مہنگائی بے قابو؛ مرکزی حکومت کی بد انتظامی اور غلط فیصلوں کے خلاف کانگریس کا 10ستمبر کو  ملک گیر سطح پربھارت بند کااعلان

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th September 2018, 9:04 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے | ملکی خبریں |

بھٹکل:8/ستمبر(ایس اؤ نیوز) گذشتہ ساڑھے چار برسوں سے مرکز میں اقتدار پر قابض مرکزی حکومت کی بد انتظامی ،بےشمار غلطیاں اور  غلط فیصلوں کے نتیجے میں روزمرہ کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں ، پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں پر کوئی لگام نہیں ہے۔ مرکزی حکومت کی  مکمل ناکامی کو دیکھتے ہوئے انڈین نیشنل کانگریس نے 10ستمبربروز پیر کو ملک گیر سطح پر بھارت بند میں بند کا اعلان کیاہے۔

ریاستی کانگریس کے ورکنگ صدر ایشور کھنڈرے نے  ہبلی میں پریس کانفرنس کا انعقاد کرتے ہوئے بند کی حمایت میں کہاکہ مرکز کی این ڈی اے قیادت والی مرکزی حکومت  ملک کے عوام سے جھوٹے وعدوں اور اردوں  سے اقتدار پر آئی ہے۔ عوام کو  وہم میں مبتلا کرنے والی مرکزی حکومت  کی  بے شمار غلطیوں کی وجہ سے ملک کی معیشت تباہ و برباد ہوگئی ہے۔ مودی کی رنگین باتوں اور  وعدوں کا دور دور تک پتہ نہیں، جی ایس ٹی، نوٹ بندی ، پٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں سمیت  روزمرہ چیزوں کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ سمیت ان گنت مسائل کو پیدا کرنےو الی مرکزی حکومت ملک میں بدانتظامی کی راست ذمہ دار ہے۔ مرکزی حکومت کے خلاف عوام میں بیداری پیدا کرنے کے لئے پرامن بند کا اعلان کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ کانگریس کی طرف سے رافل ڈیل کے متعلق ستمبر 7سے 15 تک مسلسل احتجاج درج کیا جارہاہے۔ چار ساڑھے  چاربرسوں سے مودی حکومت عوام کو دھوکہ دے رہی ہے۔ نہ بلیک منی واپس ہوئی ، نہ نوٹ بندی سے کوئی فائدہ ہوا، نہ اچھے دن آئے۔ قومی تحفظ کے نام پر ووٹ لے کر محکمہ دفاع میں بہت بڑا گھپلہ کیاگیا ہے۔ بے قصوروں کو قتل کیا جارہاہے۔ کانگریس نے مرکزی حکومت پرراکشھش کی مانند ہونے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ  بی جے پی جذبات کو بھڑکا  کر عوام میں نفرت پھیلا رہی  ہے۔ انہوں نے مرکزی حکومت پر آئی ٹی اور ای ڈی محکمہ جات کا بھی غلط استعمال کرنے کا الزام لگایا۔ 

خیال رہے کہ 10/ستمبر کو بھارت بند کو لے کر مینگلور میں بھی کانگریس کی طرف سے پریس کانفرنس کا انعقاد کرکے مینگلور میں احتجاج کئے  جانے کی بات کہی گئی ہے، اسی طرح ضلع اُتر کنڑا میں بھی ضلعی کانگریس صدر کی طرف سے ضلع بھر میں بند منائے جانے کی تائید کی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کووِڈ اَپ ڈیٹ: ضلع شمالی کینرا میں بھٹکل میں 15 متاثرین سمیت99نئے پوزیٹیو معاملات۔کاروار میں ضلع پنچایت سی ای او کی رپورٹ بھی نکلی پوزیٹیو 

ضلع شمالی کینرا میں بدھ کی شام کو ملنے والی رپورٹ کے مطابق جملہ 99افراد کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے جس میں ضلع پنچایت کے چیف ایکزیکٹیو بھی شامل ہیں۔جبکہ آج 74مریض صحت یا ب ہوکر اسپتال سے ڈسچارج ہوئے ہیں۔

 بھٹکل جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت کی تعمیرروک دی جائے۔ پنچایت اراکین نے کیا اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ 

