بھارت میں امن کیلئے ہم نے لاکھوں قربانیاں دی ہیں : مودی 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th November 2017, 11:38 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 13نومبر (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )وزیر اعظم تو اس وقت فلپائن کے دورہ پر ہیں ؛ لیکن الور میں پھر ایک پہلو خان کی گؤ رکھشکوں نے پیٹ پیٹ کر مار ڈالا، تاہم وزیر اعظم فلپائن کے دارالحکومت منیلا میں بھارتی سماج کے لوگوں سے ملاقات کی اور ان کو بھارت میں قیام امن کی تفصیلات پر گفتگو کی اور ان کو اپنے خطاب سے بھی نوازا ۔ تمام ہندوستانیوں کوخطاب کرتے ہوئے، ان کے خیالات ملک کی ترقی اور ہندوستانی ثقافتوں سے متعلق بہت سی چیزوں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ دنیا بھر میں لاکھوں بھارتی کمیونٹی ہیں برسوں سے ملک سے ہجرت کرکے دوسرے ممالک بسنے کی روایت رہی ہے ؛ لیکن بھارت کی یہ خصوصیت رہی ہیں کہ ہم جہاں گئے جس سے ملے اسے اپنا بنا لیا۔پی ایم مودی نے ہندوستانی تارکین وطن سے کہا کہ ہم بھارت کے اندر مضبوط اعتماد کے ساتھ زندگی گزار رہے ہیں آپ کہیں پر بھی ہوں یا کتنے سالوں یا نسلوں سے باہر ہوں یہاں تک کہ اگر آپ کو ہندوستانی زبان نہیں آتی ہو، لیکن اگر بھارت میں کچھ برا ہوتا ہے تو آپ کو بھی نیند نہیں آتی ہے ۔اور اگر کچھ اچھا ہوا تو آپ بھی خوش ہوتے ہیں ۔ لہذا موجودہ حکومت کوشاں ہے کہ ملک کی ترقی کو دور تک لے جائے کہ دنیا کی برابری کر لیں اور اگر ہم بھارتی ایک بار بھی برابر کر لیں تو میں نہیں مانتا کہ دنیا میں بھارت کو کوئی پیچھے کر پائے گا ۔ مودی نے خطاب میں یہ بھی کہا کہ بھارت کے پاس جو ثقافتی ورثے ہے، کسی بھی دور میں تاریخ میں ایک بھی واقعہ نظر نہیں آ تا ہوگا کہ ہم نے کسی کا برا کیا ہوگا. جب میں دنیا کے مختلف ممالک کے نمائندوں سے ملاقات کرتا ہوں تو یہ بتاتا ہوں کہ پہلی یا دوسری عالمی جنگ میں نہ ہمیں زمین چاہیے تھی نہ ہی ہمیں کسی ملک پر قبضہ کرنا تھا، صرف امن کے لئے ڈیڑھ لاکھ ہندوستانیوں نے شہادت دے دی تھی. ہم ایسے لوگ ہیں جو دنیا کو دیتے ہیں، اسے لینے کے لئے نہیں اسے بہت کچھ ہدیہ کرتے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج دنیا میں کوئی بھی ہندوستانی فخر کر سکتا ہے کیونکہ موجودہ وقت میں بہت سے ممالک میں بدامنی پیدا ہو گئی ہے، لیکن امن برقرار رکھنے کی سمت میں سب سے زیادہ ہندوستان کے سپاہیوں نے اپنی خدمات انجام دی ہیں ۔ انہوں نے دعوی کیا کہ یہاں تک کہ آج دنیا بھر میں بہت سے مصیبت والے علاقوں میں بھارتی فوج تعینات کی جاتی ہے ۔ وزیراعظم مودی نے بھی کہا کہ بھارت بودھ اور گاندھی کی زمین ہے۔ امن صرف ایک لفظ نہیں ہے، لیکن ہم ان لوگوں میں ہیں جنہوں نے امن قائم کرکے دکھا دیا ہے ۔ امن ہماری رگوں میں ہے ۔ مودی نے دعوی کیا کہ بھارت میں تمام فیصلے صرف ترقی کو ذہن میں رکھنے کے بعد کئے جا رہے ہیں۔ اگر 30 کروڑ خاندان بینکنگ کے نظام سے باہر ہیں تو ملک کی معیشت کا کام کیسے کرے گا؟ اس وجہ سے حکومت نے جن دھن منصوبہ شروع کیا ہے ۔ وزیر اعظم نریندر مودی اتوار کو آسیان کے سربراہ اجلاس میں شرکت کے لئے آئے ہیں ۔ یہاں انہوں نے گالا ڈنر کے دوران دیر رات امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ سمیت بہت سے ممالک کے سربراہان سے بھی ملاقات کی ۔

ایک نظر اس پر بھی

راہل گاندھی ذاتی مفاد اور قومی مفاد کو الگ الگ رکھنے والے رہنما ہیں : سورا بھاسکر 

نیٹ فلیکس اوریجنل پر دستیاب سیریز سیکریڈ گیمز پر کانگریس صدر راہل گاندھی کے موقف کے ڈائریکٹر انوراگ کشیپ اور اداکارہ سورا بھاسکر نے تعریف کی ہے۔ویب سیریز میں سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی پر مبینہ طور پر کچھ قابل اعتراض تبصرہ پر راہل گاندھی نے کہا کہ بی جے پی اور آر ایس ایس کا ...

مانسون سیشن:اپوزیشن کی برسنے کی تیاریاں

بڑھتی مہنگائی اور خاص طور پر پٹرول-ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ، روپے کی گرتی قیمت، جموں و کشمیر کے حالات، آندھرا پردیش اور کسانوں کے مسائل پر اپوزیشن پارٹیوں کے سخت تیوروں کو دیکھتے ہوئے بجٹ سیشن کی طرح پارلیمنٹ کا مانسون سیشن کے بھی ہنگامہ دار رہنے کا امکان ہے۔

سمترامہاجن ایوان چلانے کے لیے راہل گاندھی سے تعاون مانگیں گی

لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن پارلیمنٹ کے مانسون سیشن کو پرسکون انداز میں کارروائی یقینی بنانے کے واسطے کل جماعتی میٹنگ سے قبل کانگریس صدر راہل گاندھی سمیت مختلف پارٹیوں کے رہنماؤں کے ساتھ الگ الگ میٹنگیں کریں گی

رابعہ اسکول کے خلاف نوٹس، مگر اسکول بند نہیں ہونے دیا جائے گا: اقلیتی کمیشن

پچھلے دنوں پرانی دلی کے رابعہ گرلز اسکول میں کے جی اور پرائمری کے کچھ بچوں کو فیس نہ ادا کرنے کی وجہ سے بیسمنٹ میں گھنٹوں بند کرنے پر دہلی اقلیتی کمیشن نے مذکورہ اسکول کی پرنسپل، ڈائرکٹر آف ایجوکیشن (اسکول برانچ) اور سنٹرل ڈسٹرکٹ کے ڈی سی پی کونوٹس دے کر پوچھا ہے

تلنگانہ کے سکندرآباد سے اگلا لوک سبھا انتخابات لڑنا چاہتے ہیں اظہرالدین

گزشتہ دو لوک سبھا انتخابات میں اتر پردیش اور راجستھان سے قسمت آزمانے کے بعد کانگریس لیڈر اور سابق ہندوستانی کرکٹ کپتان محمد اظہر الدین 2019 کے لوک سبھا انتخابات اپنے آبائی ریاست تلنگانہ کے سکندرآباد سے لڑنا چاہتے ہیں۔