اب انگلش میڈیم کے سرکاری اسکول ؛ انگریزی میڈیم پڑھانے والے والدین کے لئے خوشخبری۔ ضلع شمالی کینرا میں ہوگا 26سرکاری انگلش میڈیم اسکولوں کا آغاز

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 29th April 2019, 8:46 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

کاروار29/اپریل(ایس اونیوز) سرکاری اسکولوں میں طلبہ کے داخلے میں کمی اور والدین کی طرف سے انگلش میڈیم اسکولوں میں اپنے بچوں کے داخلے کے رجحان کو دیکھتے ہوئے اب سرکاری اسکولوں میں بھی انگلش میڈیم کی سہولت فراہم کرنے کا منصوبہ بنایاگیا ہے۔

 نئے تعلیمی سال کے ساتھ ضلع شمالی کینرا کے سرسی اور کاروار جیسے 2تعلیمی اضلاع میں سے ہر ایک تعلیمی ضلع میں 13انگلش میڈیم اسکول قائم کیے جائیں گے۔ اس طرح شمالی کینرا ضلع میں کل 26مقامات پراسکولوں میں کنڑا میڈیم کے اسکولوں میں انگلش میڈیم کی بھی سہولت فراہم کی جائے گی۔ اس اسکیم کے تعلق سے گزشتہ بجٹ میں حکومت کی طرف سے اعلان بھی کیا گیا تھا۔فی الحال ہر اسمبلی حلقے میں 3مقامات پرسرکاری اسکولوں میں انگلش میڈیم کی سہولت دستیاب رہے گی۔ حالانکہ کنڑا حامی تنظیموں کی طرف سے اس اسکیم کی سخت مخالفت ہورہی ہے، لیکن حکومت نے سرکاری اسکولوں میں طلبہ کی تعداد کو بڑھانے کے لئے اس منصوبے پر عمل کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

 پہلی جماعت سے انگلش میڈیم:    موصولہ تفصیلات کے مطابق اسی سال جون سے منتخب کنڑا اسکولوں میں ہی انگلش میڈیم کا شعبہ شروع ہوگا اورپہلی جماعت سے داخلے کیے جائیں گے۔انگلش میڈیم میں پڑھانے لائق اساتذہ کی موجودگی، قریب میں ہائی اسکول واقع ہونے اور بنیادی سہولتیں اور ضروری عملہ پہلے سے موجود رہنے جیسے نکات کو ذہن میں رکھتے ہوئے انگلش میڈیم شعبے کے لئے اسکولوں کا انتخاب کیا گیا ہے۔انگلش میڈیم میں پڑھانے کے لئے ضروری اسٹاف کی تقرری کا عمل بھی شروع کیا گیا ہے۔فی الحال چونکہ پہلی جماعت میں داخلہ شروع کیا جارہا ہے، اس لئے اسکولوں میں انگریزی مضمون پڑھانے والے ٹیچر کو ہی اس کلاس کی ذمہ داری دی جائے گی۔اس کے بعد بتدریج ضروری اسٹاف کی بھرتی کی جائے گی۔

 سرسی تعلیمی ضلع کے ڈی ڈی پی آئی دیواکر شیٹی نے بتایا کہ جن سرکاری اسکولوں میں انگلش میڈیم کا شعبہ شروع کرنا ہے اس کی فہرست بناکر محکمہ کو بھیج دی گئی ہے۔ جلد ہی اس کی منظوری ملنے کی امید ہے۔ اسی طرح کاروار تعلیمی ضلع کے ڈی ڈی پی آئی کے منجوناتھ نے بتایا کہ انگریزی میڈیم کی کلاس شروع کرنے کے لئے تیاریاں کی جارہی ہیں۔ امسال پہلی جماعت سے داخلے شروع ہونے والے ہیں۔اس لئے سرکاری ہائیر پرائمری اسکولوں کے علاوہ کرناٹکا پبلک اسکولوں میں کے جی سے کلاسس شروع کرنے کے امکانات ہیں۔

