ایمبولینس نے کورونا مریض سے 7 کلومیٹر کے لئے وصول کئے 8 ہزار روپئے، معاملہ درج

Source: S.O. News Service | Published on 11th July 2020, 12:29 PM | ملکی خبریں |

پونے،11؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) مہاراشٹر میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی صورت حال مسلسل بگڑتی جا رہی ہے۔ مریضوں کی تعداد بڑھنے کے ساتھ اسپتالوں میں بیڈ بھی کم پڑنے لگے ہیں۔ کورونا وبا کے اس بحران کی گھڑی میں بھی کچھ لوگ مریضوں کو لوٹنے سے باز نہیں آ رہے ہیں۔ ایسا ہی ایک معاملہ پنے میں سامنے آیا ہے جہاں پر ایک ایمبولینس نے کورونا کے مریض کو محض 7 کلومیٹر لے جانے کے لئے 8 ہزار روپئے لے لئے۔ اس معاملہ میں اب ایمبولنس کے خلاف ایف آئی آر درج کرائی گئی ہے۔

اطلاعات کے مطابق، پونے کے ببوےباڑی میں ایک کورونا مریض نے اسپتال پہنچنے کے لئے ایمبولینس بلائی تھی۔ مریض سے ایمبولینس نے ببوےباڑی سے دیناناتھ اسپتال جانے کے لئے 8 ہزار روپئے لئے جبکہ مریض کے گھر سے اسپتال کی دوری محض 7 کلومیٹر ہے۔ اس معاملہ میں مریض نے اب ضلع مجسٹریٹ سے شکایت کی ہے۔ مریض کی شکایت پر ایمبولینس مالک کے خلاف ایف آئی آر درج کر لی گئی ہے۔

جانچ میں اس بات کا بھی انکشاف ہوا ہے کہ یہ ایمبولینس سیوا، سنجیونی ایمبولنس سروس کے نام سے چلائی جا رہی تھی جبکہ اس کا لائسنس موبائل کلینک کے نام پر تھا۔ موٹر وہیکل انسپکٹر کی طرف سے بھی مقامی پولیس اسٹیشن میں ایمبولنس کے مالک کے خلاف معاملہ درج کیا گیا ہے۔

کورونا وائرس سے ملک میں سب سے زیادہ متاثر ریاست مہاراشٹر ہے جہاں اس وبا سے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 7،862 کیسز رپورٹ ہوئے ، جس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 2،38،461 ہوگئی ہے۔ اس عرصے کے دوران ریاست میں 226 افراد نے اپنی جانیں گنوائی ہیں ، جس سے ہلاک شدگان کی مجموعی تعداد 9،893 ہوگئی ہے۔ وہیں اس ریاست میں 1،32،625 افراد شفایاب ہوئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر میں بی جے پی کارکنان کو ایک منصوبہ کے تحت نشانہ بنایا جارہا: الطاف ٹھاکر

 بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے ترجمان الطاف ٹھاکر نے پارٹی کارکنوں پر ہونے والے حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر میں بی جے پی کے کارکنوں کو ایک منصوبہ بند سازش کے تحت نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

مرکزی حکومت کا ہتھیاروں کی درآمد پر پابندی کا فیصلہ ناقابل فہم: سوگت رائے

مرکزی حکومت کے ذریعہ 101ملٹری ہتھیاروں کی درآمدگی پر پابندی عاید کیے جانے پر ترنمول کانگریس نے سوال کھڑے کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ قدم اٹھانے سے قبل ملک میں اسلحہ سازی کی صلاحیت میں اضافہ کرنے کی ضرورت تھی اور اس کے لئے روڈ میپ تیار کیا جانا چاہیے۔

کشمیر: ڈاکٹر شاہ فیصل نے اٹھایا حیرت انگیز قدم، پارٹی کے صدارتی عہدہ سے دیا استعفیٰ

 کشمیری قوم کے لئے نیلسن منڈیلا بننے کی تمنا رکھنے والے 36 سالہ سابق آئی اے ایس افسر ڈاکٹر شاہ فیصل نے گزشتہ برس مارچ میں 'ہوا بدلے گی' نعرے کے تحت لانچ کردہ اپنی جماعت 'جموں و کشمیر پیپلز موومنٹ' کے صدارتی عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ ان کی جگہ پر پارٹی کے نائب صدر فیروز پیرزادہ کو ...