سعودی شاہی خاندان کا اہم ترین شہزادہ ایران فرار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th November 2017, 4:25 AM | خلیجی خبریں |

ریاض 11/نومبر (ایس او نیوز/ایجنسی) سعودی شاہی خاندان کے اہم ترین فرد نے گرفتاری کے ڈر سے سعودی کے ازلی  دشمن  ایران فرار ہو گیا،تفصیلات کے مطابق سعودی شاہی خاندان کے نوجوان شہزادے اور کنگ فہد کے پوتے ترکی بن محمدبن فہد  نے ایران میں سیاسی پنا ہ حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے،یہ فیصلہ اُنہوں نے اپنے انکل عبد العزیز کی وفات کے بعد کیا۔

ایک انگریزی اخبار کی رپورٹ کے مطابق   شہزادہ ترکی بن محمد بن فہد کی ایران روانگی کی وجہ سے بہت سارے سوالات نے جنم  لیا ہے کیونکہ تمام شاہی خاندان کے افراد پر سعودی عرب سے باہر جانے پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔

ٹوئیر پر چلانے والی خبروں کے مطابق ایران کی طرف سے سیاسی پناہ کی ضمانت کے بعد شہزادہ ایران کی طرف روانہ ہوا ہے۔ میڈیا رپورٹس پر بھروسہ کریں تو  ایسی بہت سی اطلاعات موصول ہو رہی ہیں کہ کنگ فہد کے سب سے چھوٹے صاحبزادہ شہزادہ عبدالعزیز کی گرفتاری کے دوران موت  واقع ہوچکی ہے، مگرسعودی حکومت نے ان کی موت سے انکار کیاتھا۔

 

ایک نظر اس پر بھی

ایرانیوں کا پیغام واضح ہے، وہ نظام کی تبدیلی چاہتے ہیں : شہزادہ رضا پہلوی

سابق شاہ ایران کے بیٹے شہزادہ رضا پہلوی نے ایران میں مظاہروں کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے باور کرایا ہے کہ ایرانی عوام 40 برس تک مذہبی آمریت کے نظام کے تحت زندگی گزارنے کے بعد اس بات پر قائل ہو چکے ہیں کہ اس نظام کی اصلاح ممکن نہیں۔

اب سو فیصد ڈیجیٹل حج؛ آن لائن اور ایپ کے ذریعے3.60 لاکھ درخواستیں موصول؛ سعودی میں مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کا بیان

امسال سے حج سو فی صد  دیجٹل  ہوگا اور لوگوں کے ابآن لائن اور موبائل ایپ کے ذریعے درخواستیں موصول کئے جارہے ہیں، اب تک  آن لائن  اور موبائیل ایپ کے ذریعہ تین لاکھ  60 ہزار درخواستیں  حج کمیٹی کو موصول ہوچکی  ہیں۔  ہمارا حج کوٹہ پچھلے سال کی طرح امسال بھی پرایویٹ ٹور اپریٹرس ...