گاندھی جی پر ہتک آمیز بیان کے بعد اننت کمار ہیگڈے نے معافی مانگنے سے کیا انکار؛ ہیگڈے کے خلاف دیش سے غداری کا مقدمہ درج کرنے کانگریس کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 4th February 2020, 10:12 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | ملکی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل 4/فروری (ایس او نیوز) دوتین دن قبل ملک کی جدوجہد آزادی میں گاندھی جی کے کردار پر سوال اٹھاتے ہوئے بی جے پی کے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے بنگلور میں منعقدہ ایک عوامی اجلاس میں  بابائے قوم کا خطاب رکھنے والی گاندھی کی شخصیت کو اپنے طنز اور مذاق کا نشانہ بنایا تھا جس کے بعد بی جے پی ہائی کمان نے انہیں  معافی مانگنے کا حکم دیا تھا، مگر  تازہ خبر یہ ہے کہ  اننت کمار ہیگڈے نے معافی مانگنے سے انکار کردیا ہے  اور کہا ہے کہ انہوں نے اپنے خطاب میں گاندھی کا نام ہی نہیں لیا ہے، ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ انہوں نے نہ گاندھی کے خلاف کوئی تبصرہ کیا اور نہ ہی کسی کا نام لے کر کچھ کہا ہے، انہوں نے  اپنی ہانڈی میڈیا پر پھوڑتےہوئے کہا ہے کہ یہ سب کچھ میڈیا کا کیا دھرا ہے جنہوں نے ان کے بیان کو توڑ مروڑ کر پیش کیا ہے۔

خیال رہے کہ   بی جے پی نے اپنے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے کو وجہ بتاؤ نوٹس جاری کرتے ہوئے پوچھا تھا  کہ ان کے خلاف  تادیبی کارروائی کیوں نہیں کی جائے۔اس کے علاوہ وزیراعظم نریندر مودی کی طرف سے بھی سخت ناراضگی ظاہر کی گئی تھی جس کے بعد اننت کمار ہیگڈے کو بی جے پی کی پارلیمانی کمیٹی کی میٹنگ سے باہر رکھے جانے کی بھی با ت سنائی دے رہی ہے۔

 لیکن ان سب کے درمیان خبر یہ بھی ملی ہے کہ  بی جے پی کے ریاستی صدر اور رکن پارلیمان نلین کمار کٹیل نے بنگلورو سے دہلی کے لئے روانہ ہونے سے قبل اننت کمار ہیگڈے سے ملاقات کی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ”گاندھی کے سلسلے میں ہتک آمیزبیان پر گفتگو ہوئی۔  جس میں اننت کمار ہیگڈے نے اُنہیں بتایا کہ انہوں نے پارٹی کے قومی صدر جے پی ندّا کو اپنا وضاحتی جواب بھیج دیا ہے“

باخبر ذرائع سے پتہ چلاہے کہ ریاستی صدر نلین کمار کٹیل کی تمام کوشش ناکا م ہوگئی ہے اور اننت کمار ہیگڈے نے کسی بھی حالت میں اپنا متنازع بیان واپس لینے یا معافی مانگنے  سے انکار کردیا ہے۔اور صاف طور پر کہہ دیا ہے کہ میں نے نوٹس کا جواب دے دیا ہے۔ اب پارٹی جو فیصلہ کرنا چاہتی ہے کرنے دو۔ میں اپنا موقف بدلنے والا نہیں ہوں۔ بتایا جارہا ہے کہ اب پارٹی کے قومی صدر اس سلسلے میں ضابطے کے مطابق ضروری کارروائی کریں گے۔

اننت کمار ہیگڈے کے متنازعہ بیان پر سیاسی گلیاروں میں اور خاص کر کانگریس پارٹی کی طرف سے شدید ردعمل جاری ہے۔   کانگریس پارٹی نے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اننت کمار ہیگڈے کے خلاف ملک سے غداری کا معاملہ درج کیاجائے۔اس کے علاوہ یہ مانگ بھی کی جارہی ہے کہ اپنے سابق وزیر کے اس رکیک بیان پر وزیر اعظم نریندرا مودی خود قوم سے معافی مانگیں۔ کانگریسی لیڈر آنند شرما نے کہا ہے کہ پارلیمانی سیشن میں پہنچ کر خود اننت کمار ہیگڈے کو اپنے بیان کے سلسلے میں وضاحت کرنی چاہیے اور وزیراعظم مودی کو یہ بتانا ہوگا کہ ان کی  عقیدت مہاتما گاندھی کے ساتھ ہے یا پھر گوڈسے کے ساتھ ہے۔

