نسلی تبصرہ معاملے پر مکند کی حمایت میں اترے کپتان کوہلی اور ٹیم انڈیا

Source: S.O. News Service | Published on 11th August 2017, 7:04 PM | ملکی خبریں | اسپورٹس |

نئی دہلی،11اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)ٹیم انڈیا کے اوپننگ بلے بازابھینو مکند حال ہی میں نسلی تبصرے کے شکار بنے تھے۔ سوشل میڈیا پر ان کی تصاویر پر کچھ لوگوں نے انتہائی  شرمناک تبصرے کئے تھے، اگرچہ مکند نے اس کا جواب مثبت انداز میں دینے کا فیصلہ کیا۔مکند نے نہ صرف اپنے بلکہ ہر اس شخص جس کے ساتھ کبھی نہ کبھی اس طرح کا واقعہ ہوا ہے، ان میں سے سب کے لئے آواز اٹھائی۔ انہوں نے ایک حساس ٹوئٹ کے ذریعے اپنے جذبات کا اظہارکیا اور اب ان کی حمایت میں کپتان وراٹ کوہلی سمیت ٹیم انڈیا کے کئی کھلاڑی اتر آئے ہیں۔کپتان کوہلی نے ٹویٹ کیا کہ بہت اچھا کہا ابھینو۔ مکند نے سوشل میڈیا پر نسل پرستانہ تبصرے پر کرارا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ اپنی جلد کے رنگ کی وجہ سے وہ خود برسوں سے یہ ذلت جھیلتے آئے ہیں۔صرف کوہلی ہی نہیں روی چندرن اشون اور ہاردک پانڈیا نے بھی ان کی حمایت کی۔ اشون نے لکھا کہ پڑھیں مزیدلیں، اسے بڑا مسئلہ نہیں بنائیں کیونکہ یہ کسی کے جذبات ہیں۔ یہاں تک کہ بیڈمنٹن کھلاڑی جوالہ گٹا بھی مکند کا بیان پڑھنے کے بعد ان کی حمایت میں آئیں۔مکند نے اپنے ٹویٹر پیج پر ایک بیان میں جلد کے رنگ کو لے کر بھیجے گئے کچھ پیغامات پر مایوسی ظاہر کی ہے۔ مکند نے سری لنکا کے خلاف سیریز کے پہلے ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں 81 رنز بنائے تھے۔ تمل ناڈو کے اس بلے باز نے واضح کیا کہ ان کے بیان میں ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے کسی رکن سے کوئی سروکار نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

پنچ کولہ:رسوئی گیس سلنڈر میں رساؤ کے بعد دھماکہ، 8 زخمی

رسوئی گیس سلنڈر میں لیک کی وجہ سے یہاں ایک گھر میں ہوئے دھماکے میں کم از کم آٹھ افراد زخمی ہو گئے۔پولیس نے آج بتایا کہ دھماکہ ا تنا شدید تھا کہ پورا گھر گر گیا اور آس پاس کے قریب 20 مکانوں کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔

مودی نے بھارتی فوجیوں کے ساتھ دیوالی منائی ،فوجی بھائی ہی ہمارے گھر کے فرد ہیں: مودی

وزیر اعظم بننے کے بعد ہر سال فوج یا سکیورٹی فورسز کے درمیان دیوالی منانے کی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے بھارتی پی ایم نریندر مودی نے اس سال جموں و کشمیر کے گریج میں فوجی نفری کے درمیان دیوالی منائی اور کہا کہ فوج کے جوان ہی ان کے خاندان ہیں۔