یڈیورپا اور ایشورپا کے درمیان جنگ دوبارہ چھڑ گئی، سنگولی راینابرگیڈ کی سرگرمیاں جاری رکھنے ایشورپا کا اعلان

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 2:53 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو:20/اپریل(ایس او نیوز) ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپااور کونسل کے اپوزیشن لیڈر کے ایس ایشورپا کے درمیان اختلافات دوبارہ سراٹھانے لگے ہیں۔یڈیورپا سے ناراض لیڈروں کوایشورپا نے دوبارہ مدعو کرتے ہوئے 27مارچ کو ایک میٹنگ طلب کی ہے، اس میٹنگ کے متعلق ایشورپا نے اخباری نمائندوں کو بتایاکہ یہ میٹنگ کسی کے خلاف  نہیں بلکہ پارٹی کو مضبوط کرنے کے مقصد کے تحت بلائی گئی ہے جس میں پارٹی کے وفادار کارکن حصہ لیں گے۔ آج شہر کی ایک نجی ہوٹل میں سنگولی راینا برگیڈ کے لیڈر مکڑپا، وینکٹیش مورتی اور دیگر کی طرف سے بلائی گئی میٹنگ کے بعد اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایشورپا نے یڈیورپا کو راست نشانہ بنایا اور کہاکہ وہ کسی سے ڈرنے والے نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پارٹی اعلیٰ کمان کو انہوں نے پہلے ہی باور کروادیا ہے کہ پسماندہ طبقات کو منظم کرنے کا ان کا مقصد کیا ہے۔ اس کے باوجود بھی غیر ضروری طور پر اگر انہیں الجھایا گیا تو نتیجہ اچھا نہیں ہوگا۔انہوں نے کہاکہ ریاست میں پارٹی کو مضبوط کرنے کے مقصد کے تحت اس طرح کی میٹنگوں کا اہتمام کیاجارہاہے۔اسے قطعاً پارٹی مخالف سرگرمیوں سے تعبیر نہیں کیا جاسکتا۔ یڈیورپا کا نام لئے بغیر انہوں نے کہاکہ ریاست کی قیادت کے طریقہئ کار سے وہ پوری طرح مطمئن نہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مرکزی قیادت کی ہدایت کے مطابق10 فروری کو ایک میٹنگ طلب کرکے یڈیورپا کو ریاست میں پارٹی کی پیش رفت کے بارے میں جائزہ لینا تھا، لیکن ایساکچھ بھی نہیں ہوا۔اس سلسلے میں وہ پارٹی کے قومی صدر امیت شا اور دیگر قائدین کو مطلع کریں گے۔انہوں نے کہاکہ امیت شا نے ریاست کے چار لیڈروں کو یہ ذمہ داری سونپی تھی کہ پارٹی کی پیش رفت پر نظر رکھی جائے، لیکن اب تک اس سلسلے میں ایک بھی میٹنگ طلب نہیں کی گئی۔ انہوں نے کہاکہ پارٹی کے وفادار کارکنوں کو مناسب مقام اور مرتبہ دینے کے بارے میں انہوں نے بار ہانمائندگی کی،لیکن یڈیورپا نے اس پر اب تک کوئی توجہ نہیں دی۔ایشورپا نے کہا کہ آنے والے دنوں میں سنگولی راینا برگیڈ کو ریاست گیر پیمانے پر بڑھاوا دیا جائے گا، سبھی 224اسمبلی حلقوں میں سنگولی راینا برگیڈ کو مضبوط کیاجائے گا اور ہر حلقہ میں برگیڈ کے 25 اراکین کا اندراج کیا جائیگا۔

ایک نظر اس پر بھی

مستقبل قریب میں حلقہ اسمبلی گلبرگی کے انتخابات،مسلمانان گلبرگہ کی دانش مندی کا امتحان

ممتازسماجی خدمت گزار اور سیاسی بزرگ شخصیت ڈاکٹر ایم ایچ بگدلی نے اپنے صحافتی بیان میں کہا ہے کہ شہر کرناٹک گلبرگہ محترم جناب الحاج قمرالاسلام صاحب کے سانحہ ارتحال کے بعد شہر یانِ گلبرگہ کے ہر کس وناکس کی زبان پر یہی تذکرہ ہے کہ قمرالاسلام کا سیاسی قاؤئم مقام کون ہوگا؟

ہبلی :مرکزی وزیر اننت کمارہیگڈے معافی مانگے اورعہدے سے استعفیٰ دیں : یوتھ کانگریس کا احتجاج

عوامی اجلاس میں ریاستی وزیر اعلیٰ سدرامیا کے خلاف توہین آمیز بیان دئیے مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے کی مذمت میں ہبلی دھارواڑ یوتھ کانگریس کی جانب سے تحصیلدار دفتر کےسامنے احتجاج کیا گیا ۔

حکومت کی غیر ذمہ دارانہ حرکت سے پرائیویٹ ڈاکٹروں کامسئلہ الجھا ہے : حزب مخالف لیڈر جگدیش شٹر

ریاستی سرکار کی غیر ذمہ دارانہ حرکت اور ان دیکھی سے مسئلہ الجھا ہے اور پرائیویٹ ڈاکٹروں کا احتجاج ریاست گیر سطح پر عوام کے لئے پریشانی کا باعث بننے کا حزب مخالف لیڈر جگدیش شٹر نے خیال ظاہر کیا۔