ہم لوگ سیاست کرنے کے لئے ہی کرسی پر بیٹھے ہیں، سماجی خدمت کرنے کے لئے نہیں۔ مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کابیان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th October 2018, 12:48 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

سرسی 11؍اکتوبر (ایس او نیوز) ضلع شمالی کینرا سے بی جے پی کے رکن پارلیمان اور مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے نے ایک اور متنازعہ بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم لوگ سیاست کرنے کے لئے ہی کرسیوں پربیٹھے ہیں۔ سماج سیو ا کرنے کے لئے ہم اس مقام پر نہیں آئے ہیں۔

سرسی میں منعقدہ بی جے پی کی ضلع مجلس عاملہ کی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے اننت کمار ہیگڈے نے کہا کہ اگر کوئی پوچھتا ہے کہ تم لوگ سیاست کررہے ہوتو اس کا جواب یہی ہے کہ ہاں ہم لوگ سیاست کرنے کے لئے ہی ان کرسیوں پر بیٹھے ہیں۔ اسی کام کے لئے ہم ایم ایل اے اور ایم پی بنتے ہیں۔ سماج سیوا کرنے کے لئے ہم ان کرسیوں پر نہیں بیٹھے ہیں۔ سیاست چھوڑ کر اور کچھ کیا نہیں جاسکتا۔سیاست ہی کرنا ہے۔ اب اس کے بارے میں میڈیا والے جولکھنا چاہیں لکھیں۔ جو جیسا سوچتا ہے ویساہے عمل کرتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایران میں گرفتار اُترکنڑا کے ماہی گیروں کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کرناٹکا این آر آئی فورم کا دبئی میں ہندوستانی سفارت کار سے ملاقات

  ریاست کرناٹک کے ضلع اُترکنڑا کے 18 ماہی گیروں کی ایران میں گرفتاری کے بعد اُن کی رہائی کی کوششیں تیز ہوگئی ہیں۔ اس تعلق سے تازہ اطلاع یہ ہے کہ  دبئی میں موجود ماہی گیروں کے رشتہ داروں نے  کرناٹکا این آر فورم کے  اہم ذمہ دار اور قائد قوم جناب ایس ایم سید خلیل الرحمن صاحب سے ...

ریاستی وزارت سے مہیش کا استعفیٰ منظور

پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات میں کانگریس اور بی ایس پی کے درمیان مفاہمت کی کوشش ناکام ہوجانے کے نتیجے میں ریاستی کابینہ سے استعفیٰ دینے والے بی ایس پی کے وزیر این مہیش کو استعفیٰ واپس لینے کے لئے منانے میں جے ڈی ایس قیادت کی کوشش ناکام ہوجانے کے بعد آج وزیراعلیٰ نے مہیش کا ...

ای اسٹامپ پیپر اب آن لائن دستیاب ہوگا

کسی طرح کے دستاویزات تیار کرنے کے لئے درکار ای اسٹامپ کاغذ کی دستیابی اب تک ایک بہت بڑا مسئلہ ہوا کرتی تھی، 100 روپے کے اسٹامپ پیپر کے لئے بھی بھاری رقم ادا کرکے اسے حاصل کرنا پڑتا تھا،

دیوے گوڈا سدرامیا اور ڈی کے شیوکمار ایک ساتھ انتخابی مہم چلائیں گے

سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا نے طے کیا ہے کہ تین لوک سبھا اور دو اسمبلی حلقوں کے ضمنی انتخابات کے مرحلے میں وہ اپنے دو کٹر سیاسی حریفوں سابق وزیراعلیٰ سدرامیا اور ریاستی وزیر آبی وسائل ڈی کے شیوکمار کے ہمراہ ایک ساتھ انتخابی مہم میں حصہ لیں گے۔