بنگلورو سلک بورڈ جنکشن راہگیروں کے لئے خطرناک

Source: S.O. News Service | Published on 19th February 2020, 11:45 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،19/فروری(ایس او نیوز) الیکٹرانک سٹی اور شرجاپور میں واقع اپنے دفاتر کو جانے کے لئے بسوں کو پکڑنے کے لئے فٹ پاتھوں پر پیدل چلنے اور سلک بورڈ جنکشن کا استعمال کرنے والے ٹیکیوں کا کہنا ہے کہ، یہاں کی سڑکوں پر سے پیدل چل کر جانا ایک خطر ناک معاملہ ہوتا ہے۔راہگیروں کا کہنا ہے کہ یہاں مناسب فٹ پاتھ بھی نہیں پائے جاتے، جس کی وجہ سے لوگ بھاری ٹرافک اژدہام کا شکار چوراہے کی اصل سڑکوں پر اتر کر چلنے کے لئے مجبور ہو تے ہیں، اس پر تکلیف دہ بات یہ ہے کہ اکثر لوگ یہاں سڑک کے کنارے کی جگہوں کو کھلے میں پیشاب پاخانہ کرنے کے لئے بھی استعمال کرتے ہیں، اس کے علاوہ قریب ہی موجود کھلے ہوئے گندے پانی کے نالے سے نکلنے والی بد بو بھی لوگوں کو پریشان کرتی ہے۔اگست 2019 میں فٹ پاتھوں کی دیکھ بھال کے لئے خاص طور پر 33 لاکھ روپیوں کا بجٹ جاری کیا گیا تھا، وارڈ کے کارپوریٹر نے کہا ہے کہ اس سلسلہ میں کام کا آغاز جلد ہی ہوگا، اسی کے ساتھ یہاں موجود برساتی نالے کو بھی کیچڑ اور گاد وغیرہ سے صاف کیاا جا رہا ہے، الیکٹرانک سٹی میں کا م کرنے والے ایک ٹیکی پنا گپتا جو روزانہ مڈیوال سے بس پر سوار ہوتے ہیں کا کہنا ہے کہ ”چونکہ یہاں مناسب فٹ پاتھ نہیں پائے جاتے، ہم اصل سڑک پر اتر کر چلنے کے لئے مجبور ہوتے ہیں، کئی مرتبہ گاڑیوں سامنے کی جانب سے تیز رفتاری کے ساتھ آتی ہیں اور یہ بہت ہی زیادہ خطرناک ہوتا ہے، برساتی نالے کو کھلا چھوڑ دیا گیا ہے اور کئی مقامات پر ریلنگس بھی ٹوٹی ہوئی ہیں ٹوٹی ہوئی پتھر کی سلوں اور زمین سے باہر نکلی ہوئی لوہے کی سلاخوں کی وجہ سے میں خود بھی دو تین مرتبہ زخمی ہو گیا تھا، چونکہ اس مقام پر روشنی کے بلب بھی نہیں پائے جاتے رات کے اوقات میں اس سڑک پر سے گزر نا اور بھی زیادہ مشکل ہو جاتا ہے“۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا وائرس کی روک پر لاک ڈاؤن بے اثر ؛ کرناٹک میں ایک ہی 1925 پوزیٹیو کیس، 37؍اموات

ریاست کرناٹک میں کل ایک ہی دن کورونا وائرس کی زد میں آکر 38 مریض ہلاک ہوگئے جبکہ 1925 کووڈ معاملات کا پتہ چلا ہے۔ کرناٹک میں بھی کورونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ رکنے اور تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر گزرتے لمحے اور دن کے ساتھ کورونا وائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے،

کورونا سے متاثر ہو کرمرنے والوں کی تدفین میں رکاوٹ درست نہیں، لاک ڈاؤن ہو یا نہ ہو اپنے آپ احتیاط برت کر وائرس سے بچنے کی کوشش کریں: ضمیر احمد خان

شہر بنگلورو میں کورونا وائرس کے کیسوں کی تعداد میں جس طرح کا بے تحاشہ اضافہ ہو رہا ہے اسی رفتار سے اس مہلک وباء کی زد میں آکر مرنے والوں کی تعداد میں بھی اضافہ ہو تا جارہا ہے۔ اس وباء کا شکار ہو کر مرنے والے افراد کی تدفین اور دیگر آخری رسومات کے لئے عالمی صحت تنظیم کی طرف سے جو ...

کوروناکاقہر جاری،کرناٹک میں ایک ہی دن 21اموات، 24گھنٹوں کے دوران بنگلورومیں 994سمیت جملہ 1694کووڈکاشکار

ریاست میں آج ایک ہی دن کوروناوائرس کی زدمیں آکر21مریض ہلاک ہوگئے جبکہ 1694 کووڈمعاملات کا پتہ چلاہے۔ کرناٹک میں بھی کوروناوائر س کاخوفناک پھیلاؤ رکنے اورتھمنے کا نام نہیں لے رہاہے،ہرگزرتے لمحے اوردن کے ساتھ کوروناوائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتاجارہاہے،