آندھرا پردیش اسمبلی انتخا بات میں تیلگو دیشم پارٹی کو بھاری شکست کےآثار؛ جگن موہن ریڈی کی وائی ایس آر کانگریس کو مل رہی ہے شاندار کامیابی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd May 2019, 1:23 PM | ملکی خبریں |

بھٹکل 23/مئی (ایس او نیوز) آندھرا پردیش میں اسمبلی انتخابات  کے ووٹوں کی گنتی جاری ہے، مگر دوپہر تک ملی اطلاع کے مطابق  یہاں وائی ایس آر کانگریس کے جگن موہن ریڈی بھاری جیت درج کرتے نظر آرہے ہیں اور برسراقتدار پارٹی تیلگودیشم صرف 23 سیٹوں پر سمیٹتی نظر آرہی ہے۔یہاں صرف ان ہی دو پارٹیوں کے درمیان راست مقابلہ دیکھنے کو ملا ہے ، جبکہ بی جے پی اور کانگریس  کے اُمیدوار کنارے چلے گئے ہیں۔ دوپہر ایک بجے تک ملی اطلاع کے مطابق   وائی ایس آر کانگریس 152 سیٹوں پر آگے چل رہی تھی۔

میڈیا کی خبروں پر بھروسہ کریں تو  تیلگو دیشم پارٹی کے چیف  چندرابابو نائیڈو آج شام کو ہی  وزیراعلیٰ کے عہدہ سے استعفیٰ دیں گے جبکہ  اندھرا پردیش کی کمان سنبھالنے کے لئے  جگن موہن ریڈی  اپنے   حامیوں کے ساتھ  میٹنگ کرنے میں مصروف ہیں کہ کب   تاجپوشی کی رسم ادا کی جائے۔ذرائع کی مانیں تو  25مئی کواس تعلق سے پارٹی میٹنگ منعقد ہوگی اور 30 مئی کو  جگن موہن ریڈی  وزیراعلیٰ کا حلف لے سکتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق اندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرابابو نائیڈو خود بھی کوپّم اسمبلی حلقہ میں  ہار رہے ہیں۔ اطلاع کے مطابق  وہ وائی ایس آر کانگریس کے اُمیدوار کرشنا چندرا مولی کے مقابلے میں صرف 67 ووٹوں سے پیچھے چل رہے تھے۔

خیال رہے کہ  سن 2014 میں ہوئے انتخابات میں این چندرابابو نائیڈو کی قیادت والی  تیلگو دیشم پارٹی  نے 103 سیٹوں پر کامیابی حاصل کی تھی۔

اس بار یہاں اسمبلی کی 175 اور لوک سبھا کی  25 سیٹوں کے لئے  11 اپریل کو ایک ہی مرحلہ میں انتخابات منعقد ہوئے تھے اور 79.88 فیصد پولنگ ریکارڈ کی گئی تھی۔

خیال رہے کہ لوک سبھا کی سبھی 25 سیٹوں پر بھی  وائی ایس آر کانگریس  قبضہ جماتی نظر آرہی ہے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

تریپورہ: بی جےپی-آئی پی ایف ٹی اتحاد خطرے میں

تریپورہ میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے اپنے کارکنوں پر مبینہ حملے کے سلسلے میں اتحادی حکومت کی معاون انڈین پیپلز فرنٹ آف تریپورہ (آئی پی ایف ٹی) سے رشتہ توڑنے کے بعد دباؤ کے درمیان آئی پی ایف ٹی لیڈروں نے پیر کو اعلان کیا کہ وہ موجودہ صورت حال میں اتحادی حکومت میں شامل نہیں رہ ...

بہار میں شدت کی گرمی، 183 افراد ہلاک،22 جون تک سرکاری اسکول بند،گیا میں دفعہ 144 نافذ

بہار میں زبردست گرمی اور لُو کے تھپیڑوں سے لوگوں کا جینا دشوار ہو گیا ہے۔ حالات اتنے بدتر ہیں، اس کا اندازہ اسی سے لگایا جا سکتا ہے کہ مقامی میڈیا رپورٹوں کے مطابق پچھلے 3 دن کے دوران تقریباً 183 لوگوں کی موت ہو چکی ہے۔

پرگیہ ٹھاکر کو لوک سبھا میں پہلے ہی دِن اپوزیشن کی مخالفت کا کرنا پڑا سامنا

عام انتخابات کے دوران ناتھو رام گوڈسے کے متعلق دئے گئے بیان کی وجہ سے تنازعہ کا شکار بی جے پی کی ممبر پارلیمنٹ سادھوی پرگیہ سنگھ ٹھاکر کو آج لوک سبھا میں پہلے ہی دن اس وقت اپوزیشن کی مخالفت کا سامنا کرنا پڑا جب انہوں نے حلف لیتے وقت اپنے نام کے ساتھ چنمیانند اودھیشانند گری بھی ...