رام مندر معاملے کو لے کر یوگی نے کانگریس کو نشانہ بنایا

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 10th November 2018, 10:08 PM | ملکی خبریں |

چھتیس گڑھ ،10؍ نومبر (آئی این ایس انڈیا؍ایس او نیوز) اتر پردیش کے وزیر یوگی آدتیہ ناتھ نے رام مندر معاملے کو لے کر کانگریس سے پوچھا کہ کہ اسے بھگوان رام کی فکر ہے یا مغل بادشاہ بابر کی۔آدتیہ ناتھ نے ریاست میں پہلے مرحلے کے انتخابات کے لئے تشہیر کاری کے آخری دن یہاں انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کانگریس نے قومی سلامتی کے ساتھ کھلواڑ کرتے ہوئے سیاسی فائدے کے لئے چھتیس گڑھ اور جھارکھنڈ میں کھلے عام اور چوری چھپے نکسلواد کو فروغ دیا۔وزیر اعلی نے کہا کہ معدنی ذخائر ہونے کے باوجود چھتیس گڑھ کانگریس کے دور اقتدار میں غریب، پسماندہ اوربیمارو ریاست رہی۔بیمارماروکا لفظ بہار، مدھیہ پردیش، راجستھان اور اتر پردیش کے پہلے لفظ سے 1980 کے وسط میں گڑھا گیا تھا اور اس کا اثر ان ریاستوں میں خراب اقتصادی صورتحال سے تھا۔یوگی نے کہاکہ آج جنگل املاک کا استعمال مقامی لوگوں کی فلاح و بہبود میں ہو رہا ہے۔قبائلیوں اور جنگل علاقوں میں رہنے والے لوگوں کو ترقیاتی اسکیموں کا فائدہ دیا جا رہا ہے۔انہوں نے الزام لگایاکہ کانگریس نے اپنے فائدہ کے لئے نکسلواد کو فروغ دیا لیکن جب یہ لوگوں کی حفاظت کے لئے خطرہ بن گیا تو وہ بی جے پی پارٹی ہی تھی جس نے سختی سے اس کے ساتھ پیش آئی۔ کانگریس نکسلواد کو کھلے عام اور چوری چھپے فروغ دیتی رہی ہے۔کانگریس نے اپنے فائدہ کے لئے ملک کی سلامتی سے کھلواڑ کیا۔چاہے وہ چھتیس گڑھ ہو یا جھارکھنڈ جہاں نکسلیوں کو پناہ دینے کا مسئلہ ہو یا سیاسی فائدے کے لئے کشمیر جیسی ریاستوں کا استعمال کا۔لیکن بی جے پی کے لئے قومی سلامتی اہم ہے لہٰذا اس نے اس کے ساتھ کھلواڑکوکبھی برداشت نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ ایسا کوئی دن نہیں ہے جب کشمیر میں سیکورٹی فورسز نے کم از کم دو یا تین دہشت گردوں کو ڈھیر نہیں کیا ہو یا وہ سکیورٹی کے سامنے اعتراف نہ کیا ہو۔اسی طرح کوئی ایسا دن نہیں گزر تاجہاں نکسل متاثرہ ریاستوں میں لوگوں کو ریاستی حکومتوں نے مکمل تحفظ فراہم نہ کرایا ہو۔انہوں نے کہا کہ کانگریس سے پوچھا جانا چاہئے کہ ان کا تعلق بھگوان رام سے ہے یا غیر ملکی بابر سے۔کانگریس کے پاس ملک کے احترام اور خود داری کے بارے میں کوئی فکر نہیں ہے۔کانگریس نے ہمیشہ ملک کی سلامتی کے ساتھ کھلواڑ کیا اور اب ووٹ کے لئے آپ کے سامنے آ رہے ہیں۔غور طلب ہے کہ 90 رکنی چھتیس گڑھ اسمبلی کے لئے 12 اور 20 نومبر کو دو مرحلے میں ووٹنگ ہونی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

ای وی ایم تنازعہ: کپل سبل نے کہا 'ذاتی حیثیت سے گیا تھا لندن، کانگریس کا کوئی لینا دینا نہیں'۔

  کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کےلیڈر اوروزیرقانون روی شنکر پرساد کےان الزامات کو منگل کو پوری طرح سے بے بنیاد بتاکہ لندن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )سے متعلق پریس کانفرنس کا اہتمام کانگریس نے کیاتھا اورواضح کیاکہ وہ اس میں ذاتی حیثیت ...

مدارس کو اگربند نہیں کیا گیا توآئی ایس آئی ایس حامی ہوجائیں گے مسلم بچے، وسیم رضوی نے وزیراعظم کو خط لکھ کرکیا مطالبہ

اپنے متنازعہ بیانات  کے سبب اکثرسرخیوں میں رہنے والے اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے وزیراعظم نریندرمودی کوخط لکھ کربنیادی سطح تک کے سبھی مدارس کوبند کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اپنے کسی بھی ممبر اسمبلی کو لوک سبھا انتخابات میں نہیں اتارے گی عام آدمی پارٹی

عام آدمی پارٹی آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اپنے موجودہ  ممبراسمبلی اور وزرا کو ٹکٹ نہیں دے گی۔ عآپ کے سینئر لیڈر گوپال رائے نے منگل کو یہ جانکاری دی ہے۔ عام آدمی پارٹی کی دہلی یونٹ کے صدر رائے نے ساتھ ہی کہا کہ انتخابات کی اطلاع جاری ہونے سے کافی پہلےہی دہلی م پنجاب اور ہریانہ ...

الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر چندرابابوکوشبہات

الکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایمس)کے استعمال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اے پی کے وزیراعلی و تلگودیشم پارٹی کے قومی صدر این چندرابابونائیڈو نے کہا کہ ان مشینوں میں الٹ پھیر کے کئی ثبوت پائے گئے ہیں