے۔“عدالت نے یہ بھی کہا کہ چونکہ پولیس کے خلاف بھی شکایات درج کی گئی تھیں اس لئے پولیس کی طرف سے خودساختہ مقدمات اور غلط طور پر لوگوں کو جرائم میں ملوث دکھانے کے امکانات موجود ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں پیش آیا عجیب و غریب معاملہ؛ لڑکا روڈ کنارے پیٹ پکڑ کر تڑپتا رہا؛ لوگ کورونا مریض سمجھ کر بھاگنے لگے؛ پھر کیا ہوا ؟

کورونا وائرس کو لے کر دنیا بھر میں جس طرح کا خوف اور دہشت لوگوں کے ذہنوں میں پائی جارہی ہے، بھٹکل بھی اس سے مختلف نہیں ہے، لوگ کسی اور وجہ سے بھی درد سے کراہ سکتے ہیں اور نیچے گر کر درد سے تڑپ سکتے ہیں لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ وہ کوروناوائرس سے متاثر ہوکر ہی کراہ رہا ہو اور ...

بھٹکل میں غیر ممالک سے آئے ہوئے بھٹکل کے تمام شہریوں کا کورنٹائن کرنے ضلعی انتظامیہ کا فیصلہ؛ ضلع انچارج وزیر نے کی ضلعی انتظامیہ کےساتھ میٹنگ

بھٹکل میں کورونا وائرس معاملات میں دن بدن اضافہ کو دیکھتے ہوئے  ضلعی انتظامیہ نے فیصلہ کیا ہے کہ اس ماہ کے 15مارچ  کے بعد جو بھی لوگ غیر ممالک سے واپس بھٹکل پہنچے ہیں ، اُن سبھوں کو دوسری جگہ منتقل کرکے ان کو الگ تھلگ  ( کورنٹائن) میں رکھا جائے۔اس بات کی اطلاع اُترکنڑا کےڈپٹی ...

کورونا وائرس سے حالات مزید ابتر؛ بھٹکل میں مزید ایک شخص کی رپورٹ پوزیٹیو آنے کی خبر، چھ متاثرہ مریض کاروار۔نیوی اسپتال منتقل

ملک بھر میں جہاں کورونا وائرس کو لے کر خوف وہراس بڑھتا جارہا ہے اور ہر روز کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تصدیق کی جارہی ہے۔ ایسے میں کرناٹک کے شہر بھٹکل کی حالت مزید دگرگو ہوتی نظر آرہی ہے۔ کل شام کو ایک ساتھ تین لوگوں کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو آنے کی خبر ملی تھی جس کی  آج ...

کرناٹکا میں کورونا کے مزید دس معاملات؛ بھٹکل کے پھر تین لوگوں کی رپورٹ آئی پوزیٹیو؛ بھٹکل میں مکمل خاموشی؛ آئی این ایف نے اسپتال کے لئے فراہم کئے کٹس

  کرناٹکا میں کورونا  پوزیٹیو کے آج دس معاملے سامنے آئے ہیں جس میں ضلع اُترکنڑا کے تین لوگ بھی شامل ہیں۔ کرناٹکا میں دس معاملے سامنے آنے کے بعد ریاست بھرمیں کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 74ہوگئی ہے۔

بھٹکل کورونا وائرس معاملہ؛ انتظامیہ نے جاری کیا وبائی مرض اور ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لئے سرکاری فنڈ؛ فاقہ کشی پر مجبور افراد کے لئے بھی  کھانے کا انتظام

ضلع شمالی کینرا کے ڈپٹی کمشنر نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قدرتی آفت سے پیدا شدہ صورتحال سے نپٹنے کے لئے ضلع انتظامیہ نے سرکاری فنڈ جاری کردیا ہے۔

عوام کو گھروں سے باہر نکلنے سے روکنے کیلئے ریاستی حکومت کا سخت اقدام؛ کرناٹک فوج کے حوالے کیا جاسکتا ہے؟

کرناٹک میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے افراد کی تعداد میں روز افزوں اضافے اور حکومت کی طرف سے نافذ لاک ڈاؤن کی پابندی کو توڑے جانے کے واقعات کو دیکھتے ہوئے ریاستی حکومت لاک ڈاؤن کو مؤثر طور پر نافذ کرنے کیلئے فوج کو اتار نے کی تیاری کررہی ہے -

کورونا وائرس سے حالات مزید ابتر؛ بھٹکل میں مزید ایک شخص کی رپورٹ پوزیٹیو آنے کی خبر، چھ متاثرہ مریض کاروار۔نیوی اسپتال منتقل

ملک بھر میں جہاں کورونا وائرس کو لے کر خوف وہراس بڑھتا جارہا ہے اور ہر روز کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تصدیق کی جارہی ہے۔ ایسے میں کرناٹک کے شہر بھٹکل کی حالت مزید دگرگو ہوتی نظر آرہی ہے۔ کل شام کو ایک ساتھ تین لوگوں کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو آنے کی خبر ملی تھی جس کی  آج ...

کرناٹکا میں کورونا کے مزید دس معاملات؛ بھٹکل کے پھر تین لوگوں کی رپورٹ آئی پوزیٹیو؛ بھٹکل میں مکمل خاموشی؛ آئی این ایف نے اسپتال کے لئے فراہم کئے کٹس

  کرناٹکا میں کورونا  پوزیٹیو کے آج دس معاملے سامنے آئے ہیں جس میں ضلع اُترکنڑا کے تین لوگ بھی شامل ہیں۔ کرناٹکا میں دس معاملے سامنے آنے کے بعد ریاست بھرمیں کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 74ہوگئی ہے۔

بھٹکل کورونا وائرس معاملہ؛ انتظامیہ نے جاری کیا وبائی مرض اور ہنگامی حالات سے نمٹنے کے لئے سرکاری فنڈ؛ فاقہ کشی پر مجبور افراد کے لئے بھی  کھانے کا انتظام

ضلع شمالی کینرا کے ڈپٹی کمشنر نے ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس قدرتی آفت سے پیدا شدہ صورتحال سے نپٹنے کے لئے ضلع انتظامیہ نے سرکاری فنڈ جاری کردیا ہے۔

بھٹکل ہیلتھ ایمرجنسی:گھروں تک پہنچائی جائیں گی ضروری اشیاء اور دوائیاں؛ گھروں سے باہر نکلنا بند کریں، اب گاڑیاں ضبط کی جائیں گی

ضلع انتظامیہ کی طرف سے بھٹکل میں ’ہیلتھ ایمرجنسی‘ لاگو کیے جانے کے بعد تعلقہ انتظامیہ نے عوام کو سہولیات فراہم کرنے کے لئے مختلف نوڈل افسران کو نامز د کیا ہے، جو اس بات کا خیال رکھیں گے کہ سماجی رابطے سے دور رکھنے کے لئے عوام کو گھروں میں جو بند کرکے رکھا گیا ہے اس سے  بنیادی ...