بھٹکل جالی پٹن پنچایت کے اراکین نے اسسٹنٹ کمشنرکو میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے تحصیلدار نے جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت تعمیر کرنے کا جو کام شروع کیا ہے

اننت کمار ہیگڈے نے لگایابی ایس این ایل میں دیش دروہی افسران موجود ہونے کا الزام

اپنے متنازعہ بیانات کے لئے پہچانے جانے والے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے الزام لگایا کہ بھارت سنچار نگم لمیٹڈ کے اندر دیش دروہی افسران بیٹھے ہوئے جس کی وجہ سے اس کے کام کاج میں کوئی ترقی نہیں ہورہی ہے۔ اس لئے آئندہ دنوں میں اس کی نج کاری (پرائیویٹائزیشن) کیا جائے گا۔

ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا بھٹکل دورہ؛ 23.72کروڑ روپے کے ترقیاتی منصوبوں کو دکھائی ہری جھنڈی

پیر کو رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے بھٹکل کا دورہ کرتے ہوئے  بھٹکل تعلقہ میں ’پردھان منتری گرام سڑک یوجنا‘کے تحت 23.72کروڑ روپے لاگت کے مختلف ترقیاتی منصوبوں کو ہری جھنڈی دکھائی۔ وہ یہاں ماروتی نگر میں بی جے پی تعلقہ آفس کا افتتاح کرنے کے بعد خطاب کررہے تھے۔

کرناٹک میں ایک ہی دن 6257 کورونا پوزیٹیو معاملات ، 86 اموات

کرناٹک میں کورونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ رکنے اور تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر گزرتے لمحے اور دن کے ساتھ کورونا وائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتاجار ہا ہے۔ ریاست میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا متاثرین کی تعداد تشویشناک حد تک اضافہ یکھا جارہا ہے۔ ریاست میں ایک ہی دن ...

کرناٹک: ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحانات ستمبر میں منعقد کئے جائینگے

ایس ایس ایل سی سپلیمنٹری امتحان آئندہ ماہ ستمبر میں منعقد کئے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور دو ایک دن میں امتحان کی تاریخ اور ٹائم ٹیبل کا اعلان کردیا جائے گا۔ یہ بات کرناٹک سکینڈری ایگزامنیشن بورڈ کی ڈائرکٹر وی سو منگلا نے کہی۔

بنگلور میں احتجاجیوں اور پولس کے درمیان زبردست جھڑپ؛ پولس فائرنگ میں دو کی موت؛ فیس بُک پر توہین آمیز پوسٹ پرعوام نے کیا تھا پولس تھانہ کا گھیراو

 فیس بُک پر مبینہ طور پر  پیغمبر اسلام حضرت محمد ﷺ کے خلاف توہین آمیز مسیج پوسٹ کرنے پر سخت برہمی ظاہر کرتے ہوئے بنگلور کے جی ہلی پولس تھانہ کے باہر  جمع ہوکرایک فرقہ کے لوگوں نے جب احتجاج کیا تو یہی احتجاج بعد میں تشدد میں تبدیل ہوگیا جس کے نتیجے میں بتایا جارہا ہے کہ ...

اننت کمار ہیگڈے نے لگایابی ایس این ایل میں دیش دروہی افسران موجود ہونے کا الزام

اپنے متنازعہ بیانات کے لئے پہچانے جانے والے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے الزام لگایا کہ بھارت سنچار نگم لمیٹڈ کے اندر دیش دروہی افسران بیٹھے ہوئے جس کی وجہ سے اس کے کام کاج میں کوئی ترقی نہیں ہورہی ہے۔ اس لئے آئندہ دنوں میں اس کی نج کاری (پرائیویٹائزیشن) کیا جائے گا۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...

کورونا: ہندوستان میں ہلاکتوں کی تعداد 46 ہزار کے پار، 24 گھنٹے میں پھر 60 ہزار سے زائد کیسز درج

ہندوستان میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہرکے درمیان اس جان لیوا وبا سے شفایابی حاصل کرنے والوں کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 56 ہزار سے زیادہ افراد کی شفایابی کے بعد اب تک تقریبا 16.40 لاکھ صحت مند ہوئے ہیں۔