منگلورو:پی ایف آئی کے ذریعے باوقار طریقے سے کورونا سے ہلاک ہونے والوں کی تدفین۔ میڈیا میں ہورہی ہے ستائش

Source: S.O. News Service | Published on 6th July 2020, 9:03 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

منگلورو،6؍جولائی (ایس او نیوز) آج جبکہ ریاست کے کئی مقامات پر کورونا سے موت کا شکار ہونے والوں کی میت دفن کرنے یاغیر مسلموں میں چتا پر جلانے کے سلسلے میں بڑی دشواریاں  پیش آ رہی ہیں اور سرکار ی طورپر اس کام  کے لئے تعینات کیے گئے کارندوں کی طرف سے غیر انسانی طریقے سے لاشوں کو گڈھوں میں پھینکنے کی ویڈیو کلپس وائرل ہورہی ہیں۔

ایسے ماحول میں پا پولر فرنٹ آف انڈیا کے تربیت یافتہ نوجوانوں کی ٹیمیں مرنے والوں کی آخری رسومات باوقار طریقے سے انجام دینے میں مصروف ہیں۔ منگلورو میں دو چار دن قبل میت کی تدفین کا جو ویڈیو وائرل ہوا ہے اس کی ستائش ہرطبقے کی جانب سے کی جارہی ہے۔ سب سے بڑ ھ کر الیکٹرانک میڈیا نے اسے سراہتے ہوئے اس پر خصوصی خبر بھی نشر کی ہے۔ 

پی ایف آئی کے ریاستی سیکریٹری کے اشرف نے بتایا کہ ریاست کے مختلف مقامات پر پی ایف آئی  کی ٹیمیں اس کام کے لئے سرگرم ہوگئی ہیں۔ ان سب کو مہاراشٹرا کے ذمہ دار اشرف انکجال نے تدفین اور آخری رسومات کی خصوصی تر بیت دی ہے، جو کہ پی ایف آئی کی نیشنل کمیٹی کے رکن ہیں۔ جب کسی لاش کو ایمبولینس میں اسپتال سے باہر نکالاجاتا ہے تو پی ایف آئی کی تربیت یافتہ ٹیم اس کے پیچھے قبرستان تک یاشمشان گھاٹ تک جاتی ہے اور مرنے والے کے مذہب کے مطابق آخری رسومات ادا کردی جاتی ہیں۔    

منگلورو میں مسلمانوں کی لاشوں کوپہلے زینت بخش مسجد سے متصل قبرستان میں دفنانے کا منصوبہ بنایا گیا تھا مگر بارش کی وجہ سے یہاں پر بہت زیادہ گہرا گڈھا کھودنا ممکن نہ ہونے کی وجہ سے دوسرے قبرستان میں میت لے جاتے ہیں۔ وہاں پر حکومت کے تمام پروٹوکول کی رعایت کرتے ہوئے پرسنل پروٹیکشن کٹ کے ساتھ پی ایف آئی کے نوجوان میت کو غسل دینے کے بجائے تیمم کرکے نمازہ جناز ہ اداکرتے ہیں۔ پھر ایک بہت ہی بڑے اور لمبے سفید کپڑے میں میت کو رکھ کر پورے اطمینان اور احترام کے ساتھ قبر میں اُتارتے ہیں۔ اگر میت کسی غیر مسلم کی ہوتو بولار کے بجلی سے چلنے والی چتا والے شمشا ن میں لے جاکر سرکاری افسران کی موجودگی میں لاش کو جلانے کاکام بھی یہی نوجوان انجام دیتے ہیں۔جنوبی کینرا میں جو ٹیم سرگرم ہے اس کے نوجوانوں کو ضلع انتظامیہ کی نگرانی میں وینلاک اسپتال میں امراض جلد کے ماہر ڈاکٹر نوین کمار نے تربیت دی ہے۔اب تک اس ٹیم نے ضلع میں 8 لاشوں کی آخری رسومات ادا کی ہیں۔ریاست کے 20اضلاع میں 80  ٹیمیں ترتیب دی گئی ہیں۔کسی بھی جگہ پر کورونا سے فوت ہونے والے شخص کی لاش کی آخری رسومات انجام دینے کا مسئلہ پیدا ہوجائے تو پھر ایک فون کال پر ہی پی ایف آئی کورونا واریئررس کی ٹیم اپنی خدمات پیش کرنے کے لئے حاضر ہوجاتی ہے۔پورے ملک میں پی آئی ایف کی ٹیموں نے اب تک 350 سے زیادہ لاشوں کی آخری رسومات انجام دی ہیں جس میں سب سے زیادہ معاملے مہاراشٹر ا کے ہیں۔ اور یہ سلسلہ جاری ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ساحلی کرناٹکا میں موسلادھار بارش؛ انکولہ ۔یلاپور ہائی وے پانی میں ڈوب گیا؛ چلتی کار پرردرخت گرنے سے کاروار کا ایک شخص ہلاک؛ ہوناور کے ولکی میں پانی کمپاونڈوں میں گھس گیا

