میکسیکو میں فائرنگ سے 9 امریکی شہری ہلاک

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 6th November 2019, 5:15 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نیویارک/6نومبر (آئی این ایس انڈیا) میکسیکو میں مسلح افراد کے حملے میں نو امریکی شہری ہلاک ہوگئے ہیں۔ ہلاک ہونے والے تمام افراد عورتیں اور بچے تھے جب کہ میکسیکو میں حالیہ برسوں کے دوران امریکی شہریوں پر ہونے والا یہ سب سے ہلاکت خیز حملہ ہے۔ہلاکتوں کے بعد امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پڑوسی ملک میکسیکو کی حکومت کو منشیات کا دھندہ کرنے والے گروہوں کے خلاف مشترکہ کارروائی کرنے کی پیش کش کی ہے۔

قیاس ظاہر کیا جارہا ہے کہ امریکی شہریوں پر اس حملے میں منشیات فروش گروہ ہی ملوث تھے۔ہلاک ہونے والوں میں چھ بچے بھی شامل تھے۔برطانوی خبر رساں ادارے 'رائٹرز' کے مطابق میکسیکو کی ریاست چیہواہوا اور سونورا ریاستوں کی سرحد پر پیر کو ہونے والے حملے میں ہلاک ہونے والے افراد کا تعلق چار مختلف خاندانوں سے تھا جو کئی عشرے قبل امریکہ سے ہجرت کرکے شمالی میکسیکو کی پہاڑیوں اور میدانی علاقوں میں آباد ہوگئے تھے۔سوشل میڈیا پر پوسٹ کی جانے والی ایک ویڈیو میں گولیوں سے چھلنی گاڑی اور اس سے نکلنے والے دھویں کو دیکھا جاسکتا ہے جس میں فائرنگ سے ہلاک ہونے والے بعض مقتولین سوار تھے۔

واقعے کے بعد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایک ٹوئٹ میں کہا ہے کہ یہ وقت ہے کہ میکسیکو، امریکہ کے ساتھ مل کر منشیات کا دھندہ کرنے والے گروہوں کے خلاف کارروائی کرے اور انہیں صفحہ ہستی سے مٹا دے۔ہلاک ہونے والے افراد میں سے ایک کے رشتے دار نے سانحے کو قتلِ عام قرار دیا ہے اور دعویٰ کیا ہے کہ ان کے خاندان کے افراد کو زندہ جلایا گیا۔ ہلاک ہونے والے افراد کے ایک رشتے دار جولین لیبارون نے بتایا ہے کہ مقتولین میں چار لڑکے، دو لڑکیاں اور تین خواتین شامل تھیں۔ان کے بقول حملے کے دوران کئی بچے اپنی جانیں بچانے کے لیے موقع سے فرار ہوگئے تھے جن کا سراغ کئی گھنٹوں کی تلاش کے بعد ملا۔لیبارون کا مزید کہنا تھا کہ انہیں نہیں معلوم کہ یہ حملہ کس نے کیا ہے لیکن ان کے بقول انہیں دھمکیاں مل رہی تھیں۔

واقعے میں زخمی ہونے والے پانچ بچوں کو بذریعہ جہاز امریکی ریاست ایریزونا کے شہر ٹکسن کے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔میکسیکو کے وزیر برائے سکیورٹی الفونسو دورازو کا کہنا ہے کہ واقعے میں ہلاک ہونے والے نو افراد متعدد جیپوں میں سفر کر رہے تھے اور ہوسکتا ہے کہ وہ غلطی سے نشانہ بن گئے ہوں۔الفونسو کے بقول علاقے میں منشیات کا دھندا کرنے والوں کے درمیان جھڑپیں ہوتی رہتی ہیں جن میں وہ ایک دوسرے کو نشانہ بناتے ہیں۔رائٹرز کے مطابق ہلاک ہونے والے افراد کے خاندان اور علاقے میں منشیات کا کاروبار کرنے والے گروہوں کے درمیان اس سے قبل تنازعات پیدا ہوتے رہے ہیں اور مقتولین کے رشتے داروں کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے شناخت کے بعد ہی انہیں نشانہ بنایا۔ہلاک ہونے والے تمام افراد کے پاس امریکی شہریت تھی جب کہ ان میں سے بعض میکسیکو کی دہری شہریت بھی رکھتے تھے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

نیوزی لینڈ: زلزلہ نے وزیراعظم جیسنڈا آرڈرن کو بنایا عوامی توجہ کا مرکز

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق انتہائی پرسکون انداز میں ٹی وی میزبان Ryan Bridge کے پروگرام Newshub AM Show کرونا سے نمٹنے سے متعلق مباحثے کے دوران زلزلے کے جھٹکے شروع ہوئے اور کیمرے میں دکھائی دینے والی چیزیں حرکت کرنے لگیں۔

مزدور پیدل نہ جائیں، سب کے لئے مفت ریل سفر کے انتظامات: منیش سسودیا

  دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے تارکین وطن مزدوروں سے پیدل سفر نہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ دہلی حکومت نے تمام مفت ریل سفروں کا انتظام کیا ہے۔ 7 مئی سے 25 مئی تک ، 2،41،169 افراد کو 196 ٹرینوں کے ذریعے ان کے گھر بھیج دیا گیا ہے۔ بہار میں سب سے زیادہ 1،25،711 افراد ہیں ...

بھٹکل میں خدمات انجام دینے والے کورونا کے خصوصی آفسر ڈاکٹر شرتھ نائیک اب ہوں گے ضلع ہیلتھ آفسر

بھٹکل میں کورونا وباء پر قابو پانے کے لئے کاروار سے ڈاکٹر شرتھ نائیک کو بھٹکل روانہ کرکے انہیں نوڈل آفسر کی ذمہ داری سونپی گئی تھی، اُنہیں اب ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفسر کے طور پر نامزد کیا گیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفسر کے طور پرخدمات انجام دینے والے  ڈاکٹر ...