اب انگلش میڈیم کے سرکاری اسکول ؛ انگریزی میڈیم پڑھانے والے والدین کے لئے خوشخبری۔ ضلع شمالی کینرا میں ہوگا 26سرکاری انگلش میڈیم اسکولوں کا آغاز

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 29th April 2019, 8:46 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

کاروار29/اپریل(ایس اونیوز) سرکاری اسکولوں میں طلبہ کے داخلے میں کمی اور والدین کی طرف سے انگلش میڈیم اسکولوں میں اپنے بچوں کے داخلے کے رجحان کو دیکھتے ہوئے اب سرکاری اسکولوں میں بھی انگلش میڈیم کی سہولت فراہم کرنے کا منصوبہ بنایاگیا ہے۔

 نئے تعلیمی سال کے ساتھ ضلع شمالی کینرا کے سرسی اور کاروار جیسے 2تعلیمی اضلاع میں سے ہر ایک تعلیمی ضلع میں 13انگلش میڈیم اسکول قائم کیے جائیں گے۔ اس طرح شمالی کینرا ضلع میں کل 26مقامات پراسکولوں میں کنڑا میڈیم کے اسکولوں میں انگلش میڈیم کی بھی سہولت فراہم کی جائے گی۔ اس اسکیم کے تعلق سے گزشتہ بجٹ میں حکومت کی طرف سے اعلان بھی کیا گیا تھا۔فی الحال ہر اسمبلی حلقے میں 3مقامات پرسرکاری اسکولوں میں انگلش میڈیم کی سہولت دستیاب رہے گی۔ حالانکہ کنڑا حامی تنظیموں کی طرف سے اس اسکیم کی سخت مخالفت ہورہی ہے، لیکن حکومت نے سرکاری اسکولوں میں طلبہ کی تعداد کو بڑھانے کے لئے اس منصوبے پر عمل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

 پہلی جماعت سے انگلش میڈیم:    موصولہ تفصیلات کے مطابق اسی سال جون سے منتخب کنڑا اسکولوں میں ہی انگلش میڈیم کا شعبہ شروع ہوگا اورپہلی جماعت سے داخلے کیے جائیں گے۔انگلش میڈیم میں پڑھانے لائق اساتذہ کی موجودگی، قریب میں ہائی اسکول واقع ہونے اور بنیادی سہولتیں اور ضروری عملہ پہلے سے موجود رہنے جیسے نکات کو ذہن میں رکھتے ہوئے انگلش میڈیم شعبے کے لئے اسکولوں کا انتخاب کیا گیا ہے۔انگلش میڈیم میں پڑھانے کے لئے ضروری اسٹاف کی تقرری کا عمل بھی شروع کیا گیا ہے۔فی الحال چونکہ پہلی جماعت میں داخلہ شروع کیا جارہا ہے، اس لئے اسکولوں میں انگریزی مضمون پڑھانے والے ٹیچر کو ہی اس کلاس کی ذمہ داری دی جائے گی۔اس کے بعد بتدریج ضروری اسٹاف کی بھرتی کی جائے گی۔

 سرسی تعلیمی ضلع کے ڈی ڈی پی آئی دیواکر شیٹی نے بتایا کہ جن سرکاری اسکولوں میں انگلش میڈیم کا شعبہ شروع کرنا ہے اس کی فہرست بناکر محکمہ کو بھیج دی گئی ہے۔ جلد ہی اس کی منظوری ملنے کی امید ہے۔ اسی طرح کاروار تعلیمی ضلع کے ڈی ڈی پی آئی کے منجوناتھ نے بتایا کہ انگریزی میڈیم کی کلاس شروع کرنے کے لئے تیاریاں کی جارہی ہیں۔ امسال پہلی جماعت سے داخلے شروع ہونے والے ہیں۔اس لئے سرکاری ہائیر پرائمری اسکولوں کے علاوہ کرناٹکا پبلک اسکولوں میں کے جی سے کلاسس شروع کرنے کے امکانات ہیں۔

 مخالفت زوروں پر:    ریاست بھر میں حکومت کی طرف سے 1000انگلش میڈیم اسکول قائم کرنے کا جو منصوبہ بنایا گیا ہے، ادبی ا ور سیاسی محاذ پر  اس کی مخالفت بڑے زرور وشور سے کی گئی تھی۔ مخالفین کا کہنا تھا کہ مادری زبان اور ثقافت پر اس کے منفی اثرات پڑیں گے۔اس لئے حکومت سے اس اسکیم کو واپس لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔جبکہ حکومت نے یہ موقف اپنایا ہے کہ بچوں کو سرکاری اسکولوں کی طرف راغب کرنے کے لئے یہ اقدام ضروری ہے۔اور بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ چلنے اور اس کے تقاضے پورے کرنے کے لئے اس قسم کا فیصلہ نہایت ضروری ہے۔حکومت کا کہناتھا کہ کنڑا اسکولوں کو بند کرنے کی جو نوبت آگئی ہے، اس کے پیش نظر اسکولوں کو بند کرنے کے بجائے وہاں پر انگلش میڈیم کی سہولت فراہم کرکے اسکولوں کو باقی رکھنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انگریزی میڈیم کی کلاس چونکہ پہلی جماعت سے شروع ہورہی ہے، اس لئے جو طلبہ ان اسکولوں میں پہلے سے کنڑا میڈیم میں زیر تعلیم ہیں ان کو اُسی میڈیم سے اپنی تعلیم جاری رکھنی پڑے گی۔

