مہاراشٹرا سے لوٹنے والوں کوکیا جائے گا 14دنوں تک ہوم کوارنٹین ، لیکن گھروں کو کیا جائے گا سیل ڈاؤن۔ اُڈپی میں وزیر صحت سری راملو کابیان

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th June 2020, 6:40 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

اُڈپی 9/جون (ایس او نیوز) ریاستی وزیر صحت بی سری راملو نے کہا ہے کہ اب مہاراشٹرا سے لوٹنے والوں کو سرکاری نگرانی والے مراکز کے بجائے ان کے اپنے گھر میں کوارنٹین کیاجائے گا اور متعلقہ افراد کے گھروں کو مکمل سیل ڈاؤن کیا جائے گا۔اس کے ساتھ ہی متعلقہ افراد کو 14دنوں تک کوارنٹین میں رہنا ہوگا۔

 وزیر موصوف نے اڈپی میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ یہ فیصلہ ریاستی سطح پر لیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ”ضلعی سطح پر اقدامات کرنے کے لئے ڈپٹی کمشنروں کو مکمل اختیارات دئے گئے ہیں۔ ہم کوارنٹین کیے گئے گھروں کے پاس پولیس اہلکاروں اور ہوم گارڈ کے عملے کو تعینات کریں گے اور آشا کارکنان اور آنگن واڑی  کارکنان کے ذریعے ان لوگوں کی نگرانی کی جائے گی۔ اگر ہو م کوارنٹین کیے گئے افراد گھر سے باہر نکلتے ہیں تو پھر آس پاس رہنے والے افراد کو چاہیے کہ اس کی اطلاع افسران تک پہنچائیں۔ اگر کوارنٹین کیے گئے افراد میں بیماری کی علامات دکھائی دیتی ہیں تو پھر ان کی طبی جانچ  کروائی جائے گی۔“

 وزیر موصوف نے اس بات کی بھی وضاحت کردی ہے کہ اگرمہاراشڑا سے لوٹنے اور کوارنٹین کیاجانے والا شخص کسی اپارٹمنٹ میں رہتا ہے تو پھر پوری عمارت کو سیل ڈاؤن نہیں کیاجائے گا بلکہ صرف متعلقہ فلیٹ کو ہی سیل ڈاؤن کیا جائے گا۔

اس کے علاوہ جو لوگ دوسری ریاستوں سے لوٹ رہے ہیں ان کے لئے سرکاری نگرانی والے کوارنٹین میں رہنے کی ضرورت نہیں ہے۔ اگر دوسری ریاستوں یا ممالک سے لوٹنے والے افراد کے اندر بیماری کی علامات دکھائی نہیں دیتی ہیں تو پھر ان کے گلے سے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے نہیں بھیجے جائیں گے۔

 پرائیویٹ اسپتال والوں کی طرف سے کووِڈ کا علاج کرنے اور اس کے بعد حد سے زیادہ بل وصول کرنے کے بارے میں پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے  وزیر سری راملو نے بتایا کہ ایسے اسپتالوں کے خلاف کیس دائر کیے جائیں گے۔انہوں نے وعدہ کیا کہ کارکلا اور کنداپور کے سرکاری اسپتالوں کو ضروری ساز وسامان جلد ہی فراہم کیا جائے گا اور اڈپی ضلع اسپتال میں 250 بستروں کی سہولت فراہم کرنے کا  کام جلد شروع کیا جائے گا۔
        
