شمالی کینرا میں آنند اسنوٹیکر کے بعد شیورام ہیبار نے بھی ماتھے پر لگوایا پارٹی مخالف سرگرمیوں کا داغ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 29th July 2019, 9:35 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل  29/جولائی (ایس او نیوز) ماضی  قریب میں آنند اسنوٹیکر ایڈی یورپا کی قیادت میں بنی حکومت میں وزیر رہتے ہوئے بھی پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہوکر پارٹی سے معطل ہونے والے ضلع شمالی کینرا کے پہلے رکن اسمبلی تھے۔ اب اس فہرست میں یلاپورکے رکن اسمبلی شیورام ہیبار کا نام بھی جڑ گیا ہے، جنہوں نے کانگریس جے ڈی ایس کی مخلوط حکومت کو گرانے کے لئے بغاوت کرنے والے گروپ کا ساتھ دیا تھا۔

سن 2011 میں آنند اسنوٹیکرسمیت بی جے پی کے 11اراکین اسمبلی نے وزیر اعلیٰ ایڈی یورپا کے خلاف عدم اعتماد کا پرچم بلند کیاتھا۔جس کی وجہ سے  انہیں اسمبلی میں حاضر ہونے سے روکنے کے لئے پارٹی سے معطل کیا گیا تھاجبکہ اس مرتبہ ایڈی یورپا کو وزیراعلیٰ بنانے کی سازش کے تحت مخلوط حکومت کو گرانے کا منصوبہ بنانے والے 13اراکین کی رکنیت کو ہی اسمبلی اسپیکر نے باطل ٹھہرانے کا فیصلہ دیا ہے جس میں شیورام ہیبار بھی شامل ہیں۔اس طرح سے وہ اسمبلی کی موجودہ میعاد ختم ہونے تک انتخاب لڑنے کے اہل نہیں رہیں گے۔

 یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ سن  2011  میں ایڈی یورپا کی حکومت کو بچانے کے لئے باغیوں میں شامل بی جے پی کے 11اور 5آزاد امیدواروں کو اس وقت کے اسپیکر بھوپیا نے اسمبلی میں حاضری سے معطل کردیاتھا۔ اس وقت ان اراکین نے ہائی کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹایا تھامگر ہائی کورٹ نے اسپیکرکے فیصلے کو درست قرار دیا تھا۔ اس کے بعد معطل اراکین نے سپریم کورٹ میں اس فیصلے کے خلاف اپیل داخل کی تھی جس پر سماعت کے بعد سپریم کورٹ نے اسپیکر کے فیصلے کو غلط ٹھہراتے ہوئے اسے کالعدم قراردیا تھا۔سپریم کورٹ کی جسٹس التمش کبیر کی بینچ نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ اسپیکر نے اراکین اسمبلی کو دستوری اقدار اور فطری انصاف کے تقاضے پورے کیے بغیر معطل کیا ہے۔ اس کے نتیجے میں ان 16اراکین نے حکومت کی حمایت سے انکار کرتے ہوئے ایڈی یورپا کی حکومت کا خاتمہ کردیا تھا۔

 اس مرتبہ بھی اراکین کی بغاوت میں مخلوط حکومت کا خاتمہ ہوگیا ہے لیکن باغی اراکین کواسپیکر رمیش کمار کی طرف سے نااہل قراردینے کے اقدام کو غیر منصفانہ اورجانبدارانہ اقدام کہتے ہوئے اراکین نے اسے سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس مرتبہ سپریم کورٹ کی طرف سے کس کو راحت ملتی ہے اور کسے مصیبت کا سامنا کرنا پڑتا ہے یہ دیکھنے کے لئے ابھی کچھ دن انتظار کرنا پڑے گا۔
    
 