ساحلی کرناٹکا میں گذشتہ تین چار دنوں سے زوردار بارش کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں مختلف علاقوں سے نقصانات کی خبریں آرہی ہیں۔  یلاپور سے ملی اطلاع کے مطابق زبردست بارش کے نتیجے میں انکولہ۔یلاپور ہائی وے  پانی میں ڈوب  گیا ہے۔ یہ سڑک بند ہوجانے سے   انکولہ۔ ہبلی نیشنل ہائی ...

بھٹکل: مرڈیشور میں علاج نہ ملنے سے مریض کی موت۔ ڈاکٹر کے خلاف کارروائی کے لئے اے سی کو دیا گیا میمورنڈم

دل کا دورہ پڑنے پر مریض کو کورونا وباء کے شک میں مرڈئشور سرکاری اسپتال میں علاج کی سہولت فراہم نہ کرنے سے موت واقع ہونے کا الزام لگاتے ہوئے مریض کے گھروالوں کے علاوہ مقامی افراد نے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کو میمورنڈم دیا جس میں سرکار ی ڈاکٹر کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کیاگیا ...

کاروار؛ شمالی کینرا میں چار طلبہ نے پاس کیا سول سروس امتحان؛ ضلع میں پہلی مرتبہ 2لڑکیوں کو بھی ملی کامیابی

یونین پبلک سروس کمیشن(یو پی ایس سی) کے تحت منعقد کیے جانے والے امتحان میں امسال شمالی کینرا سے کُل 4طلبہ نے کامیابی حاصل کی ہے۔ جس میں شمالی کینرا کی تاریخ میں پہلی مرتبہ 2لڑکیاں بھی شامل ہیں۔

بھٹکل میں طوفانی ہواوں کے ساتھ زوردار بارش؛ کئی درخت اُکھڑ گئے، الیکٹرک ٹرانسفارمر سمیت کئی کھمبوں کو نقصان؛ بجلی کی انکھ مچولیاں

بھٹکل میں آج منگل صبح سے طوفانی ہواوں کے ساتھ زور دار بارش کے نتیجے میں کئی علاقوں میں درختوں کے اُکھڑنے کے ساتھ ساتھ بجلی کے کھمبوں کے گرنے اور کئی مقامات پر الیکٹرک ٹرانسفارمر کو نقصان پہنچنے کی اطلاعات موصول ہوئیں جس کی وجہ سے پورا دن  بجلی کی انکھ مچولیاں جاری رہیں۔

بھٹکل میں پرائمری کوویڈ کیئر سینٹرکا خوبصورت افتتاح؛ اب سانس لینے میں تکلیف یا اکسیجن میں کمی پائی جانے پربھٹکل میں ہی فوری ابتدائی علاج ممکن

کوویڈ وبا کے بعد حال ہی میں کئی لوگوں کو سانس لینے میں تکلیف اوربدن میں اکسیجن کی کمی کی وجہ  سے مینگلور شفٹ کیا گیا تھا، بعض لوگوں نے اس دوران  دم بھی توڑ دیا، جبکہ کئی لوگ  صحت مند ہوکر واپس آنے میں کامیاب ہوگئے،  ایک طرف عوام کورونا کے بڑھتے معاملات سے پریشان ہیں تو وہیں ...

