انتخابی نتائج کے بعد ریاستی حکومت کی بنیادیں دہل جائیں گی: یڈیورپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2019, 2:21 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16/مئی(ایس او نیوز) سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا نے کہا ہے کہ لوک سبھاانتخابات کے نتائج کے ظاہر ہوتے ہی ریاستی مخلوط حکومت کی بنیادیں بھی دہل جائیں گی۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ 20 سے زائد کانگریس اراکین اسمبلی وزیراعلیٰ کمار سوامی کی قیادت کو تسلیم کرنے کے لئے قطعاً راضی نہیں ہیں۔ فوری طور پر اگر کانگریس جے ڈی ایس اتحاد ختم نہیں ہوا تو یہ لوگ کانگریس چھوڑ دیں گے ان میں سے چند کانگریس اور جے ڈی ایس اراکین اسمبلی بی جے پی کے ربط میں ہیں۔ انتخابات کے نتائج کے بعد مخلوط حکومت اپنے ہی اختلافات کا شکار ہوکر ختم ہوجائے گی۔ اس مرحلے میں بی جے پی خاموش نہیں بیٹھے گی بلکہ متبادل حکومت قائم کرنے کی کوشش ضرور کرے گی۔جب تک مخلوط حکومت از خود نہیں کر جاتی بی جے پی کی طرف سے اسے گرانے کی کوئی کوشش نہیں کی جائے گی۔ یڈیورپانے کہاکہ انہوں نے کبھی یہ نہیں کہاکہ مخلوط حکومت گرنے کے بعد وہ وزیراعلیٰ بن جائیں گے، اگر موقع ملا تو بنیں گے اگر نہیں ملا تو کوئی بات نہیں۔سینئر کانگریس لیڈر ملیکارجن کھرگے سے وزیراعلیٰ کمار سوامی کی ہمدردی کو دکھاوا قرار دیتے ہوئے یڈیورپانے کہا کہ اگر کھرگے سے کمار سوامی کو اتنی ہی ہمدردی ہے تو وزیراعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے کر کھرگے گو وزیراعلیٰ بنائیں تو ثابت ہوگا کہ وہ دلتوں کے بھی ہمدرد ہیں۔ کندگول اور چنچولی اسمبلی حلقوں اور کلبرگی لوک سبھا سیٹ پر بی جے پی کی کامیابی کا یقین دہراتے ہوئے یڈیورپا نے کہاکہ اس جیت کے ساتھ ریاست میں اقتدار کی تبدیلی بھی ہونے والی ہے۔ قومی سطح پر بی جے پی کو 280 سے 300سیٹیں ملنے کا یقین ظاہر کرتے ہوئے یڈیورپانے کہاکہ مودی کے دوبارہ وزیراعظم بننے میں کسی طرح کے شبے کی گنجائش نہیں ہے۔  

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں موسلادھار بارش سے ٹرافک جام موٹر گاڑیوں پر 25سے زائد درخت گرنے سے شدید نقصان

ہفتہ کی رات تیز ہواؤں کے ساتھ ہوئی موسلادھار بارش سے 25سے زائد درخت کئی گاڑیوں پر گرنے سے کافی نقصان پہنچاہے- ہفتہ کی شام 5بجے شروع ہوئی بارش 6:30بجے شہر کے اہم علاقوں میں کافی تیز ہواؤں کے ساتھ جاری رہی-

بنگلورو سنٹرل حلقہ: بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو گاندھی نگر میں اکثریت

کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ کے اپنے حلقہ گاندھی نگر میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہونے کی بجائے یہاں بی جے پی کو اکثریت ملی ہے- اس حلقہ میں بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو 24,723 ووٹوں کی اکثریت حاصل ہوئی ہے-

خواب وخیال میں بھی نہیں تھا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کانگریس کے حق میں اتنے مایوس کن ہوں گے:دنیش گنڈو راؤ

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی کی شکست کی ذمہ داری میں اپنے سر لیتا ہوں۔ میرے خواب و خیال میں بھی نہیں تھا کہ ہم ریاست میں صرف ایک سیٹ پرکامیابی حاصل کریں گے۔