ملک میں کورونا کیسز کی مجموعی تعداد 54 لاکھ سے تجاوز، اب تک 86 ہزار سے زیادہ ہلاک

Source: S.O. News Service | Published on 20th September 2020, 9:17 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،20؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) ملک میں خوفناک عالمی وبا کورونا وائرس کے بڑھتے قہر کے درمیان گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران وبا کے 92 ہزار سے زائد نئے کیسز کی آمد کے بعد متاثرین کی مجموعی تعداد 54 لاکھ سے تجاوز کر گئی جبکہ اسی عرصہ میں 94 ہزار سے زائد مریض شفایاب ہوئے ہیں۔

اتوار کے روز وزارت صحت اور خاندانی بہبود کی جانب سے جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں 92605 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، جس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 54،00،619 ہو گئی جبکہ جان لیوا کورونا وائرس سے نجات حاصل کرنے والے افراد کی تعداد 94،612 کے اضافے سے مجموعی تعداد 43،03،043 ہے۔ اسی عرصے کے دوران 1133 مریض فوت ہوئے جس سے ملک میں ہلاک شدگان کی تعداد 86،752 ہو چکی ہے۔

اعدادوشمار کے مطابق ایکٹیو کیسز کی تعداد میں کمی کے ساتھ اب یہ تعداد 10،10،824 رہ گئی ہے۔ ملک کی 15 ریاستوں اورمرکز کے زیر کنٹرول علاقوں میں ہی فعال کیسز کم ہوئے ہیں ، جن میں سب سے زیادہ مہاراشٹر میں 3407 ،اس کے بعد آندھرا پردیش میں 2660 اور کرناٹک میں 2565 ہیں۔ ملک میں ایکٹیو کیسز کی شرح 18.72 فیصد، شفایابی کی شرح 79.68 فیصد جبکہ اموات کی شرح 1.61 فیصد ہے۔

ملک میں کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ریاست مہاراشٹر ہے جہاں کورونا کے سب سے زیادہ متاثرین ہیں۔ یہاں فعال کیسز کی تعداد میں 3407 کی کمی سے مجموعی تعداد 2،97،866 اور 425 افراد کی ہلاکت سے یہ تعداد 32،216 ہوگئی ہے۔ اسی عرصے کے دوران کورونا کے 23،501 مریض شفایاب ہوئے ہیں ، جس سے صحت مند افراد کی مجموعی تعداد 8،57،933 ہوگئی۔ ملک میں سب سے زیادہ ایکٹیو کیسز اسی ریاست میں ہیں۔

گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک کی جنوبی ریاست کرناٹک میں کورونا کے 2565 مریضوں کی کمی واقع ہوئی ہے اور ریاست میں اب 98،583 سرگرم کیسز رہ گئےہیں۔ ریاست میں اموات کی تعداد اب 7922 تک جا پہنچی ہے اور اب تک 4،04،841 افراد شفایاب ہوچکے ہیں۔ ریاست آندھرا پردیش میں اس عرصے کے دوران 2660 مریضوں کی کمی کے ساتھ ایکٹیو کیسز کی تعداد 81،763 رہ گئی۔ ریاست میں اب تک 5302 افراد ہلاک ہوچکے ہیں، وہیں 5،30،711 افراد جان لیوا وبا سے شفایاب ہوئے ہیں۔

آبادی کے لحاظ سے ملک کی سب سے بڑی ریاست اترپردیش میں اسی عرصے کے دوران 951 مریض کم ہوئے ہیں ، جس سے ایکٹیو کیسز 66،874 رہ گئے ۔ ریاست میں اب تک 4953 ہلاک جبکہ 2،76،690 مریض ٹھیک ہوئے ہیں۔

ریاست تمل ناڈو میں سرگرم کیسز کی تعداد 46،453 ہوگئی ہے اوراب تک 8751 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ وہیں اس ریاست میں 4،81،273 افراد کورونا سے شفایاب ہوچکے ہیں۔ ریاست کیرالہ میں فعال کیسز کی تعداد 37،535 ہوگئی ہے اور 519 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں جبکہ صحت مند افراد کی تعداد بڑھ کر 92،951 ہوچکی ہے۔ ریاست اوڈیشہ میں فعال کیسز کی تعداد 33،202 ہوگئی ہے اور 691 افراد ہلاک ہوچکے ہیں جبکہ جان لیوا وبا سے شفایابی حاصل کرنے والوں کی تعداد 1،41،657 ہوگئی ہے۔

