یڈ یورپا باگل کوٹ یا وجے پورہ سے مقابلہ کرنے تیار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 22nd September 2017, 11:03 PM | ریاستی خبریں |

بلگاوی، 22ستمبر (ایس او نیوز؍عبدالحلیم منصور) سابق وزیراعلیٰ و صدر ریاستی بی جے پی بی ایس یڈیورپا نے آج 2018کے اسمبلی انتخابات میں شمالی کرناٹک کے باگل کوٹ یا وجے پورہ سے مقابلہ کرنے کی پیشکش کی ،لیکن کہا کہ اس تعلق سے ہدایت مرکزی قیادت سے آنے کی ضرورت ہے ۔یہاں سامبرا ایرپورٹ پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ہم حلقہ کا انتخاب نہیں کرتے ۔ بی جے پی کے قومی صدر کو اس کا فیصلہ کرنا چاہئے لیکن میں پارٹی اعلیٰ کمان یا قومی صدر کی ہدایات پر باگل کوٹ یا وجے پورہ سے مقابلہ کرنے کیلئے تیار ہوں ۔ ان کی پارٹی شمالی کرناٹک کے اضلاع سے زیادہ سے زیادہ نشستیں حاصل کرنے اور اقتدار پر دوبارہ قبضہ کرنے کی تمام کوششیں کرے گی۔ ان کے خلاف ڈی نوٹیفکیشن کیس میں مزید جانچ روک دینے سے متعلق ہائی کورٹ کی ہدایت کا حوالہ دیتے ہوئے یڈیورپا نے کہا کہ شیوا رام کرانتھ لے آوٹ ڈی نوٹیفکیشن مسئلہ میں کوئی غلطی نہیں کی ہے ۔ مجھے عدلیہ پر مکمل اعتماد ہے ۔ بیلگاوی میں واقع سورنا ودھان سودھا (ایس وی ایس) کے کم استعمال کا حوالہ دیتے ہوئے انہو ں نے کہا کہ ان کی حکومت نے شمالی کرناٹک کی عظیم تر ترقی کے نیک ادارے سے یہ پہل کی تھی لیکن موجودہ حکومت نے اچھے استعمال کے تعلق سے اپنے وعدے کی تکمیل نہیں کی۔ بڑے دفاتر کو ایس وی ایس کو منتقل کیا جاسکتا ہے، تاکہ اس عمارت میں سال تمام سرگرمی جاری رہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

بارش کے متاثرین کی بھرپور مدد کرنے شیوکمار کا مطالبہ

ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ومیڈیکل ایجوکیشن ڈی کے شیوکمار نے کہا ہے کہ ریاست کے کورگ ، ملناڈ اور پڑوسی ریاست کیرلا میں مسلسل بارش کے سبب سیلاب کی جو صورتحال پیدا ہوئی ہے اس سے متاثرہ خاندانوں کی مدد کے لئے ریاستی عوام کو فراخدلی سے قدم بڑھانا چاہئے۔

بارش کے متاثرین کے لئے بی بی ایم پی کی فراخدلانہ امداد،بنگلورو کے سبھی کارپوریٹر راحت کاری کے لئے عنقریب پدیاترا کریں گے

کیرلا اور کورگ میں بارش کی تباہیوں سے متاثر لوگوں کی مدد کے لئے پہل کرتے ہوئے برہت بنگلور مہانگر پالیکے نے کیرلا کے لئے ایک کروڑ روپے اور کورگ کے لئے ایک کروڑ روپیوں کی امداد