آندھرا پردیش اسمبلی انتخا بات میں تیلگو دیشم پارٹی کو بھاری شکست کےآثار؛ جگن موہن ریڈی کی وائی ایس آر کانگریس کو مل رہی ہے شاندار کامیابی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd May 2019, 1:23 PM | ملکی خبریں |

بھٹکل 23/مئی (ایس او نیوز) آندھرا پردیش میں اسمبلی انتخابات  کے ووٹوں کی گنتی جاری ہے، مگر دوپہر تک ملی اطلاع کے مطابق  یہاں وائی ایس آر کانگریس کے جگن موہن ریڈی بھاری جیت درج کرتے نظر آرہے ہیں اور برسراقتدار پارٹی تیلگودیشم صرف 23 سیٹوں پر سمیٹتی نظر آرہی ہے۔یہاں صرف ان ہی دو پارٹیوں کے درمیان راست مقابلہ دیکھنے کو ملا ہے ، جبکہ بی جے پی اور کانگریس  کے اُمیدوار کنارے چلے گئے ہیں۔ دوپہر ایک بجے تک ملی اطلاع کے مطابق   وائی ایس آر کانگریس 152 سیٹوں پر آگے چل رہی تھی۔

میڈیا کی خبروں پر بھروسہ کریں تو  تیلگو دیشم پارٹی کے چیف  چندرابابو نائیڈو آج شام کو ہی  وزیراعلیٰ کے عہدہ سے استعفیٰ دیں گے جبکہ  اندھرا پردیش کی کمان سنبھالنے کے لئے  جگن موہن ریڈی  اپنے   حامیوں کے ساتھ  میٹنگ کرنے میں مصروف ہیں کہ کب   تاجپوشی کی رسم ادا کی جائے۔ذرائع کی مانیں تو  25مئی کواس تعلق سے پارٹی میٹنگ منعقد ہوگی اور 30 مئی کو  جگن موہن ریڈی  وزیراعلیٰ کا حلف لے سکتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق اندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرابابو نائیڈو خود بھی کوپّم اسمبلی حلقہ میں  ہار رہے ہیں۔ اطلاع کے مطابق  وہ وائی ایس آر کانگریس کے اُمیدوار کرشنا چندرا مولی کے مقابلے میں صرف 67 ووٹوں سے پیچھے چل رہے تھے۔

خیال رہے کہ  سن 2014 میں ہوئے انتخابات میں این چندرابابو نائیڈو کی قیادت والی  تیلگو دیشم پارٹی  نے 103 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔

اس بار یہاں اسمبلی کی 175 اور لوک سبھا کی  25 سیٹوں کے لئے  11 اپریل کو ایک ہی مرحلہ میں انتخابات منعقد ہوئے تھے اور 79.88 فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی تھی۔

خیال رہے کہ لوک سبھا کی سبھی 25 سیٹوں پر بھی  وائی ایس آر کانگریس  قبضہ جماتی نظر آرہی ہے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

جموں و کشمیر کے سابق سی ایم فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت حراست میں لیا گیا

جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کی حراست لیا گیا ہے۔ان کے حراست کو لے کر سپریم کورٹ میں داخل عرضی پر سماعت کے دوران عدالت نے مرکزی حکومت کو ایک ہفتے کا نوٹس دے کر جواب دینے کے لئے کہا گیا ہے۔

بابری مسجد ٹائٹل سوٹ؛ مسلم فریقوں کے وکیل ڈاکٹر راجیو دھون نے کیا بحث کاآغاز؛ کہا، چار سو سال پہلے بابر نے بنوائی تھی مسجد؛ تب سے ہورہی ہے لگاتار نماز

 آج چیف جسٹس کے کورٹ میں سب سے پہلے آر ایس ایس کے لیڈر گووند آچاریہ کی وہ درخواست پیش ہوئی جس میں انہوں نے عدالت سے کہا کہ اس مقدمہ کی شنوائی کو ٹیلی کاسٹ کیا جائے تاکہ عوام اسے براہ راست دیکھ سکیں۔ اس پر چیف جسٹس نے کورٹ کی رجسٹری سے کہا کہ وہ بتائیں کہ اس سسٹم کو جاری کرنے کے لئے ...