انتخابی نتائج کے بعد ریاستی حکومت کی بنیادیں دہل جائیں گی: یڈیورپا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2019, 2:21 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16/مئی(ایس او نیوز) سابق وزیراعلیٰ اور ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا نے کہا ہے کہ لوک سبھاانتخابات کے نتائج کے ظاہر ہوتے ہی ریاستی مخلوط حکومت کی بنیادیں بھی دہل جائیں گی۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ 20 سے زائد کانگریس اراکین اسمبلی وزیراعلیٰ کمار سوامی کی قیادت کو تسلیم کرنے کے لئے قطعاً راضی نہیں ہیں۔ فوری طور پر اگر کانگریس جے ڈی ایس اتحاد ختم نہیں ہوا تو یہ لوگ کانگریس چھوڑ دیں گے ان میں سے چند کانگریس اور جے ڈی ایس اراکین اسمبلی بی جے پی کے ربط میں ہیں۔ انتخابات کے نتائج کے بعد مخلوط حکومت اپنے ہی اختلافات کا شکار ہوکر ختم ہوجائے گی۔ اس مرحلے میں بی جے پی خاموش نہیں بیٹھے گی بلکہ متبادل حکومت قائم کرنے کی کوشش ضرور کرے گی۔جب تک مخلوط حکومت از خود نہیں کر جاتی بی جے پی کی طرف سے اسے گرانے کی کوئی کوشش نہیں کی جائے گی۔ یڈیورپانے کہاکہ انہوں نے کبھی یہ نہیں کہاکہ مخلوط حکومت گرنے کے بعد وہ وزیراعلیٰ بن جائیں گے، اگر موقع ملا تو بنیں گے اگر نہیں ملا تو کوئی بات نہیں۔سینئر کانگریس لیڈر ملیکارجن کھرگے سے وزیراعلیٰ کمار سوامی کی ہمدردی کو دکھاوا قرار دیتے ہوئے یڈیورپانے کہا کہ اگر کھرگے سے کمار سوامی کو اتنی ہی ہمدردی ہے تو وزیراعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے کر کھرگے گو وزیراعلیٰ بنائیں تو ثابت ہوگا کہ وہ دلتوں کے بھی ہمدرد ہیں۔ کندگول اور چنچولی اسمبلی حلقوں اور کلبرگی لوک سبھا سیٹ پر بی جے پی کی کامیابی کا یقین دہراتے ہوئے یڈیورپا نے کہاکہ اس جیت کے ساتھ ریاست میں اقتدار کی تبدیلی بھی ہونے والی ہے۔ قومی سطح پر بی جے پی کو 280 سے 300سیٹیں ملنے کا یقین ظاہر کرتے ہوئے یڈیورپانے کہاکہ مودی کے دوبارہ وزیراعظم بننے میں کسی طرح کے شبے کی گنجائش نہیں ہے۔  

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں 8؍جون سے کھلیں گی مساجد، کرناٹک ریاستی اقلیتی کمیشن نے جاری کیں گائیڈ لائن

کرناٹک میں 8؍ جون سے مساجد کے دروازے عوام کیلئے کھلیں گے۔ 2 ماہ سے زائد عرصہ کے بعد مصلیوں کو مسجد میں داخل ہوکر عبادت کرنے کا موقع ملے گا۔ کورونا وائرس کی خطرناک بیماری نے زندگی کے ہر شعبہ کو متاثر کرتے ہوئے عبادتوں میں بھی خلل پیدا کیا ہے۔

کرناٹک ہائی کورٹ کا عجیب و غریب فیصلہ، نفرت آمیز تقاریر پر روک لگانا ممکن نہیں

کرناٹک ہائی کورٹ نے اشتعال انگیز اور نفرت کوہوا دینے والی تقاریر کرنے والوں اور اس کو نشر کرنے والے میڈیا گھرانوں کے خلاف کارروائی کے لئے متعلقہ سرکاری اداروں کو ہدایت دینے کی درخواست کرتے ہوئے دائر کی گئی ایک مفاد عامہ عرضی خارج کردی ہے۔

کرناٹک میں ایک ہی دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو، تین ہزار سے پار ہوا اکڑہ

ریاست کرناٹک میں پیر کے دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو پائے گئے ، جس سے کل تعداد 3408 ہوگئی ۔ 2026 افراد زیر علاج ہیں۔ 110 مریض شفایاب ہو کر رخصت ہوئے ۔ اب تک رخصت ہونے والوں کی تعداد 1328 ہوگئی ہے، 52 ؍ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

کرناٹک کے مختلف شہروں میں یا دوسری ریاست میں پھنسے بھٹکلی افراد اب آسکتے ہیں واپس بھٹکل؛ تنظیم کی طرف سےجاری کی گئیں ہدایات

بھٹکل میں اب چونکہ لاک ڈاون میں ڈھیل دی گئی ہے اور یکم جون سے بھٹکل میں تمام دکانوں اور کاروباری اداروں کو صبح آٹھ سے دوپہر دو بجئے تک کھولنے کی اجازت دی گئی ہے، اس بنا پر ریاست کرناٹک کے مختلف شہروں یا ملک کی دیگر ریاستوں میں پھنسے ہوئے بھٹکلی افراد کے لئے اب بھٹکل واپس آنے کی ...

کیا کرناٹک کے وزیراعلیٰ یڈی یورپا کے خلاف بغاوت کے پیچھے ایک مرکزی وزیر کا ہاتھ ہے؟ کیا ریاست کی کمان کسی اور کو سونپنے کے لئے ہورہی ہیں کوششیں ؟

کرناٹک بی جے پی میں وزیر اعلیٰ یڈی یورپا کے خلاف 27 اراکین اسمبلی کی طرف سے شروع کی گئی بغاوت کو ایک مرکزی وزیر کی طرف سے ہوا دیئے جانے کی اطلاعات سامنے آئی ہیں۔

کرناٹک میں عبادت گاہیں یکم جون نہیں ، 8؍ جون کو کھلیں گی۔ ریاستی حکومت نے سابقہ فیصلہ واپس لیا، مساجد کے متعلق وقف بورڈ سے رہنما خطوط ایک دو دن میں

کرناٹک بھر میں ریاستی حکومت کی طرف سے یہ اعلان کیا گیا تھا کہ چوتھے لاک ڈاؤن 31 ؍ مئی کو ختم ہوتے ہی ریاست بھر میں یکم جون سے تمام عبادگاہوں کو کھول دیا جائے گا۔