سینٹائزر پینے سے آندھرا پردیش میں 13 افراد ہلاک

Source: S.O. News Service | Published on 1st August 2020, 11:08 AM | ملکی خبریں |

پرکاشم،یکم اگست(ایس او نیوز؍یو این آئی) آندھراپردیش کے ضلع پرکاشم کے کوری چھید و اور پامورو گاؤں میں ہینڈ سینیٹائزر پینے سے جمعہ کے روز کم از کم 13 افراد کی موت ہوگئی۔

پولیس کے ذرائع نے بتایا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے شراب کی دکانیں بند ہونے کے سبب لوگوں نے کولڈ ڈرنکس میں سینیٹائزر ملاکر پی لیا اور یہ کام کئی دن سے کر رہے تھے۔ ان میں سے 10 افراد کوری چھیدو اور تین پامورو گاؤں میں جاں بحق ہوگئے۔ مرنے والوں میں زیادہ تر بھکاری اور مزدور طبقہ کے ہیں۔

دیہاتیوں نے بتایا کہ یہ لوگ کئی دنوں سے شراب کی بجائے سینیٹائزر پی رہے تھے اور ان میں سے کچھ بیہوش ہوگئے تھے اور کچھ کو پیٹ میں درد کی شکایت ہوئی تھی۔ ان کی لاشیں گاؤں کے مختلف مقامات پر پائی گئیں۔

جب کچھ لوگوں کو تشویشناک ناک حالت میں اسپتال میں داخل کرایا گیا تو انہوں نے بتایا کہ شراب کی عدم فراہمی کی وجہ سے انہوں نے سینیٹائزر پی لیا تھا۔ پولیس نے موقع سے سے سینیٹائزر کی خالی بوتلیں برآمد کرلی ہیں اور انہیں جانچ کے لئے لیبارٹری بھجوا دی ہے۔

پولیس سپرنٹنڈنٹ سدھارتھ کوشل نے بتایا کہ ان کے اہل خانہ نے پولیس کو اطلاع دی کہ شراب کی دکانیں لاک ڈاؤن کی وجہ سے بند ہیں اور پچھلے 10 دن سے سینیٹائزر پی رہے ہیں۔ پولیس نے گاؤں میں فروخت ہونے والے سینٹائزر ضبط کرلیا ہے انہیں جانچ کے لئے بھیج دیا ہے اور اس معاملے کی تفصیلی تفتیش کی جارہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں ای-گاڑی پالیسی کا اعلان، الیکٹرک گاڑیوں کی خریداری پر رعایت ملے گی

ہلی کی اروند کیجریوال حکومت نے دارالحکومت کو آلودگی سے پاک کرنے کے منصوبے کے تحت جمعہ کے روز ای- گاڑی پالیسی کو نافذ کرنے کا اعلان کیا، جس میں مختلف زمروں کی الیکٹرک گاڑیاں خریدنے کے لئے 30 ہزار سے لے کر 1.5 لاکھ روپے تک رعایت دی جائے گی۔

بے لگام میڈیا پر جمعیۃ کی عرضی: جب تک عدالت حکم نہیں دیتی حکومت خود سے کچھ نہیں کرتی: چیف جسٹس

مسلسل زہر افشانی کرکے اور جھوٹی خبریں چلاکر مسلمانوں کی شبیہ کوداغدار اور ہندوؤں اورمسلمانوں کے درمیان نفرت کی دیوارکھڑی کرنے کی دانستہ سازش کرنے والے ٹی وی چینلوں کے خلاف داخل کی گئی

دہلی فسادات: پروفیسر اپوروانند کی حمایت میں سامنے آئے ملک و بیرون ملک کے دانشوران

 ملک اور بیرون ملک کے ایک ہزار سے زائد معروف دانشوروں، نوکر شاہوں، صحافیوں، مصنفوں، ٹیچروں او اسٹوڈنٹس نے دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر اپوروانند سے مشرقی دہلی میں فسادات کے معاملے میں پوچھ گچھ کئے جانے اور انکا موبائل فون ضبط کرنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی ہے اور پولیس کے ذریعہ ...

کالعدم چینی کمپنیوں سے بی جے پی کے گہرے رشتے ہیں: کانگریس

 کانگریس نے الزام عائد کیا ہے کہ حکومت نے قومی سلامتی کے لیے خطرہ بتاتے ہوئے جن چینی کمپنیوں پر پابندی لگائی ہے ان میں سے کئی کے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے گہرے رشتے ہیں اور گزشتہ عام انتخابات میں ان کمپنیوں نے اس کے لیے تشہیری مہم کا کام کیا تھا۔