 مخالفت زوروں پر:    ریاست بھر میں حکومت کی طرف سے 1000انگلش میڈیم اسکول قائم کرنے کا جو منصوبہ بنایا گیا ہے، ادبی ا ور سیاسی محاذ پر  اس کی مخالفت بڑے زرور وشور سے کی گئی تھی۔ مخالفین کا کہنا تھا کہ مادری زبان اور ثقافت پر اس کے منفی اثرات پڑیں گے۔اس لئے حکومت سے اس اسکیم کو واپس لینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا۔جبکہ حکومت نے یہ موقف اپنایا ہے کہ بچوں کو سرکاری اسکولوں کی طرف راغب کرنے کے لئے یہ اقدام ضروری ہے۔اور بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ چلنے اور اس کے تقاضے پورے کرنے کے لئے اس قسم کا فیصلہ نہایت ضروری ہے۔حکومت کا کہناتھا کہ کنڑا اسکولوں کو بند کرنے کی جو نوبت آگئی ہے، اس کے پیش نظر اسکولوں کو بند کرنے کے بجائے وہاں پر انگلش میڈیم کی سہولت فراہم کرکے اسکولوں کو باقی رکھنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ انگریزی میڈیم کی کلاس چونکہ پہلی جماعت سے شروع ہورہی ہے، اس لئے جو طلبہ ان اسکولوں میں پہلے سے کنڑا میڈیم میں زیر تعلیم ہیں ان کو اُسی میڈیم سے اپنی تعلیم جاری رکھنی پڑے گی۔

 کہاں کہاں ہونگے انگلش میڈیم اسکول؟:     کاروار تعلیمی ضلع کے تحت آنے والے سرکاری ہائیر پرائمری اسکول بئیلور(بھٹکل)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول گورٹے اورسرکاری ہائیر پرائمری آر ایم ایس اے ترقی شدہ اسکول (بھٹکل)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول تیرنامکّی (بھٹکل)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول چیتّار(بھٹکل)، سرکاری ماڈل ہائیر پرائمری اسکول منکی(ہوناور)، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول اگسور (انکولہ)،سرکاری ہائی اسکول اورکے جی ایس کاروار/سرکاری ہائیر پرائمری اسکول بازار، سرکاری ہائیر پرائمری اسکول شیرواڈ (کاروار)، سرکاری ہائی اسکول آمدلّی (کاروار)، سرکاری ہائیر پرائمری   اسکول اگناشینی (کمٹہ)، گوکرن نمبر2/سرکاری ہائیر پرائمری اسکول اور ناڈو ماستی سرکاری ہائی اسکول (کمٹہ)، سرکاری ماڈل ہائیر پرائمری اسکول (کمٹہ)،  سرکاری ہائی اسکول سنتے گولی (کمٹہ) میں امسال انگلش میڈیم کا شعبہ شروع کیا جائے گا۔

 سرسی تعلیمی ضلع کے تحت ایم ایل اے ماڈل سرکای ہائیر پرائمری اسکول(ہلیال)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول اور سرکای ہائی اسکول بی کے ہلّی(ہلیال)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول تیرگاؤں (ہلیال)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول نمبر2 ہلیال، سرکاری ہائی اسکول مورکاواڈ (ہلیال)، سرکاری پی یو کالج ہلگیری (سداپور)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول بیلور (سداپور)، سرکای ہائیر پرائمری اسکول اور سرکاری اردو ہائی اسکول بنواسی (سرسی)، ایم ایل اے ماڈل سرکای ہائیر پرائمری اسکول سرسی، سرکای ہائیر پرائمری اسکول چیگلّی (منڈگوڈ)،  سرکای ہائیر پرائمری اسکول ملگی (منڈگوڈ)،  سرکای ہائیر پرائمری اسکول منڈگوڈ، سرکای ہائیر پرائمری اسکول کیروتّی (یلاپور) میں انگریز میڈیم کی کلاسس کا آغاز ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

