تمل ناڈو واقع پاور پلانٹ میں زبردست دھماکہ، 6 افراد ہلاک، 17 زخمی

Source: S.O. News Service | Published on 1st July 2020, 9:37 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

چنئی،یکم جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) تمل ناڈو سے ایک اندوہناک حادثہ کی خبریں سامنے آ رہی ہیں جس کے مطابق ایک پاور پلانٹ میں دھماکہ کی وجہ سے کئی لوگوں کی موت ہو گئی اور کئی زخمی افراد کو سنگین حالت میں علاج کے لیے داخل اسپتال کیا گیا ہے۔ میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق تمل ناڈو کے کڈالور ضلع واقع نیویلی پاور پلانٹ میں بوائیلر اسٹیج-2 میں دھماکہ ہونے کی وجہ سے کم و بیش 6 افراد کی موت ہو گئی ہے۔ اس حادثہ میں 17 افراد کے زخمی ہونے کی بھی اطلاع ملی ہے جن میں سے کچھ کی حالت انتہائی سنگین ہے۔

قابل ذکر ہے کہ کڈالور راجدھانی چنئی سے تقریباً 180 کلو میٹر دور واقع ہے۔ 7 یونٹس میں 1470 میگاواٹ بجلی کا پروڈکشن ہوتا ہے۔ ایک برائیلر میں اچانک دھماکہ ہو گیا، جس سے بڑے پیمانے پر آگ لگ گئی۔ فی الحال آگ پر قابو پانے کی کوششیں جاری ہیں۔ یہاں قابل غور ہے کہ دو مہینے کے اندر ضلع میں یہ دوسرا اندوہناک واقعہ ہے۔ اس سے پہلے ایل جی پالیمر کیمیکل پلانٹ میں 7 مئی کو گیس رساؤ ہو گیا تھا جس میں کم از کم 12 لوگوں اور کئی مویشیوں کی موت ہو گئی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا: ہندوستان میں ہلاکتوں کی تعداد 46 ہزار کے پار، 24 گھنٹے میں پھر 60 ہزار سے زائد کیسز درج

ہندوستان میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہرکے درمیان اس جان لیوا وبا سے شفایابی حاصل کرنے والوں کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 56 ہزار سے زیادہ افراد کی شفایابی کے بعد اب تک تقریبا 16.40 لاکھ صحت مند ہوئے ہیں۔

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...