 کہاں کہاں ہونگے انگلش میڈیم اسکول؟:     کاروار تعلیمی ضلع کے تحت آنے والے سرکاری ہائیر پرائمری اسکول بئیلور(بھٹکل)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول گورٹے اورسرکاری ہائیر پرائمری آر ایم ایس اے ترقی شدہ اسکول (بھٹکل)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول تیرنامکّی (بھٹکل)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول چیتّار(بھٹکل)، سرکاری ماڈل ہائیر پرائمری اسکول منکی(ہوناور)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول اگسور (انکولہ)،سرکاری ہائی اسکول اورکے جی ایس کاروار/سرکاری ہائیر پرائمری اسکول بازار، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول شیرواڈ (کاروار)، سرکاری ہائی اسکول آمدلّی (کاروار)، سرکاری ہائیر پرائمری   اسکول اگناشینی (کمٹہ)، گوکرن نمبر2/سرکاری ہائیر پرائمری اسکول اور ناڈو ماستی سرکاری ہائی اسکول (کمٹہ)، سرکاری ماڈل ہائیر پرائمری اسکول (کمٹہ)،  سرکاری ہائی اسکول سنتے گولی (کمٹہ) میں امسال انگلش میڈیم کا شعبہ شروع کیا جائے گا۔

 سرسی تعلیمی ضلع کے تحت ایم ایل اے ماڈل سرکای ہائیر پرائمری اسکول(ہلیال)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول اور سرکای ہائی اسکول بی کے ہلّی(ہلیال)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول تیرگاؤں (ہلیال)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول نمبر2 ہلیال، سرکاری ہائی اسکول مورکاواڈ (ہلیال)، سرکاری پی یو کالج ہلگیری (سداپور)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول بیلور (سداپور)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول اور سرکاری اردو ہائی اسکول بنواسی (سرسی)، ایم ایل اے ماڈل سرکای ہائیر پرائمری اسکول سرسی، سرکای ہائیر پرائمری اسکول چیگلّی (منڈگوڈ)،  سرکای ہائیر پرائمری اسکول ملگی (منڈگوڈ)،  سرکای ہائیر پرائمری اسکول منڈگوڈ، سرکای ہائیر پرائمری اسکول کیروتّی (یلاپور) میں انگریز میڈیم کی کلاسس کا آغاز ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے قریب شیرور میں لاری کی ٹکر سے راہ گیر کی موت

پڑوسی علاقہ شیرور میں ہوئے ایک سڑک حادثہ میں ایک راہ گیر کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی جس کی شناخت 85 سالہ تمپا اچار کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ حادثہ سنیچر کو اُس وقت پیش آیا جب عمر رسیدہ شخص تمپا آچار  بارش کی وجہ سے ہاتھ میںؓ چھتری تھامے  نیشنل ہائی وے کو کراس  کررہا تھا کہ ...

جنوری 19 کو ہوں گےانجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے انتخابات؛ اسحاق شاہ بندری الیکشن کمشنر منتخب

قومی تعلیمی ادارہ انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کے عام انتخابات اگلے سال 19 جنوری کو ہوں گے جس کے لئے آج سنیچر کو  ہوئی انتظامیہ میٹنگ میں  الیکشن کمشنر کا انتخاب عمل میں آیا ہے۔  اس بات کی تصدیق انجمن کے جنرل سکریٹری جناب صدیق اسماعیل نے کی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ  آج کی میٹنگ میں ...

پتورکے ویویکا نندا کالج میں گینگ ریپ کی واردات کے بعد طلبہ کے لئے سخت قوانین کا نفاذ۔ کلاسس معطل۔ طلبہ کے اندر اضطراب 

گزشتہ دنوں  اپنی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ  کچھ طلبہ کی جانب سے کیے گئے گینگ ریپ کی وجہ سے سرخیوں میں آنے والے قریبی شہر پتور  کے مشہور ویویکانندا کالج میں طلبہ کے لئے نئے قوانین اور ضابطے وضع کیے گئے ہیں، جن کی پابندی کا عہد کیے بغیر کسی بھی طالب علم کوکلاس میں داخل ہونے کی اجازت ...