بھٹکل: ایم ایل اے سنیل نائک کے ہاتھوں سرکاری فرسٹ گریڈ کالج کا سنگ بنیاد

بھٹکل میں سرکاری فرسٹ گریڈ کالج کی اپنی کوئی عمارت نہیں تھی اور اب تک کرایے کی عمارت میں طلبہ کی پڑھائی انجام دی جارہی ہے۔ اس کالج کی اپنی عمارت کے لئے منظور شدہ سرکاری منصوبہ کافی عرصے سے التوا میں پڑا ہوا تھا۔اب بھٹکل جالی پنچایت کے تلگیرے میں 6.7 ایکڑ زمین پر فرسٹ گریڈ کالج ...

ساحلی کرناٹکا میں موسلادھار بارش؛ انکولہ ۔یلاپور ہائی وے پانی میں ڈوب گیا؛ چلتی کار پرردرخت گرنے سے کاروار کا ایک شخص ہلاک؛ ہوناور کے ولکی میں پانی کمپاونڈوں میں گھس گیا

ساحلی کرناٹکا میں گذشتہ تین چار دنوں سے زوردار بارش کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں مختلف علاقوں سے نقصانات کی خبریں آرہی ہیں۔  یلاپور سے ملی اطلاع کے مطابق زبردست بارش کے نتیجے میں انکولہ۔یلاپور ہائی وے  پانی میں ڈوب  گیا ہے۔ یہ سڑک بند ہوجانے سے   انکولہ۔ ہبلی نیشنل ہائی ...

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ سدارمیا پر بھی کورونا کا حملہ، اسپتال میں داخل

سیاسی لیڈران کے کورونا انفیکشن کی زد میں آنے کا سلسلہ جاری ہے۔ کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بی ایس یدی یورپا اور ان کی بیٹی کے کورونا پازیٹو ہونے کی خبروں کے بعد اب ریاست کے سابق وزیر اعلیٰ اور اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سدارمیا کے بھی کورونا پازیٹو ہونے کی خبریں سامنے آئی ہیں۔ اس سلسلے ...

وزیراعلیٰ ایڈی یورپا سمیت 11؍ افراد میں کورونا کی تصدیق، ریاست کے 6وزراء اور 14آئی اے ایس اور آئی پی ایس افسروں کے کووڈ کی لپیٹ میں آنے کے خدشات

کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا کے بعدان کی بیٹی بھی کورونا مثبت پائی گئی ہیں اور انہیں بنگلور کے منی پال اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ اس سے قبل مسٹر ایڈی یورپا کواتوار کے روز کورونا پازیٹو آنے پر اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔

بی بی ایم پی کووِڈ مریضوں کے ساتھ نان کووِڈ مریضوں کے علاج کی طرف بھی متوجہ،رایا پورم میں مخصوص ہیلتھ سینٹر قائم کرنے ضمیر احمد خان کے مطالبہ کو بی بی ایم پی کمشنر کی فوری منظوری

شہر بنگلورو میں بڑے بڑے سرکاری اسپتالوں کو مارچ 2020سے اب تک کورونا کیئر مراکز میں تبدیل کردیا گیا ہے اس کی وجہ سے ان اسپتالوں میں روزانہ علاج کے لئے رجوع ہونے والے ہزارو ں مریضوں کے لئے علاج کا کوئی متبادل ذریعہ نہیں۔

