مظفر پور شیلٹر ہوم میں رہ چکی لڑکی کے ساتھ گینگ ریپ معاملے میں تمام چار ملزم گرفتار

Source: S.O. News Service | Published on 17th September 2019, 7:54 PM | ملکی خبریں |

بیتیا،17/ستمبر(ایس او نیوز/ آئی این ایس انڈیا) مظفر پور شیلٹر ہوم میں رہ چکی ایک لڑکی سے گینگ ریپ کے معاملے میں تمام ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔اے ڈی جی پی جیتیدر کمار نے یہ معلومات دی۔بہار کے بیتیا میں جمعہ کو ایک چلتی گاڑی میں لڑکی کے ساتھ گینگ ریپ کیا گیا تھا۔اس معاملے میں پولیس نے چار لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کیا تھا۔لڑکی کے ساتھ ملزمان نے پہلے گینگ ریپ کیا پھر اسے گاؤں کے قریب چھوڑ کر فرار ہو گئے تھے۔اے ڈی جی پی نے کہاکہ گرفتار لوگوں کے بیان کی بنیاد پر ایک شخص کا نام سامنے آیا ہے۔اس کی گرفتاری کے لئے ایک خصوصی ٹیم تلاش کر رہی ہے۔انہوں نے یہ بھی کہاکہ تحقیقات کے دوران یہ پتہ چلا ہے کہ ملزم اور متاثرہ ایک دوسرے کو جانتے تھے میڈکل رپورٹ کے مطابق لڑکی نابالغ ہے۔اس کی عمر 15 سے 17 سال کے درمیان ہے۔اس معاملے میں چار لوگوں پر الزام لگا تھا۔ان میں سے تین کوکل گرفتار کیا گیا تھا اور ایک کو آج گرفتار کیا گیا۔بتا دیں کہ لڑکی مظفر پور کے اسی شیلٹر ہوم میں رہتی تھی جس میں 30 سے زیادہ لڑکیوں کے ساتھ ریپ ہوا تھا۔یہ معاملہ اس وقت سامنے آیا تھا جب ٹاٹا انسٹٹیوٹ آف سوشل سائنسز(ٹی آئی ایس ایس) نے ایک سوشل آڈٹ کیا تھا۔اس معاملے کے سامنے آنے کے بعد ریاستی حکومت نے گزشتہ سال اسے سی بی آئی کو سونپ دیا تھا۔ادھر اس گینگ ریپ کے معاملے کی تحقیقات کے لئے قومی خواتین کمیشن نے پیر کو ایک کمیٹی قائم کی۔قومی خواتین کمیشن کی صدر ریکھا شرما کی قیادت والی کمیٹی اس ہفتے بعد بہار کا دورہ کرے گی اور متاثرہ، ڈی جی پی اور بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار سے ملاقات کرے گی۔قومی خواتین کمیشن کی صدر ریکھا شرما نے کہا تھاکہ بہار سے ہمارے رکن باقاعدہ دورہ کرتے ہیں اور انہوں نے خواتین کے خلاف بڑھتے ہوئے جرائم کے مقدمات کو اٹھایا ہے لیکن حالات بہتر ہوتے دکھائی نہیں دے رہے ہیں۔ میں تمام معاملات پر خود بہار کے ڈی جی پی اور ممکن ہوا تو بہار کے وزیر اعلی کے ساتھ بھی بات کروں گی۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوؤں کو اقلیتی درجہ دینے کا مطالبہ کرنے والی عرضی سپریم کورٹ سے خارج

سپریم کورٹ نے لفظ اقلیت کی تعریف کرنے اور ملک کی 9 ریاستوں میں اقلیتوں کی شناخت کےلئے ہدایت جاری کرنے سے متعلق عرضی جمعرات کو خارج کر دی۔ عرضی میں مطالبہ کیا گیا تھا کہ جن ریاستوں میں ہندوؤں کی تعداد کم ہے وہاں انہیں اقلیتی درجہ فراہم کیا جائے۔

اپہار آتشزدگی سانحہ: متاثرین کی ’كيوریٹو عرضی‘ خارج، انسل برادران نہیں جائیں گے جیل

سپریم کورٹ نے اپہار سینما آتشزدگی سانحہ میں لاپروائی کے مجرم اورملک کے جانےمانے بلڈر انسل برادران کو بڑی راحت دیتے ہوئے آتشزدگی شکار کی ایسوسی ایشن کی كيوریٹو عرضی خارج کردی ہے۔ اب سشیل انسل اور گوپال انسل کو جیل نہیں جانا پڑے گا۔

دہلی: ڈاکٹر کفیل کی رہائی کے لئے یوپی بھون پر مظاہرہ، جامعہ کے متعدد طلبا پولیس حراست میں

اتر پردیش میں سیاسی اور سماجی کارکنان کے خلاف استعمال کیے جانے والے سخت قوانین کے خلاف جامعہ ملیہ اسلامیہ کے طلبہ نے جمعرات کو یہاں اتر پردیش بھون کا گھیراؤ کرنے کی کوشش کی لیکن پولیس نے انھیں حراست میں لے لیا۔

کیرالہ: وزیر اعلیٰ وجین کا سڑک حادثے میں 20 افراد کی موت پر تعزیت کا اظہار

 کیرالہ کے وزیراعلی پنارائی وجین نے جمعرات کو تمل ناڈو کے تروپور ضلع کے اویناشی کے نزدیک قومی شاہراہ پرایک لاری کے کیرالہ ریاستی ٹرانسپورٹ کارپوریشن (کے ایس آرٹی سی) کی بس سے ٹکرانے کی وجہ سے ہوئے حادثے میں 20 افراد کی موت پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔

نربھیا کیس: مجرم ونے شرما نے خود کو بتایا شدید ذہنی مریض، عدالت میں داخل کی عرضی

نربھیا عصمت دری اور قتل کیس کے قصورواروں میں سے ایک ونے تہاڑ جیل میں اپنے کمرے کی دیوار میں سر مار کر خود کو زخمی کر لیا اور اب عدالت میں عرضی دائر کی ہے کہ اس کی ذہنی حالت ٹھیک نہیں ہے لہٰذا اس کا علاج کروایا جائے۔