 کانگریسی لیڈر اور سپریم کورٹ کے وکیل برجیش کالپّا نے لوک سبھا اسپیکراوم برلا کے پاس رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے کے خلاف تحریری شکایت درج کی ہے۔اس میں انہوں نے کہا ہے کہ ”رکن پارلیمان رہتے ہوئے اننت کمار ہیگڈے جس طرح کے بیانات عوام کے درمیان دے رہے ہیں، اس پر غور کرنے سے ایسا لگتا ہے کہ ان کے ساتھ کوئی بہت ہی گہری دماغی خرابی پید اہوگئی ہے۔ اور دستور ہند کی دفعہ 102کے تحت ایسے شخص کو رکن پارلیمان بنے رہنے کاحق نہیں ہوتا جس کا دماغی توازن بگڑ گیا ہو۔اس وجہ سے شمالی کینرا کی پارلیمانی سیٹ خالی ہوجانے کا اعلان کردیاجائے۔“

 راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت نے اس تنازع پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ”بی جے پی کو جنگ آزادی کے سلسلے میں کوئی رشک اور فخر نہیں ہے۔ وہ تو صرف دکھانے کے لئے گاندھی کے نام کا استعمال کرتے ہیں۔

خیال رہے کہ  اننت کمار ہیگڈے کا نام وقفہ وقفہ سے اپنے جارحانہ اور فرقہ وارانہ بیانات کی وجہ سے سرخیوں میں آتارہتا ہے۔ کبھی اپنے ٹویٹر ہینڈل سے گاندھی کے قاتل گوڈسے کی ستائش کرنے کے بعد پھر وہ کہتے ہیں کہ ٹویٹر اکاؤنٹ ہیاک ہوگیا تھا۔ کبھی ملک کا دستور بدلنے کی بات کہنے کے بعد پارلیمنٹ میں معافی مانگنی پڑتی ہے۔ کبھی ہندولڑکیوں کو چھونے والوں کے ہاتھ کاٹ دینے پر ہندو نوجوانوں کو اکساتے ہیں تو کبھی دہشت گردی ختم کرنے کے لئے دنیا سے اسلام کو ہی مٹانے کی آواز لگاتے ہیں۔کبھی اپنی ہی مرکزی حکومت کے خلاف بیان دیتے ہوئے کہتے ہیں کہ مرکزی فنڈ کے 40کروڑ روپے واپس دہلی لے جانے کے لئے بی جے پی نے جان بوجھ کرمہاراشٹرا میں 80 گھنٹوں کے لئے اپنی حکومت قائم کی تھی۔کبھی وہ عقلیت پسند دانشوروں کے خلاف زبانی طور پررکیک حملے کرتے ہیں توکبھی اسپتال میں گھس کر غنڈوں کی طرح ڈاکٹروں پر حملہ کرتے ہوئے سی سی کیمرے میں قید ہوجاتے ہیں۔اس طرح اننت کمار ہیگڈے کانام اختلافات اور تنازعات کو جنم دینے والی ایک جارحانہ شخصیت کی علامت بن کر رہ گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل سرکاری اسپتال کی جانب سے معروف تاجر یونس قاضیا کی تہنیت

بھٹکل کی سرکاری اسپتال کی عمارت کو پینٹنگ کے تمام اخراجات ادا کرنے اور اسپتال کو خوبصورتی بخشنے پر   بھٹکل کے مشہورو معروف تاجر اور بھٹکل مسلم خلیج کونسل کے جنرل سکریٹری جناب محمد یونس قاضیا کے خدمات کی سراہنا کرتے ہوئے  بھٹکل سرکاری اسپتال کی جانب سے شال پوشی کرتے ہوئے ...

بھٹکل اتی کرم داروں کی تکرار عرضی پر جالی پنچایت ممبران کو اعتراض : تحصیلدار سے ملاقات

بھٹکل کرکٹ اکیڈمی میدان میں اتی کرم ہوراٹ گارر ویدیکے کی قیاد ت میں سونپی گئیں ہزاروں عرضیوں کے متعلق بھٹکل جالی پٹن پنچایت کو کسی بھی طرح کی کو ئی اطلاع دئیے بغیر تھصیلدار کی معرفت ڈپٹی کمشنر کو عرضیاں روانہ کرنے پر پنچایت ممبران نے سخت اعتراض جتایا ہے اور بھٹکل تحصیلدار ...

