این ڈی اے شہریت ترمیمی بل پر متفق نہیں، ایل جے پی مخالفت کرسکتی ہے جدیوکی پالیسی غیرواضح،نئی نئی سیکولربنی شیوسیناکے تئیں کانگریس،این سی پی کی دوستی کابھی امتحان

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 8th December 2019, 12:26 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی7دسمبر(آئی این ایس انڈیا) شہریت ترمیمی بل پیر کو لوک سبھا میں پیش کیا جائے گا۔ پہلے ہی اس متنازعہ بل کو لے کر بہت سارے تنازعات ہیں اوراسی وجہ سے پارلیمنٹ میں بھی ہنگامہ ہونایقینی ہے۔کانگریس سمیت متعدد اپوزیشن جماعتیں اس بل کے خلاف ہیں۔اب این ڈی اے کے اندر بھی، بل کی مخالفت کی آوازآسکتی ہے۔این ڈی اے کی اتحادی، لوک جن شکتی پارٹی (ایل جے پی) اس بل کے حق میں نہیں دکھائی دیتی ہے۔

پارٹی ذرائع سے موصولہ معلومات کے مطابق،پارٹی اس بل کو آئین کی بنیادی روح اورسیکولرازم کے خلاف سمجھتی ہے، لہٰذابل کی حمایت کرنے میں ہچکچاہٹ محسوس کرتی ہے۔دیکھنایہ ہے کہ بہانے سے ایوان سے بھاگنے والی اورخودکوسیکولربتانے والی جدیواس باربھی بھاگ کرسرکارکی حمایت کرتی ہے یامخلصانہ مخالفت میں حصہ لیتی ہے،اسی طرح نئی نئی سیکولربنی شیوسیناکوکانگریس اوراین سی پی کتناسیکولرزپڑھاسکی ہے اوراپنی نئی دوست کوفرقہ وارانہ ایجنڈے سے بازرکھتی ہے یاخوداس کاحصہ ہوجاتی ہے۔ ذرائع کے مطابق پارٹی صدر چراغ پاسوان نے اپنے تمام ممبران پارلیمنٹ سے اس بل کے بارے میں مشاورت کی ہے۔اسی سلسلے میں، آج پارٹی کے کچھ ممبران پارلیمنٹ اور عہدیداروں نے چراغ پاسوان سے ملاقات کی ہے۔ اس میٹنگ میں زیر بحث آیا کہ لوک سبھا اور راجیہ سبھا میں اس بل پر رائے دہندگی کے دوران پارٹی کاکیا موقف ہونا چاہیے؟ چراغ پاسوان کے علاوہ رکن اسمبلی محبوب علی قیصر اورپارٹی کے جنرل سکریٹری عبد الخالق اور دیگرنے اس میٹنگ میں شرکت کی۔پارٹی کا یہ بھی ماننا ہے کہ بل پر بحث کرنے کے لیے این ڈی اے کی پہلی میٹنگ میں تمام اتحادیوں کی رائے لینا بہتر ہوتا۔ ایل جے پی کے لوک سبھا میں 6 اور راجیہ سبھا میں 1 ممبرہیں۔ اتحاد کی ایک اور حلیف جے ڈی یو بھی اس بل کے خلاف ہے۔ تاہم، اس بار پارٹی کا موقف اس پر قدرے نرم نظر آرہا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

سی اے اے کے خلاف تمام اپوزیشن جماعتوں کو ایک پلیٹ فارم پر آنے کی ضرورت: پی چدمبرم

  این پی آر کی موجودہ شکل کو ناقابل قبول بتاتے ہوئے سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نے کہا کہ کانگریس پارٹی اس کو قبول نہیں کرے گی ۔انہوں نے شہریت ترمیمی ایکٹ ،این آر سی اور این پی آر کے خلاف تمام اپوزیشن جماعتوں کو متحد ہوکر اس کی مخالفت کرنی چاہیے۔

دہلی: کانگریس کی 54 امیدواروں کی فہرست جاری

کانگریس نے دہلی کی 70 ارکان پر مشتمل اسمبلی کے انتخابات کےلئے 54 امیدواروں کی پہلی فہرست سنیچر کو جاری کی جس میں سینئر لیڈر کرشنا تیرتھ، راجیش لیلوتیا، ہارون یوسف، ڈاکٹر نریندر ناتھ اور اروند سنگھ لولی سمیت کئی اہم لیڈر شامل ہیں۔ کانگریس انتخابی کمیٹی کے سربراہ مکل واسنک نے ...

کیجریوال نے کروڑوں روپے لیکر ٹکٹ فروخت کیا: آدرش شاستری

سابق وزیر اعظم لال بہادر شاستری کے پوتے اور دوارکا سے عام آدمی پارٹی (عآپ) کے رکن اسمبلی آدرش شاستری نے ہفتہ کے روز وزیر اعلی اروند کیجریوال پر 10 سے 20 کروڑ روپے لیکر دہلی اسمبلی انتخابات کے ٹکٹ فروخت کرنے کا سنگین الزام عائد کیا ہے۔

  اتر پردیش میں 10 آئی پی ایس افسران کے تبادلے

 اتر پردیش حکومت نے سنیچر کو انڈین پولیس سروس (آئی پی ایس) کے دس افسران کا تبادلہ کر دیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق پی اے سی مرادآباد میں ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس ایس سی دوبے کو اعظم گڑھ (رینج) کا ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس بنایا گیا ہے جبکہ اعظم گڑھ کے موجود ڈی آئی جی جے ...

نربھیا کیس: مجرم پون کا دفاع کرنے والے وکیل برے پھنسے، بار کونسل نے بھیجا نوٹس

نربھیا کیس میں قصواروں کے وکیل اے پی سنگھ کو دہلی کی بار کونسل نے نوٹس جاری کیا ہے۔ اتنا ہی نہیں، بار کونسل نے ان سے دو ہفتے کے اندر جواب بھی طلب کیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ ہائی کورٹ نے حال ہی میں دہلی بار کونسل سے اے پی سنگھ کے خلاف کارروائی کرنے کو کہا تھا۔ ساتھ ہی ان کے اوپر 25 ہزار ...

60 کروڑ آدھار نمبر پہلے ہی این پی آرسے جوڑے جا چکے ہیں

اس وقت اس بات کو لے کر تنازعہ چل رہا ہے کہ این پی آر کو آدھار کے ساتھ جوڑا جائے گا یا نہیں۔ کئی میڈیا رپورٹس میں یہ بتایا گیا ہے کہ این پی آر کو آدھار نمبر کے ساتھ جوڑا جائے گا۔ لیکن وزارت داخلہ کا یہ کہنا ہے کہ کسی بھی شخص کو کوئی بھی دستاویز دینے کو مجبور نہیں کیا جائے گا۔