شرالی میں پنچایت افسران کا دکانوں پر چھاپہ :28.45کلوگرام پلاسٹک ضبط

بھٹکل تعلقہ کے شرالی میں پلاسٹک کے استعمال سے غلاظت بھرے کچرے کا مسئلہ پیدا ہونے کے پیش نظر اور ضلع پنچایت سی ای اؤ کی ہدایات پر پیر کو شرالی گرام پنچایت حدود کے کئی دکانوں پر چھاپہ ماری کرتے ہوئے 28.45 کلوگرام وزنی پلاسٹک کی تھیلیاں ضبط کرنے کا واقعہ پیش آیاہے۔

ملکی معیشت  کے برے اثرات سے ہر شعبہ کنگال؛ بھٹکل میں بھی سونا اور رئیل اسٹیٹ زوال پذیر؛ کیا کہتے ہیں جانکار ؟

ملک میں نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ملکی معیشت پر سنگین اثرات مرتب ہونےکے متعلق ماہرین نے بہت پہلے سے چوکنا کردیا  تھا۔ اب اس کے نتائج بھی  ظاہر ہونے لگے ہیں۔ رواں سال کے دوچار مہینوں سے جو خبریں آرہی ہیں، اُس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ہمارے  ملک میں روزگاروں کا بےروز ...

 ای۔ ٹکٹ میں جعلسازی کے ذریعے منگلورو ایئر پورٹ پر غیر مجاز شخص کا داخلہ۔ ملزم گرفتار

بینہ طور پر ای۔ ٹکٹ میں جعلسازی کرتے ہوئے اپنا نام داخل کرکے منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے اندر ایک غیر مجاز شخص کے داخل ہونے کا معاملہ سامنے آیا ہے جس کے بعد سنٹرل انڈسٹریل سیکیوریٹی فورس کے افسران نے مذکورہ شخص کو حراست لے کر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔

آئی ایم اے فراڈ کیس کا ایک نیا موڑ، قدآور شخصیات راڈر پر، منصور خان نے سابق وزیر دیش پانڈے پر 5/کروڑ روپئے طلب کرنے کا الزام لگایا 

آئی ایم اے فراڈ کیس دن بدن نیا زاویہ اختیار کرتا جارہا ہے، اس کیس کے کلیدی ملزم اور آئی ایم اے کے سربراہ منصور خان نے دعویٰ کیا ہے کہ سابق ریاستی وزیر اور سینئر کانگریس لیڈر آر وی دیش پانڈے نے آئی ایم اے کو 600کروڑ روپئے کا قرضہ حاصل کرنے کے لئے نو آبجیکشن سرٹی فکیٹ (این او سی) جاری ...

بنگلورو کی خواتین اب بھی ”گلابی سارتھی“ سے واقف نہیں ہیں

بنگلورو میٹرو پالیٹن ٹرانسپورٹ کارپوریشن (بی ایم ٹی سی) نے اسی سال جون کے مہینہ میں خواتین کے تحفظ کے پیش نظر اور ان پر کی جانے والے کسی طرح کے ظلم یا ہراسانی سے متعلق شکایت درج کرانے اور فوری اس کے ازالہ کے لئے 25 خصوصی سواریاں جاری کی تھی جنہیں ”گلابی سارتھی“ کا نام دیا گیا،

بی ایم ٹی سی کے رعایتی بس پاس کے اجراء کی کارروائی اب بھی جاری مگر کارپوریشن نے اب تک 38,000 درخواستیں مسترد کی ہے

بنگلور میٹرو پالیٹن ٹرانسپورٹ کارپوریشن (بی ایم ٹی سی) نے طلباء کی طرف سے رعایتی بس پاس حاصل کرنے کے لئے داخل کردہ کل 38,224 درخواستوں کو اب تک رد کر دیا ہے اور اس کے لئے یہ وجہ بیان کی گئی ہے کہ ان کے تعلیمی اداروں کی طرف سے ان طلباء کی تفصیلات مناسب انداز میں فراہم نہیں کی گئی ہیں۔

ملکی معیشت  کے برے اثرات سے ہر شعبہ کنگال؛ بھٹکل میں بھی سونا اور رئیل اسٹیٹ زوال پذیر؛ کیا کہتے ہیں جانکار ؟

ملک میں نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ملکی معیشت پر سنگین اثرات مرتب ہونےکے متعلق ماہرین نے بہت پہلے سے چوکنا کردیا  تھا۔ اب اس کے نتائج بھی  ظاہر ہونے لگے ہیں۔ رواں سال کے دوچار مہینوں سے جو خبریں آرہی ہیں، اُس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ہمارے  ملک میں روزگاروں کا بےروز ...

