رام مندر معاملے کو لے کر یوگی نے کانگریس کو نشانہ بنایا

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 10th November 2018, 10:08 PM | ملکی خبریں |

چھتیس گڑھ ،10؍ نومبر (آئی این ایس انڈیا؍ایس او نیوز) اتر پردیش کے وزیر یوگی آدتیہ ناتھ نے رام مندر معاملے کو لے کر کانگریس سے پوچھا کہ کہ اسے بھگوان رام کی فکر ہے یا مغل بادشاہ بابر کی۔آدتیہ ناتھ نے ریاست میں پہلے مرحلے کے انتخابات کے لئے تشہیر کاری کے آخری دن یہاں انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کانگریس نے قومی سلامتی کے ساتھ کھلواڑ کرتے ہوئے سیاسی فائدے کے لئے چھتیس گڑھ اور جھارکھنڈ میں کھلے عام اور چوری چھپے نکسلواد کو فروغ دیا۔وزیر اعلی نے کہا کہ معدنی ذخائر ہونے کے باوجود چھتیس گڑھ کانگریس کے دور اقتدار میں غریب، پسماندہ اوربیمارو ریاست رہی۔بیمارماروکا لفظ بہار، مدھیہ پردیش، راجستھان اور اتر پردیش کے پہلے لفظ سے 1980 کے وسط میں گڑھا گیا تھا اور اس کا اثر ان ریاستوں میں خراب اقتصادی صورتحال سے تھا۔یوگی نے کہاکہ آج جنگل املاک کا استعمال مقامی لوگوں کی فلاح و بہبود میں ہو رہا ہے۔قبائلیوں اور جنگل علاقوں میں رہنے والے لوگوں کو ترقیاتی اسکیموں کا فائدہ دیا جا رہا ہے۔انہوں نے الزام لگایاکہ کانگریس نے اپنے فائدہ کے لئے نکسلواد کو فروغ دیا لیکن جب یہ لوگوں کی حفاظت کے لئے خطرہ بن گیا تو وہ بی جے پی پارٹی ہی تھی جس نے سختی سے اس کے ساتھ پیش آئی۔ کانگریس نکسلواد کو کھلے عام اور چوری چھپے فروغ دیتی رہی ہے۔کانگریس نے اپنے فائدہ کے لئے ملک کی سلامتی سے کھلواڑ کیا۔چاہے وہ چھتیس گڑھ ہو یا جھارکھنڈ جہاں نکسلیوں کو پناہ دینے کا مسئلہ ہو یا سیاسی فائدے کے لئے کشمیر جیسی ریاستوں کا استعمال کا۔لیکن بی جے پی کے لئے قومی سلامتی اہم ہے لہٰذا اس نے اس کے ساتھ کھلواڑکوکبھی برداشت نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ ایسا کوئی دن نہیں ہے جب کشمیر میں سیکورٹی فورسز نے کم از کم دو یا تین دہشت گردوں کو ڈھیر نہیں کیا ہو یا وہ سکیورٹی کے سامنے اعتراف نہ کیا ہو۔اسی طرح کوئی ایسا دن نہیں گزر تاجہاں نکسل متاثرہ ریاستوں میں لوگوں کو ریاستی حکومتوں نے مکمل تحفظ فراہم نہ کرایا ہو۔انہوں نے کہا کہ کانگریس سے پوچھا جانا چاہئے کہ ان کا تعلق بھگوان رام سے ہے یا غیر ملکی بابر سے۔کانگریس کے پاس ملک کے احترام اور خود داری کے بارے میں کوئی فکر نہیں ہے۔کانگریس نے ہمیشہ ملک کی سلامتی کے ساتھ کھلواڑ کیا اور اب ووٹ کے لئے آپ کے سامنے آ رہے ہیں۔غور طلب ہے کہ 90 رکنی چھتیس گڑھ اسمبلی کے لئے 12 اور 20 نومبر کو دو مرحلے میں ووٹنگ ہونی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں فضائی آلودگی میں دوبارہ اضافہ ،خراب اور انتہائی خراب زمرے کے درمیان پہنچا

قومی دارالحکومت دہلی میں بارش کے بعد آلودگی سے ملی کچھ راحت کے بعد شہر کی فضائی آلودگی دوبارہ بگڑ کر خراب اور انتہائی خراب زمرہ کے درمیان پہنچ گئی ہے۔پڑوسی ریاستوں میں پرالی جلائے جانے اور بارش سے پیدا نمی کی وجہ سے ہوا میں آلودگی عناصر کو منجمد کرنے کی صلاحیت بڑھنے کی وجہ سے ...

ممتا بنرجی اور چندرابابو پر ارون جیٹلی کا حملہ، جن کے پاس چھپانے کیلئے بہت کچھ وہی اپنی ریاست میں گھسنے نہیں دیتے سی بی آئی

وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے مغربی بنگال اور آندھرا پردیش کے وزراء اعلی کے ذریعہ اپنی ریاست میں سی بی آئی کی تحقیقات سے روکنے کے فیصلے پرپلٹ وارکیاہے ۔انہوں نے ہفتے کو کہا کہ جن کے پاس چھپانے کے لئے بہت کچھ ہوتا ہے ،وہی سی بی آئی کو اپنی ریاست میں داخل ہونے سے روکتے ہیں۔ارون جیٹلی ...

کانگریس لیڈر نوجوت سنگھ سدھوبولے، وزیراعظم کی شبیہ خراب ہوئی،اس لئے پوسٹرمیں قدگھٹ گیا

کانگریس لیڈر اور پنجاب حکومت میں کابینہ وزیر نوجوت سنگھ سدھونے مرکزی حکومت کو نشانہ بنانے کے دوران کہا کہ 90لاکھ کروڑ روپے بیرون ملک سے تو آئے نہیں،الٹے یہاں سے لوگوں کاپیسہ نکال لیا گیا ۔ خاص بات چیت کے دوران سدھو نے کہا کہ نیرو مودی، ویجے مالیا اور مہول چوکسی جیسے لوگوں کا ...

سبریمالا انتظامیہ سپریم کورٹ سے حکم کو نافذ کرنے کیلئے اضافی وقت کی مانگ کرے گی

سبریمالا پوجا گاہ کا انتظام کرنے والا تراوکور دیوسووم بورڈ (ٹی ڈی بی)پیر کو سپریم کورٹ کا رخ کر کے اس حکم کو لاگو کرنے کے لئے مزید وقت کا مطالبہ کرے گا جس میں حیض کی عمر کی خواتین کوبھگوان ایپامندر میں پوجا کرنے کی اجازت دی گئی تھی۔بورڈ نے ریاست میں حکمران بائیں ڈیمو ڈیموکریٹک ...

سبریمالا میں زائرین کاہجوم امڈا، ہڑتال سے عام زندگی متاثر

ملیالی تقویم کے مقدس مہینے ’ورشچکم‘کے پہلے دن ہفتہ کو ہزاروں زائرین نے آج یہاں بھگوان ایپا کے درشن کئے۔ہندو ایکیاویدی کی خاتون لیڈر کو احتیاطی طور پر حراست میں لئے جانے کے خلاف بلائی گئی 12گھنٹے کی ہڑتال کے باوجود مندر کے صبح تین بجے کھلنے کے بعد سے بچوں سمیت بڑی تعداد میں ...