بھٹکل میں ہزاروں فوریسٹ اتی کرم داروں نے ڈپٹی کمشنر کے نام سونپی تکرار عرضی :سالہا سال سے اتی کرم زمین پر رہنے والوں کو منظوری دینے کا مطالبہ

فوریسٹ حقوق قانون کے تحت داخل کی گئی عرضیوں کو قانونی دعوے کے مطابق منظوری دینے کی کارروائی کو فوری طور پر انجام دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے   جنگلاتی زمینات کے  اتی کرم داروں نے بدھ کو بھٹکل کرکٹ اکیڈمی میدان میں زوردار مہم چلائی، جس میں پانچ ہزار کے قریب آتی کرم داروں نے ...

کمار سوامی کے ٹویٹ پر ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا پلٹ وار: شان وشوکت کی نمائش پر بھی دیوار گرنے کا خوف

امریکن صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بھارت دورے کے موقع پر احمدآباد کے سلم علاقے کی جھگی ۔جھونپڑیوں کو چھپانے کے لئے تعمیر کی جارہی دیوار پر سابق وزیراعلیٰ کماراسوامی نےکڑی تنقید کرتے ہوئے ٹویٹ کیا تھا جس   پر شمالی کینرا کے  رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے پلٹ وار کیا ہے۔

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

منگلورو: شہریت ترمیمی قانون مخالف احتجاج کے دوران ہوئے لاٹھی چارج اور فائرنگ معاملے میں ایف آئی آر درج ہونا چاہیے؛ ہائی کورٹ کا تیکھاتبصرہ

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف19دسمبر2019 کو ہوئے پرتشدد احتجاج کے دوران پولیس کی طرف سے کیے گئے لاٹھی چارج اور فائرنگ کے سلسلے میں کرناٹکا ہائی کورٹ کی ڈیویزن بنیچ کے رکن جسٹس جان مائیکل نے تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کوا س معاملے میں ایف آئی درج کرنا چاہیے۔

بنگلور وسٹی پولیس وائٹ فیلڈ کو محفوظ بنانے کیلئے سی سی ٹی وی کی نگرانی

اگر آپ وائٹ فیلڈکے علاقہ میں رہتے ہیں تو جلد ہی آپ بنگلور سٹی پولیس کی نگرانی میں ہوں گے، دراصل ٹیکنالوجی کے مرکز اور علاقہ کو جرائم سے محفوظ بنانے، شرارتوں کو ختم کرنے، عوامی اعلانات کو ممکن بنانے اور مجرموں کو پکڑنے کی کارروائی کو آسان بنانے کے لئے پولیس نے اب خانگی اداروں کا ...

بنگلورو سلک بورڈ جنکشن راہگیروں کے لئے خطرناک

الیکٹرانک سٹی اور شرجاپور میں واقع اپنے دفاتر کو جانے کے لئے بسوں کو پکڑنے کے لئے فٹ پاتھوں پر پیدل چلنے اور سلک بورڈ جنکشن کا استعمال کرنے والے ٹیکیوں کا کہنا ہے کہ، یہاں کی سڑکوں پر سے پیدل چل کر جانا ایک خطر ناک معاملہ ہوتا ہے۔

این آرسی بد عنوانیوں میں اضافہ کا سبب بنے گا

شہر بنگلور میں مزدوروں تنظیموں کے رضاکاروں نے تنبیہ کی ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے قومی رجسٹر برائے شہریت کے نفاذ کی کوئی بھی کوشش بد عنوانیوں کو ہوا دے سکتی ہے اور ملک بھر میں رشوت ستانی کا ماحول پیدا ہو جائے گا جبکہ غیرب لوگوں کو اپنے دستاویزات بنانے یا انہیں درست کرانے کے لئے ...

بی بی ایم پی صفائی کرمچاریوں کیلئے رہائشی اسکیم بی ڈی اے سے تعمیر شدہ فلیٹ کے حق پترا تقسیم

بروہت بنگلور مہانگر پالیکے (بی بی ایم پی) کے صفائی کرمچاریوں کو رہائش کی سہولت فراہم کرنے بنگلور ڈیولپمنٹ اتھارٹی (جی ڈی اے) کی طرف سے فلیٹ تعمیر کئے جارہے ہیں، ان میں سے چند فلیٹ کے حق پترا آج منتخب صفائی کرمچاریوں میں تقسیم کئے گئے۔

کنڑا میں بات کرنے پر طلباء پر جرمانہ عائد کرنے والے اسکول کی منظوری رد کرنے وزیر تعلیم سے کنڑا اتھارٹی کا مطالبہ

کنڑا ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے چیرمین ٹی ایس ناگ بھرنا نے وزیر برائے پرائمری وسکینڈری تعلیم سریش کمار کو مکتوب روانہ کرکے اسکول میں کنڑا میں بات کرنے پر جرمانہ لگانے والے چنسندرا کے ایس ایل ایس انٹرنیشنل گروکل اسکول کی منظوری منسوخ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

