بھٹکل میں سیلاب کی وجہ سے 11.55ہیکڑ باغبانی زمین کو نقصان : فصلوں کو بیماری کا خدشہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 22nd August 2019, 9:26 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:22؍اگست   (ایس اؤ نیوز)بھٹکل تعلقہ میں مسلسل برسی بارش کی وجہ سے 11.55ہیکڑ باغبانی علاقہ کو نقصان پہنچاہے۔ اس دوران آہستہ  سپاری اور ناریل کی فصلیں بیماری میں مبتلا ہونے سے کسان بہت پریشانی محسوس کررہےہیں۔

تعلقہ میں 35000 خاندانوں میں سے (2001کے مردم شماری کے مطابق 30529) 40فی صد لوگ باغبانی کرتے ہیں۔ علاقےمیں سپاری ، ناریل، کالی مرچ ، موز اہم فصلیں ہیں۔ کچھ لوگوں کی زندگی کے لئے باغبانی سہارا ہے تو بقیہ لوگوں کے لئے یہی سب کچھ ہے۔ افسوس کہ ہرسال باغبانی کرنےو الے سیلاب سے متاثر ہوتے رہے ہیں۔ گرمی میں  پانی نہ ہونےکی وجہ سے باغبانی کو نقصان پہنچا تھا تو اب پانی میں بہہ جانے سے کافی نقصان ہواہے۔

مسلسل برستی بارش میں کمی ہوتےہی فصلیں بیماریوں میں مبتلا ہورہی ہیں۔ ابھی تک 30کسانوں نے نے محکمہ سے درخواست کی ہے کہ ان کی باغبانی کے نقصان کے عوض معاوضہ اداکیاجائے۔ قریب 10ایکڑ سے زائد باغبانی کی زمین پر کھڑی فصلیں بیماری سے برباد ہورہی ہیں۔ محکمہ باغبانی کی معاون ڈائرکٹر سندھیا بھٹ اپنے عملے کے ساتھ سروے کے کاموں میں مصروف ہے۔ محکمہ باغبانی کی طرف سے سرکلر جاری کرتےہوئے کہاگیا ہے کہ وہ اپنی فصلوں کی حفاظت کے لئے پیشگی اقدامات کریں۔ اس سلسلےمیں محکمہ کے افسران سے رابطہ کرنےکی اپیل بھی کی گئی ہے۔

محکمہ باغبانی کی افسر سندھیا بھٹ نے بتایا کہ بھٹکل تعلقہ میں سیلاب سے نقصان ہونے والی باغبانی علاقے کی سروے رپورٹ تحصیلدار کو سونپی گئی ہے۔ اب محکمہ کی طرف سے فصل کی حفاظت کے لئے کئے جانے والے اقدامات کی تیاری میں ہیں تاکہ بیماری میں مبتلا فصلو ں کو بچانےکے علاوہ بیماری پر روک لگایاجائے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل تعلقہ شرالی اور بیلکے میں 23اور26ستمبر کو پی یوکالج طلبا کے ضلعی سطح کے کھیل مقابلوں کا انعقاد

اترکنڑا ضلع محکمہ تعلیمات عامہ اور پرنسپالس اینڈ لکچررس اسوسی ایشن بھٹکل تعلقہ کے اشتراک سے اترکنڑا ضلع پی یوکالج کے ضلع لیول کھیل مقابلے شرالی کے جنتا ودیالیا اور سرکاری ہائی اسکول بیلکے میں بالترتیب 23اور 26ستمبر2019کو منعقد ہونگے۔