بھٹکل تحصیلدار آفس میں بارش کے نقصانات  سے بچنے امدادی سنٹر کی شروعات

بھٹکل تعلقہ بھر میں بہتر بارش ہورہی ہے، اس کےساتھ ساتھ موسلا دھار بارش کے نتیجےمیں اچانک کوئی حادثات بھی پیش آتے ہیں۔ ان حادثاتی مواقع پر عوام کوفوری امداد و راحت پہنچا کر  نقصانات سے بچانے کے لئے بھٹکل تحصیلدار دفتر میں امدادی مرکز (ہیلپ سنٹر) کی شروعات کی گئی ہے۔

بھٹکل میں موسلادھار بارش کاسلسلہ جاری، حنیف آباد کی سڑک تالاب میں تبدیل؛ کئی مکانوں میں پانی داخل ہونے کی شکایتوں کے بعدتحصیلدار کا دورہ

گزشتہ دو دنوں سے برس رہی بارش کے نتیجےمیں تعلقہ کے ہیبلے گرام پنچایت حدود کے حنیف آباد کی سڑک تالاب نما کی شکل اختیارکرنےکے علاوہ سڑک کا پانی پاس پڑوس کے گھروں میں پانی گھسنے سے عوام پریشانی میں مبتلا دیکھے گئے۔

اترکنڑا ضلع پنچایت کو 5.97کروڑروپئے کی امداد : آبادی اور جغرافیائی وسعت کے مطابق امداد کی منظوری کا فیصلہ

فورتھ فائنانس کمیشن کی سفارشات کے تحت سال 2019-2020کے لئے ضلع پنچایتوں کی امداد میں اضافہ کیاگیا ہے۔ جس کےمطابق ریاستی حکومت نے بیلگام ضلع کو 8کروڑرو پئے منظور ہوئے ہیں تو اترکنڑا ضلع کے لئے 5.74کروڑ روپئے کی امداد منظور کی ہے۔

پتورکے ویویکا نندا کالج میں گینگ ریپ کی واردات کے بعد طلبہ کے لئے سخت قوانین کا نفاذ۔ کلاسس معطل۔ طلبہ کے اندر اضطراب 

گزشتہ دنوں  اپنی ہم جماعت طالبہ کے ساتھ  کچھ طلبہ کی جانب سے کیے گئے گینگ ریپ کی وجہ سے سرخیوں میں آنے والے قریبی شہر پتور  کے مشہور ویویکانندا کالج میں طلبہ کے لئے نئے قوانین اور ضابطے وضع کیے گئے ہیں، جن کی پابندی کا عہد کیے بغیر کسی بھی طالب علم کوکلاس میں داخل ہونے کی اجازت ...

آئی ایم اے سرمایہ کاری گھوٹالے کے سرغنہ منصور خان کوایس آئی ٹی نے کیا گرفتار؛ چھان بین کے لئے کیا انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے حوالے

حلال کمائی کے نام پر بھاری منافع کا لالچ دے کرہزاروں لوگوں سے کروڑوں روپے سرمایہ کاری میں لگوانے کے بعد اچانک فرار ہوجانے والے آئی ایم اے کے سرغنہ منصور خان کوپولیس کی خصوصی تحقیقاتی ٹیم (ایس آئی ٹی)نے نئی دہلی کے ایئر پورٹ پر رات 1.30بجے گرفتار کرلیا۔

مینگلور کے قریب بنٹوال میں بھیانک سڑک حادثہ؛ بھٹکل کے ایک ہی خاندان کے چار افراد ہلاک، سات زخمی؛ مرنے والوں میں دلہا بھی شامل

مینگلور کے قریب بنٹوال میں  آج جمعہ صبح   پیش آئے ایک بھیانک سڑک حادثے میں بھٹکل کے ایک ہی خاندان کے چار افراد ہلاک ہوگئے جبکہ سات دیگر شدید زخمی ہوگئے ۔ مرنے والوں میں  دلہا بھی شامل ہے جبکہ دلہن  کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔  حادثہ اُس وقت پیش آیا جب ایک کار، جس پر یہ سبھی ...