اسی عرصے کے دوران دارالحکومت دہلی میں ایکٹیو کیسز کی تعداد 186 سے کم ہوکر 32،064 رہ گئی ہے۔ وہیں مہلک وائرس کی زد میں آنے سے ہلاک شدگان کی تعداد4945 تک ہوچکی ہے اور اب تک 2،05،890 مریض شفایاب ہوچکے ہیں۔

ریاست تلنگانہ میں کورونا کے 30،573 فعال کیسز ہیں اور 1033 افراد کی موت ہوچکی ہے جبکہ 1،39،700 افراد اس وبائی مرض سے شفایاب ہوئے ہیں۔ ریاست مغربی بنگال میں کورونا وائرس کے 24،648 فعال کیسز ہیں اور 4298 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں ، جبکہ اب تک 1،93،014 افراد شفایاب ہوئے ہیں۔ ملک کی شمالی ریاست پنجاب میں فعال کیسز کی تعداد بڑھ کر 22،399 ہوگئی ہے اور جان لیوا وبا سے نجات حاصل کرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 70،373 ہوگئی ہے جبکہ اب تک 2757 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران اس ریاست میں مزید 2627 نئے کیسز کی رپورٹ کے ساتھ یہاں کورونا متاثرین کی مجموعی تعداد 1،03،065 ہوگئی ہے۔ یہاں فعال کیسز کی تعداد 21،964 ہے اور 79،158 مریض صحت یاب ہوئے ہیں جبکہ 1943 افراد اس وبا سے ہلاک ہوئے ہیں۔

ریاست گجرات میں 16،022 کیسزہیں اور 3302 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ 1،02،444 کورونا مریض اس وبا سے شفایاب ہوئے ہیں۔ ریاست بہار میں 12،629 فعال کیسز ہیں جبکہ 861 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ ریاست میں ابھی تک 1،53،298 کورونا مریض جان لیوا وبا سے شفایایب ہوئے ہیں۔

جان لیوا اور خوفناک وائرس کووڈ19 سے راجستھان میں 1322 ، ہریانہ میں 1120 ، جموں و کشمیر میں 987 ، جھارکھنڈ میں 615 ، چھتیش گڑھ میں 664، آسام میں 648 ، اتراکھنڈ میں 478 ، پڈوچیری میں 462 ، گوا میں 342 ، تری پورہ میں 239 ، چنڈی گڑھ میں 119 ، ہماچل پردیش میں 116 ، منی پور میں 55 ، انڈمان نکوبار جزائر میں 52 ، لداخ میں 49 ، میگھالیہ میں 36 ، سکم میں 25 ، ناگالینڈ میں 15 ، اروناچل پردیش میں 13 اور دادر نگر حویلی اور دمن دیو میں دو افراد کی موت ہوچکی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی حکومت سے ناراض محبوبہ مفتی نے کہا "ہم خاموش بیٹھنے والے نہیں، طاقت ہے تو چین کو نکالو"

 پی ڈی پی صدر و سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ مرکزی حکومت جموں و کشمیر کے لوگوں پر طاقت آمائی کرتی ہے جبکہ چین کا نام لینے سے بھی تھرتھراتی ہے جس نے لداخ میں ہماری زمین ہڑپ لی ہے

مونگیر تشدد: بی جے پی-جے ڈی یو حکومت سے کانگریس نالاں، پی ایم مودی سے مانگا جواب

بہار میں اسمبلی انتخاب کے درمیان مونگیر شہر میں دو دن پہلے پولس فائرنگ میں ایک نوجوان کی موت کے بعد آج ایک بار پھر شہر میں ہنگامہ ہونے پر کانگریس نے نتیش حکومت کے ساتھ ساتھ پی ایم مودی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

آن لائن جوے، گیمنگ، سٹہ کی ویب سائٹوں اور ایپس پر روک لگائی جائے: جگن موہن ریڈی

اے پی کے وزیراعلی وائی ایس جگن موہن ریڈی نے مرکزی وزیر الکٹرانکس و انفارمیشن ٹیکنالوجی روی شنکر پرساد سے اپیل کی ہے کہ وہ انٹرنیٹ سروس خدمات فراہم کرنے والوں کو ہدایت دیں کہ وہ تمام آن لائن جوے، گیمنگ، سٹہ کی ویب سائٹس اور ایپس کو ریاست میں بلاک کر دیں۔