اب سیاست کا ہنر سکھائے گی یوگی حکومت،کھلے گا ملک کاپہلا سیاست ٹریننگ سینٹر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th October 2018, 9:33 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی ،10؍ اکتوبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) سیاست کے میدان میں اترنے کی خواہش رکھنے والے لوگوں کے لئے اچھی خبر ہے۔اتر پردیش کی حکومت نے غازی آباد ضلع میں ملک کا اپنی نوعیت کا پہلا مرکز کھولنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں لوگوں کو سیاست کی باریکیوں کے بارے میں تربیت دی جائے گی۔وزیراعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کی صدارت میں بدھ کو ہوئی ریاست کابینہ کی میٹنگ میں یہ فیصلہ لیا گیا۔ریاست کے شہری ترقی کے وزیر سریش کمار کھنہ نے بتایا کہ کابینہ نے غازی آباد میں ایک سیاست ٹریننگ سینٹر بنانے کی تجویز کو منظوری دے دی ہے۔کل 198 کروڑ روپے کی متوقع رقم سے تقریبا 60 بیگھہ علاقے میں بننے والے اس تربیتی مرکز کے لئے پہلے مرحلے میں50 کروڑ روپے کا انتظام کیا گیا ہے۔اس سے ملک میں اپنی نوعیت کا پہلا انسٹی ٹیوٹ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ اس تربیتی مرکزکے لیے نصاب تیار کیا جا رہا ہے۔اس کے لیے ایک کمیٹی قائم کی گئی ہے۔اس مرکز میں ان لوگوں کو’اے ٹو زیڈ‘تربیت دی جائے گی جو سیاست کے میدان میں اترنے کی تیاری کر رہے ہیں۔منتخب ہوئے عوامی نمائندے بھی اس میں تربیت لے سکیں گے۔اس دوران عملی تربیت کے ساتھ ساتھ سیاست سے منسلک قانونی پہلوؤں، رویے اور دیگر چیزوں کے بارے میں بتایا جائے گا۔اس مرکز کی شروعات اگلے دو تین سال میں شروع ہو جائے گی۔اس میں مختلف سیاسی شخصیات، سفیروں، دیگر ممالک کے نمائندوں اور سیاسی میدان کے ماہرین کو لیکچر دینے کے لیے بلایا جائے گا۔اس مرکز کے قیام کے لیے قومی دارالحکومت سے متصل علاقہ کو اس لئے منتخب کیا گیا ہے تاکہ دہلی سے بھی لوگ یہاں آسانی سے پہنچ سکیں۔انہوں نے بتایا کہ اس تربیتی مرکز کو لے کر مختلف قومی یونیورسٹیوں سے بات چیت چل رہی ہے، تاکہ یہاں سے ملنے والی ڈگری کو اہمیت مل سکے۔

ایک نظر اس پر بھی

گجرات کیس:مودی اور امت شاہ کو بہار میں انتخابی مہم نہیں کرنے دیں گے: کانگریس 

گجرات معاملے کو لے کر بہار کی سیاسی فضا گرمائی ہوئی ہے۔ جہاں ایک طرف بی جے پی، کانگریس پر بہار کے لوگوں کے خلاف ہوئے تشدد کے لئے ذمہ دار بتا رہی ہے، وہیں اب کانگریس نے اپنے تیور تیکھے کر دیئے ہیں۔

گنگاصفائی بھی جملہ نکلا،آلودگی بڑھنے کی رپورٹ پرکانگریس کاحملہ

کانگریس نے گزشتہ چار سال کے دوران گنگا میں آلودگی بڑھنے کی خبرکے سلسلے میں بھارتیہ جنتا پارٹی پر طنز کرتے ہوئے جمعرات کو کہا ہے کہ 2014کے عام انتخابات میں صاف شفاف گنگا کے وعدے کے ساتھ اقتدار میں آئی مودی حکومت کا ’نمامی گنگا‘پروگرام بھی جملہ ثابت ہوا ہے۔