امریکہ نے پھر سے کیوں بنایا افغانستان کو نشانہ؟ ........ آز: مھدی حسن عینی قاسمی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 14th April 2017, 4:27 PM | عالمی خبریں | آپ کی آواز |

               کوئی بھی سرمایہ دار ملک  پہلے آپ  کو متشدد  بناتا ہے اور ہتھیار مفت دیتا ہے پھر ہتھیار فروخت کرتا ہے، پھر جب آپ  امن کی بحالی کی کوشش کر رہے ہوتے ہیں تو آپ کے اوپر بم گرا دیتا ہے. ٹھیک یہی کہانی ہے امریکہ اور افغانستان کی، پہلے امریکہ نے  افغانستان کو طالبان اور  القاعدہ دیا، پھر جب وہ اسلام کے نام پر تشدد برتنے لگے تو انہیں مفت اسلحے دئیے،پھر انہیں اسلحہ فروخت کئے،سب کچھ ہوگیا اب امن کی بحالی کا سلسلہ شروع کیا گیا تو  امریکہ نے ہیروشیما کی تاریخ افغانستان میں دہرا دی،  *مدرس آف آل بمبس* تقریباًایک  ٹن وزنی بم کے  افغانستان میں گرائے جانے کے کئی وجوہات ہیں 

1) دیگر صدور کی طرح ٹرمپ کا بھی خود کو  تاریخی شخصیت کے طور پر پیش کرنے کا خواب

2) افغانستان کو روس سے دور رکھنے کی کوشش

3) روس کے خلاف بالواسطہ طاقت کی نمائش  (جبکہ روس کے پاس بھی "فادر آف بمبس"  ہے) 

4)ہندوستان کو یہ پیغام دینا کہ اگر امریکہ كشمير معاملے میں ثالثی بننے کی پہل کر رہا ہے تو انکار نہیں کرنا ہے،ورنہ یہی حشر ہوگا،

5) میڈیا و نیوز چینلوں  کو دوبارہ یاد دلانا  کہ بغدادی اب بھی زندہ ہے،

(6)اور ان سب سے بڑھی وجہ عالم اسلام اور مسلمانوں کو پھر سے بربریت کا نشانہ بنانے کی ہنکار سنانا.

(07)دنیا کو پھر سے اپنی چودھراہٹ کا اعتراف دلانا،

دہشت گردی کے نام پر پھر سے اسلامیان عالم کو نشانہ بنانا.

(08)پھر سے ایک عالمی جنگ کا بگل بجانا،  دو عالمی طاقتوں کا ٹکرانا، نتیجہ میں ہمیشہ کی طرح کسی مسلم ملک کا تباہ ہونا. 

(09)ترکی کو یہ پیغام دینا کہ اسلام پسندی اور خود اعتمادی چھوڑ کر عالمی پالیسیوں کے مطابق چلو،یا ترکی کو مسلمانوں پر حملہ کرکے بر انگیختہ کرنا.

  لاکھوں کی آبادی والے علاقہ میں اس بم کے گرائے جانے کے بعد یقینی طور پر ہزاروں لوگ جاں بحق ہونگے،لیکن میڈیا اسے نہیں دکھائے گا،اور اقوام متحدہ مذمت کرکے پوری دنیا کو خاموش کردےگا.یہ ایک عالمی سازش ہے جس میں ان تمام ممالک کو گھسیٹنے کی کوشش ہے جو خود کچھ کر گزرنے کی ہمت جٹا رہے ہیں،  اس لئے ہندوستان سمیت سبھی ایشیائی وخلیجی ممالک کو چاہئے کہ ان سرمایہ دار ممالک سے دوری بنائیں اور ترکی کی طرح اپنے پیروں پر کھڑے ہوکر ترقی کریں ورنہ وہ دن دور نہیں کہ امریکہ یا کوئی دوسرا سرمایہ دار ملک دنیا کے کسی بھی خطہ کو دہشت گردی سے متاثرہ بتلاکر اسے شمشان بنادےگا.

ایک نظر اس پر بھی

انجلینا جولی کی عید پرعراق کے شہر موصل کے پناہ گزینوں سے ملاقات

اقوام متحدہ کی پناہ گزین کی خصوصی ایلچی انجلینا جولی نے عراق میں دہشت گردی سے سب سے متاثرہ علاقے موصل کا دورہ کیا اور عالمی برادری سے تباہ حال شہر کے بے گھر رہائشیوں کی دوبارہ اپنے گھروں میں آبادکاری کے لیے مدد کی اپیل کی ہے۔

ننگر ہار: طالبان پر خودکش حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 36 ہو گئی

صوبہ ننگرہار میں کے محکمہ صحت کے ڈائریکٹر نجیب اللہ کماوال کے حوالے سے کہا ہے کہ ہفتہ کو ہونے والے اس حملے میں 65 افراد زخمی بھی ہوئے۔افغان حکام نے کہا ہے کہ جنگ بندی کے دوران مشرقی صوبہ ننگرہار میں افغان جنگجوؤں کے ایک اجتماع پر خودکش حملے میں ہلاکتوں کی تعداد 36 ہو گئی ہے۔

