آسام تشدد: ’اگر سب کے لیے نہیں ہے تو کیسی آزادی؟‘، راہل گاندھی کا حکومت پر طنز

Source: S.O. News Service | Published on 25th September 2021, 11:34 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،25؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) آسام کے درانگ میں ہوئے تشدد کو لے کر کانگریس لگاتار بی جے پی حکومت پر حملہ آور ہے۔ اس درمیان کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے آسام میں تشدد کے ایشو پر مودی حکومت کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ راہل گاندھی نے سوال اٹھایا ہے کہ اگر سب کے لیے نہیں ہے تو پھر یہ کیسی آزادی؟

راہل گاندھی نے اس تعلق سے ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے کہ ’’جب ملک میں نفرت کا زہر پھیلایا جا رہا ہے تو کیسا امرت مہوتسو؟ اگر سب کے لیے نہیں ہے تو کیسی آزادی؟‘‘ واضح رہے کہ جمعرات کو غیر قانونی قبضہ ہٹانے گئی پولیس اور مقامی لوگوں میں تصادم کے دوران دو لوگوں کی موت ہو گئی تھی۔ واقعہ کے بعد سے علاقے میں ابھی تک ماحول کشیدہ ہیں۔

اس سے قبل آسام میں تشدد کو لے کر کانگریس نے وزیر اعلیٰ ہیمنت بسوا سرما پر سوال اٹھائے تھے۔ کانگریس نے پوچھا تھا کہ بڑا بھائی وزیر اعلیٰ اور چھوٹا بھائی ایس پی تو کیا جسے چاہیں گے اسے گولی ماریں گے؟ کانگریس درانگ کے ڈی سی اور ایس پی کو معطل کر تشدد کی عدالتی جانچ کرانے کے مطالبہ پر قائم ہے۔ یہاں غور طلب ہے کہ درانگ کے ایس پی سوشانتا بسوا سرما وزیر اعلیٰ ہیمنت بسوا سرما کے بھائی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں و کشمیر کو جلد ہی مکمل ریاست کا درجہ ملنا چاہیے:ادھیررنجن چودھری

کانگریس لیڈر ادھیر رنجن چودھری نے ہفتہ کو جموں و کشمیر میں سیاسی نظم و ضبط کی بحالی کا مطالبہ کیا اور جموں و کشمیر کو ریاست کا درجہ بحال کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ جلد سے جلد اسمبلی انتخابات کرائے جا سکیں۔

اننیا پانڈے این سی بی کے سامنے پیش نہیں ہوئیں

بالی ووڈ اداکارہ اننیا پانڈے منشیات سے متعلق کیس میں گرفتار آرین خان کے ساتھ مبینہ واٹس ایپ چیٹ کے سلسلے میں پوچھ گچھ کے لیے پیر کو یہاں نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کے سامنے پیش نہیں ہوئیں۔

دہلی حکومت پٹاخے کے خلاف مہم شروع کرے گی

دہلی کے وزیر ماحولیات گوپال رائے نے پیرکوکہاہے کہ شہر حکومت 27 اکتوبر سے پٹاخوں کو جلانے کے خلاف آگاہی پیدا کرنے کے لیے ایک مہم پٹاخے نہیں جلاؤ شروع کرے گی۔