اُڈپی پہنچنے سے قبل ریاستی وزیر صحت و خاندانی بہبود سری راملو نے  پیر  کوکاروار انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کا دورہ کیا تھا اور وہاں پر موجود کووِڈ وارڈ اور جانچ لیباریٹری وغیر ہ کے انتظامات کا جائزہ لیتے ہوئے ضروری تفصیلات حاصل کیں تھیں۔ کاروار میں  اخباری نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا  تھا کہ ریاست میں سرکاری اسپتالوں کی سہولتوں میں بہتری لانے او رڈاکٹروں کو تعینات کرنے کے سلسلے میں عوام کی طرف سے بہت زیادہ شکایات موصول ہورہی ہیں۔ ان مسائل کو حل کرنے کے لئے ضروری اقدامات جلد ہی کیے جائیں گے۔   وزیر موصوف نے ضلع شمالی کینرا میں کووِڈ وباء پر قابو پانے میں جوکامیابی ملی ہے اس پر اپنی خوشی اور اطمینان کا اظہار بھی کیا تھا۔اور ضلع انتظامیہ،محکمہ صحت اور  طبی عملہ،آنگن واڈی کارکنان، محکمہ پولیس کی طرف سے کی گئی محنت اور نتیجہ خیز کارروائی کی خوب ستائش بھی کی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

دبئی :شیرورگرین ویلی اسکول کے صدر ڈاکٹر سید حسن کی دختر دانیا کو ملا شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس‘

عرب امارات میں بہترین ہمہ جہتی تعلیمی کارکردگی کے لئے طالب علموں کو دیا جانے والا ’’ہَرہا ئنیس شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس“ امسال دانیا حسن کو تفویض کیا گیا ہے جس کا تعلق  بھٹکل کے پڑوسی علاقہ شرور سے ہے۔

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔

بنگلورو تشدد : علما نے دلت ایم ایل اے کے گھر کو از سر نو تعمیر کرنے کی پیشکش کی

نگلورو کے تشدد زدہ علاقوں میں امن و اتحاد برقرار رکھنے کیلئے علما کرام نے ایک بڑا قدم اٹھایا ہے۔ کرناٹک کے امیر شریعت مولانا صغیر احمد رشادی کی قیادت میں علما کرام کے وفد نے آج شہر کے متاثرہ علاقے ڈی جے ہلی اور کاول بیسندرا کا دورہ کیا ۔ سب سے پہلے علما کرام نے ڈی جے ہلی پولیس ...

بنگلورو تشدد : 175 ملزمین گرفتار ، احتیاطی طور پر ان علاقوں میں حفاظتی انتظامات، 15 اگست تک دفعہ 144 نافذ

 11 اگست کی رات پیش آئے تشدد کے واقعات کے بعد شہر کے ڈی جے ہلی ، کے جی ہلی اور کاول بیسندرا علاقوں میں حالات پوری طرح قابو میں آچکے ہیں ۔ احتیاطی طور پر ان علاقوں میں حفاظتی انتظامات مزید پختہ کردئے گئے ہیں ۔

چکمنگلورو میں شنکراچاریہ کے مجسمہ پر ’میلاد کا جھنڈا‘ ملنے سے حالات کشیدہ، ملند نامی شخص نکلا قصوروار!

کرناٹک کی راجدھانی بنگلورو میں ہونے والے فرقہ وارانہ تشدد کی آگ ابھی ٹھنڈی بھی نہیں ہوئی کہ ریاست کے چکمنگلورو میں آدی شنکراچاریہ کے مجسمہ کی چھت پر عید میلاد النبی کا جھنڈا پائے جانے سے علاقہ میں کشیدگی پھیل گئی۔ یہ جھنڈا بارش کی وجہ سے بھیگا ہوا تھا اور اسے جمعرات کے روز ...

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

توہین آمیز فیس بک پوسٹ اور اس پر تشدد دونوں قابل مذمت

شان رسالتﷺ میں گستاخی کرتے ہوئے کئے گئے ایک فیس بک پوسٹ اور اس کے نتیجے میں شہر بنگلورو میں گزشتہ روز پیش آنے والے پر تشدد واقعات کی مذمت کے لئے چہار شنبہ کی صبح ممتاز علمائے کرام وقائدین کی زوم کانفرنس کے ذریعے ایک میٹنگ ہوئی