بی بی ایم پی کورونا ٹسٹ ٹیموں میں میڈیکل طلباء کی شمولیت، طبی خدمات کیلئے طلباء کو ماہانہ19 ہزارمشاہرہ دیا جائے گا

بروہت بنگلور مہا نگر پالیکے (بی بی ایم پی) نے شہر میں روزانہ 50ہزار افراد کے کورونا ٹسٹ کا ہدف مقرر کیا ہے۔ اس سلسلہ میں بی بی ایم پی کی طرف سے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی جارہی ہیں۔

”دہلی کا فساد بدلے کی کارروائی تھی۔ پولیس نے ہمیں کھلی چھوٹ دے رکھی تھی“۔فسادات میں شامل ایک ہندوتوا وادی نوجوان کے تاثرات

دہلی فسادات کے بعد پولیس کی طرف سے ایک طرف صرف مسلمانوں کے خلاف کارروائی جاری ہے۔ سی اے اے مخالف احتجاج میں شامل مسلم نوجوانوں اور مسلم قیادت کے اہم ستونوں پر قانون کا شکنجہ کسا جارہا ہے، جس پر خود عدالت کی جانب سے منفی تبصرہ بھی سامنے آ چکا ہے۔

کیا ’نئی قومی تعلیمی پالیسی‘ ہندوستان میں تبدیلی لا سکے گی؟ .........آز: محمد علم اللہ

ایک ایسے وقت میں جب کہ پورا ہندوستان ایک خطرناک وبائی مرض سے جوجھ رہا ہے، کئی ریاستوں میں سیلاب کی وجہ سے زندگی اجیرن بنی ہوئی ہے، مرکزی کابینہ نے آنا فانامیں نئی تعلیمی پالیسی کو منظوری دے دی۔جب کہ سول سوسائٹی اور اہل علم نے پہلے ہی اس پر سوالیہ نشان کھڑے کئے تھے اوراسے ایک ...

ملک پر موت اور بھکمری کا سایہ، حکومت لاپرواہ۔۔۔۔ از: ظفر آغا

جناب آپ امیتابھ بچن کے حالات سے بخوبی واقف ہیں۔ حضرت نے تالی بجائی، تھالی ڈھنڈھنائی، نریندر مودی کے کہنے پر دیا جلایا، سارے خاندان کے ساتھ بالکنی میں کھڑے ہو کر 'گو کورونا، گو کورونا' کے نعرے لگائے، اور ہوا کیا! حضرت مع اہل و عیال کورونا کا شکار ہو کر اسپتال پہنچ گئے۔

بھٹکل نیشنل ہائی وے کنارے پر مچھلی اور ترکاری کا لگ رہا ہے بازار۔ د ن بھر سنڈے مارکیٹ کا منظر

جب سے بھٹکل میں کورونا وباء کی وجہ سے لاک ڈاؤن کا سلسلہ شروع ہواتھا، تب سے ہفتہ واری سنڈے مارکیٹ اور مچھلی مارکیٹ بالکل بند ہے۔ لیکن ترکاری، فروٹ اور مچھلی کے کاروباریوں نے نیشنل ہائی وے، مین روڈ اور گلی محلوں کی صورت میں اس کا دوسرا نعم البدل تلاش کرلیا ہے۔

بابری مسجد کے "بے گناہ" مجرم ............ تحریر: معصوم مرادآبادی

بابری مسجد کا انہدام صدی کا سب سے گھناؤناجرم تھا۔ 6 دسمبر1992کو ایودھیا میں اس پانچ سو سالہ قدیم تاریخی عبادت گاہ کو زمیں بوس کرنے والے سنگھ پریوار کے مجرم خودکو سزا سے بچانے کے لئے اب تک قانون اور عدلیہ کے ساتھ آنکھ مچولی کھیلتے رہے ہیں۔ایک طرف تو وہ اس بات پر فخر کا اظہار کرتے ...