بارش کے بعد بھٹکل کی قومی شاہراہ : گڑھوں کا دربار، سواریوں کے لئے پریشانی؛ گڑھوں سے بچنے کی کوشش میں حادثات کے خدشات

لوگ فورلین قومی شاہراہ  کی تعمیر کو لے کر  خوشی میں جھوم رہے ہیں لیکن شہر میں شاہراہ کا کام ابھی تک  شروع نہیں ہوا ہے، اُس پرستم یہ ہے کہ سواریوں کو پرانی سڑک پر واقع گڑھوں میں سے گرتے پڑتے گزرنے کے حالات پیدا ہوگئے ہیں۔ لوگ جب گڈھوں سے بچنے کی کوشش میں اپنی سواریوں کو دوسری طرف ...

ضلع شمالی کینرا میں بڑھ رہی ہے گردے کی بیماری میں مبتلا مریضوں کی تعداد

ایک عرصے سے ضلع شمالی کینرا میں ایچ آئی وی اور کینسر کے مریضوں کی تعداد بہت زیادہ ہوا کرتی تھی۔ لیکن آج کل گردے کے امراض اور اس سے گردے فیل ہوجانے کے واقعات میں بڑی تیز رفتاری سے اضافہ ہورہا ہے۔اس مرض کی سنگینی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس وقت گردوں کی ناکامی کی وجہ ...

کیا ملک میں جمہوریت کی بقا کے لئے ایسے ہی غداروں کی ضرورت تو نہیں ؟ آز: مدثراحمد (ایڈیٹر، روزنامہ آج کاانقلاب،شیموگہ)

جب سے ملک میں بی جے پی اقتدار پر آئی ہے  ہر طرح کی آزادی پر پابندیاں لگائی جارہی ہیں۔بولنے کاحق،لکھنے کاحق،تنقید کرنے کا حق یہ سب اب ملک مخالف سرگرمیوں میں شمار ہونے لگے ہیں اور جو لوگ ان حقوق کا استعمال کرنے کی کوشش کررہے ہیں انہیں ملک میں غدار کہا جارہا ہے۔ملک کے موجودہ ...

بھٹکل اور اطراف میں برسات کے ساتھ ساتھ چل رہا ہے مچھروں کا عذاب؛ کیا ذمہ داران مچھروں پر قابو پانے کے لئے اقدامات کریں گے ؟

اگست کے مہینے سے مسلسل برس رہی موسلادھار بارش نے جہاں ایک طرف عام زندگی کو بری طرح متاثر کیا ہے، وہیں پر جگہ جگہ پائے جانے والے گڈھوں، تالابوں اور نالوں میں پانی جمع ہونے کی وجہ سے مچھروں کی افزائش میں بھی ہوا ہے۔ اور مچھروں کے کاٹے سے پھیلنے والی بیماریوں نے لوگوں کے لئے عذاب ...

بھٹکل میں کبھی عرب تاجروں کی بندرگاہ رہی شرابی ندی کی حالت اب ہوگئی ہے ایک گندے نالے سے بھی بدتر؛ کیا تنظیم اور کونسلرس اس طرف توجہ دیں گے ؟ ؟

بھٹکل تعلقہ کی شرابی ندی اب جو ایک گندے نالے سے بھی بدتر حالت میں آگئی ہے اس کے پیچھے صدیوں پرانی تاریخ ہے۔  کیونکہ اس ندی کے کنارے پرکبھی سمندری راستے سے آنے والے عرب تاجروں کے قافلے اترا کرتے تھے۔لیکن کچرے، پتھر اورمٹی کے ڈھیر کے علاوہ اور ندی میں گندے پانی نکاسی کی وجہ سے آج ...