ان کارکنوں کو مسافروں کے لئے ٹکٹوں کی جانچ کرنے کا حق نہیں

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st September 2017, 11:22 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 21 ؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)اگر آپ ایک ٹرین میں سفر کر رہے ہیں اور ریلوے پولیس کانسٹیبل آپ کے لئے ایک ٹکٹ بناتا ہے، تو آپ واضح طور پر یہ کہہ سکتے ہیں کہ یہ اس کے دائرہ کار میں نہیں ہے۔ کسی بھی ریلوے مسافر کے ٹکٹ چیک کرنے کا اختیار صرف ٹی ٹی ای یا موبائل بیچ کوہی سکتاہے۔ریلوے کے قوانین کے مطابق، اس وقت کے دوران تجارتی عملے کو یقینی طور پر آر پی ایف کی مدد مل سکتی ہے۔ لیکن قواعد کے بارے میں معلومات کی کمی کی وجہ سے، آر پی ایف یا آر جی پی کے سپاہی ر پر عام مسافروں سے پیسے وصول کرتے ہیں۔ جس کے ویڈیوز بھی کئی بار بنائے جاچکے ہیں۔ صرف یہی نہیں ریلوے پولیس جنرل اور سلیپر کوچ میں پیسے لے کر سیٹ بھی دلانے کا کا کام کرتے ہیں۔ریلوے کے ایک اہلکار نے معلومات فراہم کی ہے یہ قانون ریلوے میں بہت پہلے سے ہی لاگو ہے، کہ جی آر پی یا آر پی ایف کا کام ٹکٹ چیک کرنا نہیں ہے۔ اگر ضرورت ہو تو ریلوے کے کمرشیل اسٹاف آر پی ایف کی مدد کرسکتے ہیں۔حکام نے کہا کہ ریلوے اب اس قانون پر عملدرآمد کر رہی ہے۔اگر کسی سپاہی کے خلاف ٹکٹ کی جانچ پڑتال کے بارے میں شکایت آتی ہے، تو اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی پر لالو کا وار ، کیا سخت تبصرہ ،چائے نہیں چرس بیچتے تھے مودی ،جے شاہ کے بہانے اینٹی کرپشن کے دعووں پرراجدلیڈرنے نشانہ پرلیا

آرجے ڈی صدر لالو پرساد مسلسل وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی پر حملہ کر رہے ہیں۔ اب انہوں نے وزیر اعظم پر سخت تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ چائے نہیں چرس بیچتے تھے ۔

گجرات میں پھر وکاس کی شوشہ بازی ، روڈ شو میں بھیڑ کم ،ہماری سرکار وکاس کیلئے پابندعہد : مودی 

ملک میں وکاس کے نام پر وناش نے اپنے پاؤں پسار لیے ، نوٹ بندی ملک کی معیشت کو لے ڈوبی اور رہی سہی کسر جی ایس ٹی نے پوری کر دی؛ لیکن ان تمام حالات کے بعد بھی گجرات اسمبلی الیکشن کے تناظر میں وکاس کا کارڈ کھیلا جا رہا ہے۔