بہار کے مختلف اضلاع میں کشتی پلٹنے سے ڈوبے 12 لوگوں کی لاش برآمد، 26 کی تلاش جاری

Source: S.O. News Service | Published on 6th August 2020, 10:43 AM | ملکی خبریں |

پٹنہ،6؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) بہار کے مختلف اضلاع میں کشتی پلٹنے سے غرقاب بارہ لوگوں کی لاش برآمد ہوگئی ہے اور 26 افرا د کی تلاش جاری ہے۔ بہار کے کھگڑیا ضلع کے مفصل تھانہ علاقہ میں گنگا ندی میں کشتی پلٹنے سے ڈوبے سات لوگوں کی لاش برآمد کرلی گئی ہے۔

ضلع مجسٹریٹ آلوک رنجن گھوش نے بدھ کو یہاں بتایا کہ منگل کی دیر شام متھار، ٹیکارام پور، ایکنیا اور سونبرسا گاﺅں کے رہنے والے قریب 40 لوگ بازار سے سامان خرید کر کشتی پر سوار ہو کر گھر لوٹ رہے تھے تبھی ایکنیا گاﺅں کے نزدیک کشتی بے قابو ہوکر گنگا ندی میں پلٹ گئی۔ اس واقعہ میں دس افراد تیر کر باہر آگئے جب کہ تیس لوگوں کے لاپتہ ہونے کا اندیشہ ہے۔ واقعہ کی جانکاری ملتے ہی ایس ڈی آر ایف کی ٹیم موقع پر روانہ ہوگئی۔

گھوش نے بتایا کہ ایس ڈی آ ر ایف کی ٹیم نے لاپتہ سات لوگوں کی لاش برآمد کر لی ہے۔ مرنے والوں کی شناخت سوشانت کمار (15) شیوانی کماری (14) انکوش کمار (10)، ویشاکھا دیوی (45)، روپم دیوی (25)، دلاری دیوی (25) اور ریکھا دیوی (25) کے طور پر کی گئی ہے۔ لاپتہ دیگر لوگوں کی تلاش کی جارہی ہے۔ برآمد لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیجا جا رہا ہے۔

ضلع مجسٹریٹ گھوش کے علاوہ کھگڑیا کی پولیس سپرنٹنڈنٹ مینو کماری، سب ڈویژنل افسر ( صدر) دھرمیندر کمار، ڈپٹی پولیس سپرنٹنڈنٹ ( ہیڈکوارٹر) پنکج کمار، کھگڑیا کی رکن اسمبلی پونم دیوی موقع پر پہنچ کر کیمپ کر رہی ہے۔ وہیں بہار میں سہرسہ ضلع کے سلکھوا تھانہ علاقہ میں کوسی ندی کے سیلاب کے پانی میں کشتی پلٹنے سے ڈوبے پانچ لوگوں میں سے باپ ۔ بیٹے سمیت تین کی لاش بدھ کو برآمد کرلی گئی وہیں دو کی تلاش جاری ہے۔

سمری بختیار پور کے سب ڈویژنل افسر ویریندر کمار نے بدھ کو یہاں بتایا کہ رانی پنچایت کے سوہری گاﺅں کے 13 افراد منگل کی دیر شام ایک کشتی پر سوار ہو کر بازار سے لوٹ رہے تھے تبھی اچانک شروع ہوئی تیز بارش کی وجہ سے کشتی کوسی ندی کے سیلاب کے پانی میں پلٹ گئی۔ اس واقعہ میں آٹھ افراد تیر کر باہر نکل گئے لیکن بقیہ پانچ ڈوب گئے۔

کمار نے بتایا کہ ڈوبے لوگوں کو تلاش کرنے کی کوشش کی گئی لیکن وہ نہیں ملے۔ این ڈی آر ایف کی ٹیم نے آج صبح دوبارہ ڈوبے ہوئے لوگوں کی تلاش شروع کی تو اسی گاﺅں کے سنجیت چودھری (30)، ان کا چھ سالہ بیٹا پریم کمار اور گاﺅں کی ہی ایک دیگر بچی کی لاش برآمد کی گئی۔ حالاکہ ابھی بھی سنجیت کی اہلیہ رجنی دیوی (22 ) اور ایک دیگر بچی شوبھا کماری (06) کی تلاش کی جارہی ہے۔ سب ڈویژنل افسر نے بتایا کہ وہ خود موقع پر موجود ہو کر تلاش کے کاموں کی نگرانی کر رہے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ برآمد لاشیں پوسٹ مارٹم کے لئے صدر اسپتال بھیج دی گئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اپوزیشن کے 8ممبران پارلیمنٹ کی معطلی مرکزی حکومت کا اختلاف رائے سے عدم راوداری کا نمونہ۔ ایس ڈی پی آئی

 سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں زرعی بل منطور کئے جانے کی مخالفت کرنے پر اپوزیشن کے 8اراکین پارلیمنٹ کو ایک ہفتہ کیلئے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں شرکت سے معطل کرنے کے اقدام کو جمہوریت مخالف قرار دیتے ...

بینکنگ ریگولیشن بل پر پارلیمنٹ کی مہر

 کوآپریٹو بینکوں کی بحالی اور نگرانی کے لئے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) کو زیادہ اختیارات دینے والے بینکنگ ریگولیشنز (ترمیمی) بل 2020 کو منگل کو راجیہ سبھا میں صوتی ووٹوں سے منظور کر لیا گیا۔