جاپان میں.1 6 شدت کا زلزلہ، تین افراد ہلاک

اوساکا اور اس کے گرد و نواح کا شمار جاپان کے اہم ترین صنعتی مراکز میں ہوتا ہے اور زلزلے کے بعد علاقے میں واقع بیشتر کارخانوں میں کام بند کردیا گیا ہے۔جاپان کے دوسرے بڑے شہر اوساکا میں آنے والے 6.1شدت کے زلزلے سے اب تک تین افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے۔

نیو جرسی: آرٹ فیسٹول میں فائرنگ، حملہ آور ہلاک

امریکہ کی ریاست نیو جرسی میں ایک آرٹ فیسٹول کے دوران فائرنگ سے 22 افراد زخمی ہوگئے ہیں جب کہ ایک مبینہ حملہ آور مارا گیا ہے۔حکام کے مطابق واقعہ اتوار کو نیوجرسی کے شہر ٹرینٹن میں پیش آیا جہاں رات بھر جاری رہنے والے آرٹ فیسٹول کے دوران دو متحارب گروہ آپس میں لڑ پڑے۔

افغان طالبان کا جنگ بندی میں توسیع سے انکار

افغان طالبان نے کہا ہے کہ افغان سکیورٹی فورسز سے تین روزہ جنگ بندی کے خاتمے کے بعد اس میں مزید توسیع نہیں کی جائے گی۔فرانسیسی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ نے طالبان کے ترجمان ذبیع اللہ مجاہد کے حوالے سے کہا ہے کہ جنگ بندی 17 جون کی رات ختم ہو رہی ہے جس کے بعد طالبان کی کارروائیاں ...

ترک فوج کی عراق میں بمباری، 35 کرد جنگجو ہلاک

ترکی کی مسلح فوج نے ایک بیان میں دعویٰ کیا ہے کہ عراق کے شمالی علاقے جبل قندیل میں کرد علاحدگی پسند گروپ کردستان ورکرز پارٹی "PKK" کے ٹھکانوں پر بمباری کے نتیجے میں کم سے کم 35 کرد باغی ہلاک ہو گئے ہیں۔

بھٹکل کے سی سی ٹی وی کیمرے کیا صرف دکھاوے کےلئے ہیں ؟

شہر بھٹکل پرامن ، شانتی کا مرکز ہونے کے باوجود اس کو شدید حساس شہروں کی فہرست میں شمار کرتے ہوئے یہاں سخت حفاظتی اقدامات کی مانگ کی جاتی رہی ہے۔مندرنما ’’ناگ بنا ‘‘میں گوشت پھینکنا، شرپسندوں کے ہنگامے ، چوروں کی لوٹ مار جیسے جرائم میں اضافہ ہونے کے باوجود شہری عوام حفاظتی ...

راستے بندہیں سب، کوچہ قاتل کے سوا؟ تحریر: محمدشارب ضیاء رحمانی 

یوپی میں مہاگٹھ بندھن نہیں بن سکا،البتہ کانگریس،ایس پی اتحادکے بعدیوں باورکرایاجارہاہے کہ مسلمانوں کاٹینشن ختم ہوگیا۔یہ پوچھنے کے لیے کوئی تیارنہیں ہے کہ گذشتہ الیکشن میں سماجوادی کی طرف سے کیے گئے ریزویشن سمیت چودہ وعدوں کاکیاہوا؟۔بے قصورنوجوانوں کی رہائی کاوعدہ ...

گجرات فسادات کے قاتل گاندھی جی کا قتل کرنے کے بعد نظریات کو بھی قتل کرنے کے درپہ،کوا چلا ہنس کی چال اپنی چال بھی بھولنے لگا ہے۔از:سید فاروق احمدسید علی،

جب سے نریندردامور مودی نے اقتدار سنبھالا ہے تب سے ملک کے حالات میں جیسے بھونچال سا آگیا ہے۔ انہونی ہونی ہوتی نظر آرہی ہے۔وزیراعظم خود کو تاریخ کی ایک قدر آور شخصیت بنانے کے لئے پے درپے نت نئے فیصلے کرتے نظر آرہے ہیں۔ اس میں چاہے کسی کا بھلا ہو یا نقصان ہو ویسے نقصان ہی زیادہ ...

زرخرید میڈیا .... از: مولانا آفتاب اظہر صدیقی

 آج کی صورت حال یہ ہے کہ بازار میں کچھ ہورہا ہے اور میڈیا کچھ اور دکھا رہا ہے، مظلوم کو ظالم، مقتول کو قاتل، محروم کو خوش بخت اور فقیر کو سرمایہ دار بنا کر پیش کرنا میڈیا کے لیے چٹکی کا کھیل ہوگیا ہے.