جے پور:6 سالہ بچی کے ساتھ زیادتی، اسی کے سکول بیلٹ سے گلا گھونٹ کر قتل کردیا گیا

Source: S.O. News Service | Published on 1st December 2019, 11:31 PM | ملکی خبریں |

جے پور،یکم دسمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) حیدرآباد میں گینگ ریپ معاملے کے بعد سے ملک میں غم و غصہ کا ماحول ہے۔ادھر اتر پردیش کے ہردوئی میں ریپ کے بعد قتل، تمل ناڈو کے کویبٹور میں سالگرہ منانے کے بعد لوٹتے وقت گینگ ریپ، یوپی کے ہی بدایوں میں پی آرڈی نوجوان کی طرف سے مبینہ آبروریزی کے واقعات نے اور احساس پیدا کر دیا ہے۔اب خبر آئی ہے راجستھان کے ٹونک ضلع سے، جہاں ایک محض 6 سال کی بچی سے آبروریزی کرکے اسے قتل کر دیا گیا۔علی گڑھ تھانہ علاقہ میں ہوئے اس واقعہ کے بعد پولیس نے کیس درج کر معاملے کی جانچ شروع کر دی ہے۔پولیس کے مطابق نابالغ بچی کے گلے پر اس کا اسکول بیلٹ ملا تھا، جس کا استعمال قتل میں کیا گیا۔پولیس نے بتایا کہ ہفتہ کو 6 سالہ طالبہ کے اسکول سے گھر نہیں پہنچنے پر گھر والوں نے اسے تلاش کرنا شروع کیا تھا۔اس دوران پولیس نے اس کی لاش علی گڑھ قصبے کے کھیڑلی گاؤں کے جنگل میں جھاڑیوں کے پاس سے برآمد کی۔علی گڑھ تھانے کے انسپکٹر رام کرشن سے بتایا کہ ابتدائی تحقیقات میں پتہ چلا ہے کہ طالبہ کی آبروریزی کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کر دیا گیا،لاش کا پوسٹ مارٹم کرانے کے بعد اس کے گھر والوں کے حوالے کر دیا گیا،اس کے بعد اس کی آخری رسومات اداکی گئی۔انہوں نے بتایا کہ ملزم کی پہچان اور اس کی تلاش کی کوششیں کی جا رہی ہیں۔پولیس انسپکٹر نے کہاکہ بچی ایک سرکاری اسکول میں پڑھتی تھی،لڑکی اسکول یونیفارم میں ہی تھی اور اس کے گلے پر اس اسکول بیلٹ تھا، جس سے گلا گھونٹ کر اس کا قتل کیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کو ’سی اے اے‘ کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا: یشونت سنہا

بی جے پی کے سابق سینئر رہنما یشونت سنہا نے شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) کے حوالہ سے ’بھگوا پارٹی‘ پر حملہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی نے اس قانون کو بلا ضرورت ملک پر مسلط کرنے کی کوشش کی ہے اور اس کا اس کا خمیازہ اسے جلد بدیر بھگتنا پڑے گا۔

سی اے اے پر ہائی کورٹ کا اہم فیصلہ، پولیس تشدد کے تمام معاملات کی سماعت کیلئے خصوصی بنچ تشکیل دینے کی ہدایت

شہریت ترمیمی قانون کے خلاف یوپی میں ہونے والے احتجاجی مظاہروں میں پولیس فائرنگ اور احتجاجی عوام کو تشدد کا نشانہ بنائے جانے کے معاملے میں الہ آباد ہائی کورٹ نے اہم فیصلہ کیا ہے۔