باغی اراکین اسمبلی ایوان کی کارروائی میں حاضر ہونے کے پابند نہیں:سپریم کورٹ عدالت کے فیصلہ سے مخلوط حکومت کو جھٹکا -کانگریس عدالت سے دوبارہ رجوع کرے گی

کرناٹک کے باغی اراکین اسمبلی کے استعفوں سے متعلق سپریم کورٹ نے آج جو فیصلہ سنایا ہے وہ ”آڑی دیوار پر چراغ رکھنے“ کے مصداق ہے- کیونکہ اس سے نہ کرناٹک کا سیاسی بحران ختم ہوگا اورنہ ہی مخلوط حکومت کو بچانے میں کچھ مدد ملے گی-

کرناٹک : استعفیٰ دینے والوں کی فہرست میں یلاپور رکن اسمبلی ہیبار بھی شامل۔کیاوزارت کے لالچ میں چل پڑے آنند اسنوٹیکر کے راستے پر؟

ریاست کرناٹک  میں جو سیاسی طوفان اٹھ کھڑا ہوا ہے اور اب تک کانگریس، جے ڈی ایس مخلوط حکومت کے تقریباً 13 اراکین اسمبلی اپنا استعفیٰ پیش کرچکے ہیں اس سے مخلوط حکومت پر کڑا وقت آن پڑا ہے اور قوی امکانا ت اسی بات کے دکھائی دے رہے ہیں کہ دونوں پارٹیوں کے سینئر قائدین کی جان توڑ کوشش ...

بھٹکل میں 110 کے وی اسٹیشن کے قیام سے ہی بجلی کا مسئلہ حل ہونے کی توقع؛ کیا ہیسکام کو عوامی تعاون ملے گا ؟

بھٹکل میں رمضان کے آخری دنوں میں بجلی کی کٹوتی سے جو پریشانیاں ہورہی تھی، سمجھا جارہا تھا کہ  عین عید کے  دن  بعض نوجوانوں کے  احتجاج کے بعد  اُس میں کمی واقع ہوگی اور مسئلہ حل ہوجائے گا، مگر  عید الفطر کے بعد بھی  بجلی کی کٹوتی یا انکھ مچولیوں کا سلسلہ ہنوز جاری ہے اور عوام ...

بھٹکل تعلقہ اسپتال میں ضروری سہولتیں تو موجود ہیں مگر خالی عہدوں پر نہیں ہورہا ہے تقرر

جدید قسم کا انٹینسیو کیئر یونٹ (آئی سی یو)، ایمرجنسی علاج کا شعبہ،مریضوں کے لئے عمدہ ’اسپیشل رومس‘ کی سہولت کے ساتھ بھٹکل کے سرکاری اسپتال کو ایک نیا روپ دیا گیا ہے۔لیکن یہاں اگر کوئی چیز نہیں بدلی ہے تو یہاں پر خالی پڑی ہوئی اسامیوں کی بھرتی کا مسئلہ ہے۔ 

آر ایس ایس کی طرح کوئی مسلم تنظیم کیوں نہیں؟ از: ڈاکٹر سید فاضل حسین پرویز

مسٹر نریندر مودی کی تاریخ ساز کامیابی پر بحث جاری ہے۔ کامیابی کا سب کو یقین تھا مگر اتنی بھاری اکثریت سے وہ دوبارہ برسر اقتدار آئیں گے اس کا شاید کسی کو اندازہ نہیں تھا۔ دنیا چڑھتے سورج کی پجاری ہے۔ کل ٹائم میگزین نے ٹائٹل اسٹوری مودی پر دی تھی جس کی سرخی تھی ”India’s Divider in Chief“۔

خود کا حلق سوکھ رہا ہے، مگر دوسروں کو پانی فراہم کرنے میں مصروف ہیں بھٹکل مسلم یوتھ فیڈریشن کے نوجوان؛ ایسے تمام نوجوانوں کو سلام !!

ایک طرف شدت کی گرمی اور دوسری طرف رمضان کا مبارک مہینہ  ۔ حلق سوکھ رہا ہے، دوپہر ہونے تک ہاتھ پیر ڈھیلے پڑجاتے ہیں،    لیکن ان   نوجوانوں کی طرف دیکھئے، جو صبح سے لے کر شام تک مسلسل شہر کے مختلف علاقوں میں پہنچ کر گھر گھر پانی سپلائی کرنے میں لگے ہوئے ہیں۔ انہیں  نہ تھکن کا ...

مودی جی کا پرگیہ سنگھ ٹھاکور سے لاتعلقی ظاہر کرنا ایسا ہی ہے جیسے پاکستان کا دہشت گردی سے ۔۔۔۔ دکن ہیرالڈ میں شائع    ایک فکر انگیز مضمون

 وزیر اعظم نریندرا مودی کا کہنا ہے کہ وہ مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کو دیش بھکت قرار دیتے ہوئے ”باپو کی بے عزتی“ کرنے کے معاملے پر پرگیہ ٹھاکورکو”کبھی بھی معاف نہیں کرسکیں گے۔“امیت شاہ کہتے ہیں کہ پرگیہ ٹھاکور نے جو کچھ کہا ہے(اور یونین اسکلس منسٹر اننت کمار ہیگڈے ...