ایک نظر اس پر بھی

آج 16 پوزیٹیو آنے والوں میں تین دبئی سے اور آٹھ وجے واڑہ سے لوٹے لوگ شامل

بھٹکل کے آج جن 16 لوگوں کی رپورٹ کورونا  پوزیٹیو آئی ہے، اُن میں سے تین لوگ دبئی سے آئے ہوئے لوگ ہیں، آٹھ لوگ وجئے واڑہ ،  تین لوگ  اُترپردیش  اور مہاراشٹرا سے لوٹا ہوا ایک شخص بھی آج کی لسٹ میں شامل ہیں۔

کورونا اَپ ڈیٹ:جنوبی کینرامیں آج صبح سے اب تک ہوئی 2فراد کی موت۔ضلع میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد ہوئی 22

جنوبی کینرا میں کورونا وباء کے اثرات بہت زیادہ سنگین صورت اختیار کرتے جارہے ہیں۔ آج صبح سے اب تک کووِڈ کے 2 مریض موت کا شکار ہوگئے ہیں جس کے بعد ضلع میں وباء کی وجہ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 22ہوگئی ہے۔

بھٹکل میں نجی اسپتال کی نرس کو لگ گیا کورونا کا مرض۔ایس ایس ایل سی کی طالبہ نرس کی بیٹی کو کیا گیا ہوم کوارنٹین

ایک نجی اسپتال میں خدمات انجام دینے والی نرس کو کووِڈ کا مرض لاحق ہونے کے بعدایس ایس ایل سی کا امتحان دے رہی اس کی بیٹی کو امتحان سے باز رکھتے ہوئے ہوم کوارنٹین کیا گیا ہے۔

بھٹکل ٹاؤن، ہیبلے پنچایت اور جالی پنچایت علاقوں میں لاگو رہے گارات کا کرفیو۔سیل ڈاؤن کیے جارہے ہیں ’ہاٹ اسپاٹس‘

بھٹکل تعلقہ میں کورونا وباء کی بدلتی صورتحال پر قابو پانے کے لئے ضلع انتظامیہ نے لاک ڈاؤن قوانین میں دوبارہ کچھ سختی برتنے کافیصلہ کیا ہے۔اسی کے تحت جمعہ کے دن شام میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے عوام کے لئے جو ہدایات جاری کیں اس کے مطابق ...

بھٹکل سے 200 سے زائد تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ؛ 16 کی رپورٹ پوزیٹیو آنے کی خبر

حال ہی میں بھٹکل میں   کورونا کے  جو تازہ معاملات سامنے آئے ہیں، اُس  میں مزید اضافہ کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  اب تک 184 لوگوں کے نمونے جانچ کے لئے روانہ کئے گئے ہیں جس میں سے بعض کی رپورٹ آچکی ہیں، اور بعض کی رپورٹس شام تک    آنے کی توقع ہے۔

بھٹکل میں ہیسکام کے بجلی بل کی ادائیگی کو لے کر تذبذب : حساب صحیح ہے، میٹر چک کرلیں؛افسران کی گاہکوں کو صلاح

تعلقہ میں لاک ڈاؤن کے بعد  ہیسکام محکمہ کی طرف سے جاری کردہ بجلی بلوں  کو لے کر عوام تذبذب کا شکار ہیں۔ ہاتھوں میں بل لئے ہیسکام دفتر کاچکر کاٹنے پر مجبور ہیں، کوئی مطمئن تو کوئی بے اطمینانی کا اظہار کرتے ہوئے پلٹ رہاہے۔ بجلی بل ایک  معمہ بن گیا ہے نہ سمجھ میں آر ہاہے نہ سلجھ ...

”مر کے بھی چین نہ پایا تو کدھر جائیں گے“ ۔۔۔۔۔ از:مولانا محمدحسن غانم اکرمیؔ ندوی ؔ

   اگر تمھارے پاس کوئی شخص اپنی امانت رکھوائے،اورایک متعینہ مدت کے لئے وہ تمھارے پاس رہے،کیا اس دوران اس چیز کا بغیر اجازت اور ناحق تم استعمال کروگے،کیا ا س میں اپنی من مانی کروگے؟یا چند دن آپ کے پاس رہنے سے وہ چیز تمھاری ہو جائے گی کہ جب وقت مقررہ آجائے اور مالک اس کی فرمائش ...