اتر پردیش کے بجٹ میں عوامی مسائل کا حل غائب: پرینکا گاندھی

 کانگریس کی اترپردیش کی انچارج اور جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے یوگی آدتیہ ناتھ حکومت کے بجٹ پر طنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ بجٹ تو آگیا ہے لیکن اس میں لوگوں اور خصوصاً کسانوں کے مسائل کا کوئی حل نہیں ہے۔ پرینکا گاندھی نے کسانوں کے کچھ مسائل کو بھی اٹھایا۔

کشمیر: یوٹیوب تک رسائی ممکن نہ ہونے سے طلباء پریشان

وادی کشمیر میں انتظامیہ کی طرف سے سوشل میڈیا کی رسائی کی روک تھام کے باعث مسابقتی امتحانات کی تیاریوں میں مصروف طلبا مشکلات کے اتھاہ بھنور میں پھنس گئے ہیں کیونکہ وہ ویڈیو شیرنگ پلیٹ فارم یو ٹیوب کے ذریعے مختلف موضوعات و معاملات پر لیکچرز سننے سے قاصر ہیں۔

میری وفاداری ملک کی مٹی کے ساتھ ہے، اور یہ مٹی بی جے پی کی جاگیر نہیں: التجا مفتی

جموں و کشمیر کی سابق وزیر اعلی محبوبہ مفتی کی بیٹی التجا مفتی نے وادی کےلوگوں پر وی پی این کے ذریعہ انٹرنیٹ کا استعمال کرنے پر مقدمہ درج کرنے کےلئے مرکز کی مودی حکومت کی سخت الفاظ میں تنقید کی ہے۔ التجا نے کہا کہ یا تو کوئی نریندر مودی کو گمراہ کر رہا ہے یا پھر وہ ملک کو گمراہ کر ...

بھٹکل میں موٹر گاڑیوں کی بڑھتی تعداد۔ آمدورفت کی دشواریوں پر قابو پانے کے لئے ٹریفک پولیس اسٹیشن کا قیام اشد ضروری

بھٹکل شہر تعلیمی، معاشی اور سماجی طور پرتیز رفتاری کے ساتھ ترقی کی طرف گامزن ہے۔ لیکن اس ترقی کے ساتھ یہاں پر موٹر گاڑیوں کی تعداد میں بھی بے حد اضافہ ہوا ہے جس سے ٹریفک کے مسائل پیدا ہوگئے ہیں۔ دوسری طرف ٹریفک قوانین کی خلاف ورزیاں بھی بڑھتی جارہی ہیں اوراس سے سڑک حادثے بھی ...

اسمبلی الیکشن: الٹی ہو گئیں سب تدبیریں۔۔۔ آز: ظفر آغا

الٹی ہو گئیں سب تدبیریں... جی ہاں، دہلی اسمبلی الیکشن جیتنے کی بی جے پی کی تمام تدبیریں الٹی پڑ گئیں اور آخر نریندر مودی اور امت شاہ کو کیجریوال کے ہاتھوں منھ کی کھانی پڑی۔ دہلی میں بی جے پی کی صرف ہار ہی نہیں بلکہ کراری ہار ہوئی۔

اسکول کا ناٹک ۔پولس حیلہ بازی کا ناٹک                        ۔۔۔۔۔۔بیدر کے شاہین اسکول کے خلاف ہوئی پولس کاروائی پر نٹراج ہولی یار کی خصوصی رپورٹ

بیدر کے شاہین اسکول میں کھیلے گئے ایک ڈرامے میں اداکاری کرنے والے   اسکولی بچوں سے بار بار پوچھ تاچھ کرنے والے  پولس  کا رویہ ، نہایت  خطرناک اور  خوف میں مبتلا کرنے والا ہے۔ ایک وڈیو کلپ پر انحصار کرتےہوئےمتعلقہ  ڈرامے میں شہری ترمیمی قانون کی تنقید کئے جانے اور وزیرا عظم کی ...

دہلی الیکشن.....شاہین باغ.... شہریت... اور شریعت .... آز: ڈاکٹر سید فاضل حسین پرویز

الحمدللہ! نفرت، دشمنی پھیلانے والوں کو عزت اور ذلت دینے والے نے رسوا کیا۔ ہمارے قدموں کے نیچے سے زمین کھینچنے کی کوشش کرنے والوں کے لئے اُس سرزمین پر جہاں ان کا راج ہے انہیں اجنبی جیسا بناکر رکھ دیا۔ بے شک انسان چاہے لاکھ سازشیں اور کسی کو مٹانے کی کوششیں کرلے جب تک خالق کائنات ...